ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہریانہ میں ہنگامہ کے سبب دہلی میں پانی ختم ، کل اسکول رہیں گے بند

نئی دہلی۔ ہریانہ میں جاری جاٹ آندولن کی وجہ سے دہلی میں پانی کا شدید بحران پیدا ہو گیا ہے۔

  • IBN Khabar
  • Last Updated: Feb 21, 2016 12:56 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ہریانہ میں ہنگامہ کے سبب دہلی میں پانی ختم ، کل اسکول رہیں گے بند
نئی دہلی۔ ہریانہ میں جاری جاٹ آندولن کی وجہ سے دہلی میں پانی کا شدید بحران پیدا ہو گیا ہے۔

نئی دہلی۔ ہریانہ میں جاری جاٹ آندولن کی وجہ سے دہلی میں پانی کا شدید بحران پیدا ہو گیا ہے۔ وزیر اعلی اروند کیجریوال نے آج کہا کہ دہلی میں سپلائی ہونے والا پانی 2 دن سے بند ہے۔ جاٹ آندولن کے چلتے دہلی میں پانی کی قلت کو لے کر آج سی ایم اروند کیجریوال کے گھر پر ہنگامی میٹنگ بھی ہوئی۔ میٹنگ میں ڈپٹی سی ایم منیش سسودیا، جل بورڈ صدر کپل مشرا، جل بورڈ سی ای او اور این ڈی ایم سی کے سیکرٹری موجود تھے۔


میٹنگ کے بعد کیجریوال نے کہا کہ ہریانہ میں جو آندولن چل رہا ہے اس کی وجہ سے منک نہر سے پانی نہیں آ رہا ہے۔ پرسوں رات سے سپلائی بند ہے جس کی وجہ سے دہلی میں پانی کا بحران ہو گیا ہے۔ ہم وزارت داخلہ اور ہریانہ حکومت سے مسلسل رابطے میں ہیں کہ کسی طرح سے وہاں سے پانی کی سپلائی کرائی جائے۔


مجھے امید ہے کہ راج ناتھ جی اور کھٹر جی اپنی طرف سے کوشش کر رہے ہیں۔ لیکن دہلی کو اس کے لئے تیار ہونا ہوگا اور اگر پانی کی سپلائی ہوتی بھی ہے تو 24 گھنٹے لگیں گے کم از کم۔ اس لئے ایمرجنسی میٹنگ میں یہ فیصلہ لیا گیا کہ صدر، وزیر اعظم، ڈیفنس اور اسپتال کو چھوڑ کر باقی سب کو برابر کا پانی دیا جائے گا۔ اس راشننگ میں ہم بھی شامل ہیں۔ اس لیے دہلی سے اپیل ہے کہ جتنا پانی ہے اس میں ہی کسی طرح سے گزارا کریں۔ کل سارے اسکول بھی بند رہیں گے۔ بہت ہی کم پانی بچا ہے۔ 7 ٹریٹمنٹ پلانٹ میں پانی ختم ہو گیا ہے۔


وہیں کپل مشرا نے اعلان کیا کہ دہلی میں پانی ختم ہو گیا ہے۔ پانی کے بحران کی وجہ سے کل سرکاری، نجی اسکول بند رہیں گے۔ صرف صدارتی محل، وزیر اعظم کی رہائش، آرمی تنصیب اور اسپتال اور فائر بریگیڈ میں پانی کی سپلائی مسلسل رہے گی۔ باقی سب جگہ ایک برابر پانی بھیجا جائے گا۔ صورت حال یہ ہے کہ پانی ہمارے پاس اب نہیں ہے، راشننگ کے بعد بھی ممکن نہیں ہے۔ حالت خراب ہونے کی صورت میں کل دہلی کے پرائیویٹ اور سرکاری اسکول بند رہیں گے۔

جنوبی دہلی میں پانی کی سپلائی پڑوسی ہریانہ کے منک نہر سے ہوتی ہے۔ نہر مکمل طور پر جاٹ مظاہرین کے قبضے میں ہے۔ دہلی کے وزیر کپل مشرا نے ٹوئٹ کیا ہے کہ دہلی حکومت پانی کے بحران پر سپریم کورٹ پہنچ گئی ہے۔ درخواست قبول ہو گئی ہے۔ اس پر آج سماعت ہونے کا امکان ہے۔

دہلی حکومت کے مطابق دہلی میں اتوار دوپہر تک کے لئے پانی دستیاب ہے۔ اگر منک نہر مظاہرین کے قبضے سے آزاد نہیں ہوئی تو دہلی میں پانی کے لئے ہاہاکار مچنا طے ہے۔

 
First published: Feb 21, 2016 10:10 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading