ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بنگال الیکشن سے قبل ترنمول کانگریس چھوڑنے کی قطار، آج 5 اراکین بی جے پی میں شامل

اسمبلی انتخابات الیکشن سے قبل مغربی بنگال (West Bengal Assembly Election) میں سیاسی رسہ کشی کا دور جاری ہے۔ ممتا بنرجی (Mamata Banerjee) کی پارٹی ترنمول کانگریس کے کئی لیڈر بی جے پی جوائن کرچکے ہیں۔

  • Share this:
بنگال الیکشن سے قبل ترنمول کانگریس چھوڑنے کی قطار، آج 5 اراکین بی جے پی میں شامل
بنگال الیکشن سے قبل ترنمول کانگریس چھوڑنے کی قطار، آج 5 اراکین بی جے پی میں شامل

کولکاتا: اسمبلی انتخابات الیکشن سے قبل مغربی بنگال (West Bengal Assembly Election) میں سیاسی رسہ کشی کا دور جاری ہے۔ ممتا بنرجی (Mamata Banerjee) کی پارٹی ترنمول کانگریس کے کئی لیڈر بی جے پی جوائن کرچکے ہیں۔ اب ترنمول کانگریس (ٹی ایم سی) کو آج پھر جھٹکا لگا، جب ان کے 5 اراکین اسمبلی بی جے پی میں شامل ہوئے۔ مغربی بنگال بی جے پی کے صدر دلیپ گھوش، بی جے پی لیڈر شوبھندو ادھیکاری اور مکل رائے کی موجودگی میں انہوں نے بی جے پی کی رکنیت حاصل کی۔


گزشتہ تقریباً تین ماہ سے ٹی ایم سی کے خیمے میں کھلبلی مچی ہے۔ ایک کے بعد ایک ٹی ایم سی کے عظیم لیڈر بی جے پی میں شامل ہو رہے ہیں۔ ترنمول کانگریس کے بڑے لیڈر مسلسل پارٹی چھوڑ رہے ہیں۔ ڈائمنڈ ہاربر رکن اسمبلی دیپک ہلدر، سابق وزیر شوبھندو ادھیکاری اور راجیو بنرجی، ٹالی ووڈ اداکار یش داس گپتا، ہیرن چٹرجی کے علاوہ تقریباً نصف درجن اداکار بی جے پی میں شامل ہوگئے ہیں۔ اس کے علاوہ کئی اور لیڈر پارٹی چھوڑنے کی مسلسل دھمکی دے رہے ہیں۔


ترنمول کانگریس کی فہرست


ٹی ایم سی اس بار 294 میں سے 291 سیٹوں پر الیکشن لڑے گی۔ تین سیٹیں معاون پارٹی گورکھا جن مکتی مورچہ کو دی گئی ہیں۔ اس بار کی فہرست میں کئی حیران کردینے والے اعدادوشمار سامنے آئے ہیں۔ مثلاً اس بار 50 خاتون امیدواروں کو ٹکٹ دیا گیا ہے، لیکن اب اس کی تعداد گھٹ کر 49 ہوگئی ہے۔ اس کے علاوہ اس فہرست میں مسلم امیدواروں کی تعداد کم ہے۔

بنگال میں ترنمول، بی جے پی کی انتخابی مہم میں اہم ہے خواتین کا موضوع

مغربی بنگال اسمبلی انتخابات کا وقت قریب آنے کے ساتھ ہی سیاسی جماعتوں کا خواتین کے موضوع پر زور بڑھتا جا رہا ہے۔ برسراقتدار ترنمول کانگریس اس بار اب تک کی سب سے زیادہ 50 خواتین امیدواروں کو انتخابی میدان میں اتارنے جا رہی ہے۔ حالانکہ بی جے پی نے اس سب کے درمیان الزام لگایا ہے کہ ممتا بنرجی حکومت کے اقتدار تلے خواتین کے خلاف جرائم بڑھ گئے ہیں۔

خواتین کو لبھانے کے لئے ترنمول کانگریس اپنی انتخابی مہم میں ‘سواستھ ساتھی‘ اور ’کنیا شری‘ جیسے منصوبوں کا زور شور سے تشہیر کر رہی ہیں۔ اس کا انتخابی نعرہ بھی ’بنگال کو اپنی بیٹی چاہئے‘ ہے۔ ترنمول کانگریس رکن پارلیمنٹ اور ترجمان کاکولی گھوش دستی دار کے مطابق، اس بار رائے دہندگان دیکھیں گے کہ ’اکیلی خاتون بنگال کے احترام کی خاطر باہرکے لوگوں سے لڑ رہی ہے‘۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Mar 08, 2021 07:34 PM IST