ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بی جے پی کو ہرانے کیلئے سب کا ایک ہونا ضروری ، سونیا گاندھی سے ملاقات کے بعد ممتا بنرجی کا بیان

ترنمول کانگریس سپریمو اور مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بنرجی نے بدھ کے روز کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) سے مقابلے کے لیے تمام اپوزیشن پارٹیوں کو ایک اسٹیج پر آکر اور مشترکہ طور پر کام کرنا چاہئے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jul 28, 2021 11:39 PM IST
  • Share this:
بی جے پی کو ہرانے کیلئے سب کا ایک ہونا ضروری ، سونیا گاندھی سے ملاقات کے بعد ممتا بنرجی کا بیان
بی جے پی کو ہرانے کیلئے سب کا ایک ہونا ضروری ، سونیا گاندھی سے ملاقات کے بعد ممتا بنرجی کا بیان

نئی دہلی : ترنمول کانگریس سپریمو اور مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بنرجی نے بدھ کے روز کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) سے مقابلے کے لیے تمام اپوزیشن پارٹیوں کو ایک اسٹیج پر آکر اور مشترکہ طور پر کام کرنا چاہئے۔ ممتا بنرجی نے یہاں صحافیوں سے کہا کہ بی جے پی سے مقابلہ کے لیے اپوزیشن پارٹیوں کو متحد ہوجانا چاہئے اور وہ بی جے پی سے مقابلے کے لیے مقدمۃ الجیش کا کردار ادا کرنے کو تیار ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ایک ایسا اسٹیج ہونا چاہئے ، جہاں سب مل کر کام کر سکیں ۔ یہ پوچھے جانے پر کہ کیا وہ اپوزیشن کی قیادت کریں گی؟ انہوں نے کہا کہ ہم کوئی سیاسی پیش گوئی کرنے والے نہیں ہیں۔ یہ حالات پر منحصر ہے ، اگر کوئی اور قیادت کرتا ہے تو مجھے کوئی مسئلہ نہیں ہے ۔


انہوں نے طویل مدتی منصوبے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ پارلیمنٹ کے مانسون سیشن کے بعد مشترکہ طور پر بات چیت کی جائے گی اور کوئی فیصلہ کیا جائے گا۔ یہ پوچھے جانے پر کہ کیا وہ اپوزیشن کا چہر ہ بن سکتی ہیں، انہوں نے کہا،’وہ ایک عام کارکن ہیں اور ایک عام کارکن ہی رہنا چاہتی ہیں‘۔


ممتا بنرجی نے بدھ کو کانگریس کی چیئرپرسن سونیا گاندھی سے ملاقات کی ۔ ملاقات میں سونیا گاندھی اور ممتا بنرجی کے علاوہ کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی بھی موجود تھے ، سونیا گاندھی اور ممتا بنرجی کے درمیان ملاقات پہلے سے طے تھی اور سمجھا جاتا ہے کہ دونوں رہنماؤں نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے خلاف مل کر لڑنے کی حکمت عملیوں پر تبادلہ خیال کیا ۔


ممتا بنرجی نے پیگاسس جاسوسی کے معاملے میں مودی حکومت پر سخت حملہ کیا اور کہا کہ موجودہ حالات ایمرجنسی سے بھی زیادہ سنگین ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ’پیگاسس ایک ’ہائی لائیٹیڈ وائرس‘ ہے۔ ہماری سلامتی خطرے میں ہے۔ کسی کو آزادی نہیں‘۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ’میرا فون ہیک کیا گیا۔ ابھیشیک بنرجی کا فون ہیک کیا گیا۔ پرشانت کشور کا فون ٹیپ کیا گیا۔ اگر آپ فون ہیک کر سکتے ہیں تو آپ کئی فون ہیک کر سکتے ہیں۔ یہ سنگین معاملہ ہے ، جس سے زندگی ، جائیداد اور سلامتی وابستہ ہے۔

انہوں نے سپریم کورٹ کی نگرانی میں پیگاسس معاملہ کی تفتیش کروانے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ انھیں سپریم کورٹ پر یقین ہے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 28, 2021 11:39 PM IST