உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    محرم سے پہلے خط کے ذریعے فساد بھڑکانا چاہتے ہیں شیعہ مولانا: وسیم رضوی

     وسیم رضوی نے  اپنا بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ یہ انتہائی خفیہ خط وائرل ہوا ہے ،جس کے لیے یہ مولانا ذمہ دار اور قصورار ہیں۔ وسیم  رضوی نے کہا کہ یہ مولانا ہی فسادات بھڑکانے کی سازش کر رہے ہیں۔

    وسیم رضوی نے اپنا بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ یہ انتہائی خفیہ خط وائرل ہوا ہے ،جس کے لیے یہ مولانا ذمہ دار اور قصورار ہیں۔ وسیم رضوی نے کہا کہ یہ مولانا ہی فسادات بھڑکانے کی سازش کر رہے ہیں۔

    وسیم رضوی نے اپنا بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ یہ انتہائی خفیہ خط وائرل ہوا ہے ،جس کے لیے یہ مولانا ذمہ دار اور قصورار ہیں۔ وسیم رضوی نے کہا کہ یہ مولانا ہی فسادات بھڑکانے کی سازش کر رہے ہیں۔

    • Share this:
      لکھنؤ۔ اتر پردیش کے دارالحکومت لکھنؤ میں محرم میں پولیس انتظامیہ کی تیاریوں اور مسلم کمیونٹی کی جانب سے تہوار سے قبل جاری کردہ ہدایات کے حوالے سے یوپی ڈی جی پی کی جانب سے جاری کردہ سرکولر میں شیعہ برادری کے تمام مذہبی رہنماؤں نے اپنے اعتراض کا اظہار کیا۔ وہ گزشتہ کئی دنوں سے اس کی مخالفت کر رہے ہیں۔ شیعہ کمیونٹی کے سینئر مذہبی رہنما ،مولانا کلب جواد ، مولانا یاسوب عباس ، مولانا سیف عباس ، مولانا سبلین نوری نے اس خط کی زبان پر اعتراض ظاہر کیا ہے۔ انہوں نے سیدھے طور پر خط جاری کرنے والے اب ڈی جی پی سے معافی مانگنے کی بات کہی ہے۔

      سینئر مذہبی رہنما مولانا کلب جواد کے مطابق خط میں کئی جگہوں پر قابل اعتراض زبان استعمال کی گئی ہے۔ مولانا کلب جواد نے کہا کہ ڈی جی پی کو اس معاملے میں معافی مانگنی چاہیے۔ ایک طرف تمام مذہبی رہنما اس خط کی مخالفت کر رہے ہیں۔ وہیں دوسری جانب شیعہ وقف بورڈ کے سابق چیئرمین وسیم رضوی نے اس وائرل خط پر مچے ہنگامے پر سارا الزام مولاناؤں پر ڈال دیا ہے۔

      وسیم رضوی Wasim Rizvi نے اپنا بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ یہ انتہائی خفیہ خط وائرل ہوا ہے ،جس کے لیے یہ مولانا ذمہ دار اور قصورار ہیں۔ وسیم رضوی نے کہا کہ یہ مولانا ہی فسادات بھڑکانے کی سازش کر رہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ پولیس چیف کا انتہائی خفیہ خط وائرل ہوا جو کہ کچھ مولاناؤں اور تنظیموں کی طرف سے محرم کے آغاز سے قبل فسادات بھڑکانے کی کوشش معلوم ہوتی ہے۔

      انہوں نے کہا کہ مولانا شیعہ مسلک کے جذبات کو بھڑکانا چاہتے ہیں اور کوئی بڑا واقعہ رونما کرنا چاہتے ہیں تاکہ اس کی ذمہ داری حکومت پر ہو۔ وسیم رضوی نے کہا کہ آنے والے دنوں میں اگر اتر پردیش میں کوئی چھوٹا یا بڑا واقعہ ہوتا ہے تو اس کے ذمہ دار یہ مولانا ہوں گے اور اس واقعے میں ہونے والے نقصان کی تلافی بھی ان مولاناؤں سے ہی کروائی جانی چاہئے۔


      محرم کا مہینہ اسلامک کیلنڈر کا پہلا مقدس مہینہ ہے۔ملک بھر میں انیس اگست کو محرم کا اہتمام کیا جائے گا۔ساری دنیا کربلا کی تاریخ اور واقعات سے اچھی طرح واقف ہے۔ شیعہ برادری کے نزدیک ماہ محرم عقید ت اور سوگواری کا مہینہ ہے۔ واقعات کربلا، پوری دنیا کے انسانوں کو حق پر ڈٹے رہنے کا درس دیتاہے ۔ محرم حق و باطل کا درس دیتا ہے۔محرم سر کٹا کر دین اور انسانیت کو بچانے کا درس دینے والا مہینہ ہے۔جس طرح امام حسین سب کے ہیں اسی طرح غم خواری بھی سبھی کی ہے۔۔۔۔غم خواری کے اس مہینے کو تہوار نہیں کہہ سکتے۔۔

      اس کے ساتھ سینئر شیعہ عالم دین مولانا کلب جواد نے یوپی کی محرم کمیٹیوں کو کسی بھی پولیس میٹنگ میں شرکت نہ کرنے کا حکم جاری کیا ہے۔تحریر میں انداز و الفاظ کو بدلا جاسکتا ہے اور سرکاری کام کاج میں مذہبی معاملات کو لیکر بہت ہی احتیاط برتنی پڑتی ہے تاکہ کسی کے جذبات کو ٹھیس نہ پہنچیں ۔لیکن ناوقفیت کی وجہ سے ایسے واقعات ہوجاتے ہیں ۔ لیکن ہمیں یہ بھی نہیں بھولنا چاہئے کہ کورونا ابھی پوری طرح سے ختم نہیں ہوا ہے۔کورونا کیسس میں پھر سے اضافہ دیکھا جارہا ہے ۔غم خواری کے اس مہینے میں انسانیت کے دشمن ۔کورونا سے سب کو بچانا ہے۔ ورنہ آپ اچھی طرح جانتے ہیں کہ کورونا کی دوسری لہر میں کمبھ کو ذمہ دار ٹھہرایا گیاتھا۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: