உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Gyan Dev Ahuja: ’ہم نےاب تک 5 لوگوں کا قتل کیا‘ راجستھان بی جے پی کےسابق ایم ایل اے کاویڈیووائرل

    ’’بی جے پی کا اصل چہرہ بے نقاب ہو گیا ہے‘‘۔

    ’’بی جے پی کا اصل چہرہ بے نقاب ہو گیا ہے‘‘۔

    راجستھان کانگریس کے سربراہ گووند سنگھ دوتاسرا (Govind Singh Dotasra) نے آج ٹویٹر پر ویڈیو شیئر کیا اور کہا کہ بی جے پی کی مذہبی دہشت گردی اور تعصب کا مزید کیا ثبوت چاہیے؟ بی جے پی کا اصل چہرہ بے نقاب ہو گیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Mumbai | Delhi | Kolkata | Hyderabad | Jammu Cantonment
    • Share this:
      راجستھان کے بی جے پی لیڈر گیان دیو آہوجا (Gyan Dev Ahuja) بھیڑ سے ’گائے کے ذبیحہ میں ملوث کسی بھی شخص کو مارنے‘ پر زور دیتے ہوئے کیمرے میں ریکارڈ ہوئے ہیں۔ انھوصں نے کہا کہ ہم نے اب تک پانچ لوگوں کو خواہ وہ لالہ ونڈی میں ہو یا بہروڑ میں قتل کیا ہے۔ انھوں نے لنچنگ کا براہ راست حوالہ دیتے ہوئے رکبر خان اور پہلو خان ​​کا ذکر کیا ہے۔

      یہ دونوں قتل رام گڑھ میں ہوے تھے۔ ایک 2017 میں دوسرا 2018 میں ہوا تھا۔ یہ وہ علاقہ ہے، جہاں سے گیان دیو آہوجا ایم ایل اے تھے جب بی جے پی ریاست میں برسراقتدار تھی۔ یہ فوری طور پر واضح نہیں ہوسکا کہ وہ کن دیگر تین قتلوں کا حوالہ دے رہا تھا۔

      وہ ویڈیو میں کہتے ہیں کہ میں نے کارکنوں کو قتل کرنے کے لیے کھلا ہاتھ دیا ہے۔ ہم انہیں بری کر دیں گے اور ضمانت حاصل کر لیں گے۔ پہلو خان ​​کے قتل کے تمام چھ ملزمان کو 2019 میں بری کر دیا گیا لیکن ریاست کی کانگریس حکومت کی طرف سے ایک اپیل اب ہائی کورٹ میں زیر التوا ہے۔ رکبر خان قتل کیس کی سماعت مقامی عدالت میں جاری ہے۔

      ہفتہ کو اس ویڈیو کے وائرل ہونے کے بعد بی جے پی لیڈر پر تعزیرات ہند کی دفعہ 153اے کے تحت فرقہ وارانہ انتشار پھیلانے کے الزام میں مقدمہ درج کیا گیا۔ وہ پہلے بھی اسی طرح کے تبصرے کر چکے ہیں، وہ یہ کہتے ہیں کہ قاتل محب وطن اور چھترپتی شیواجی اور گرو گوبند سنگھ کی حیقی اولاد ہیں۔

      بی جے پی کی الور یونٹ نے آج کہا کہ یہ ان کے اپنے خیالات ہیں۔ بی جے پی کے الور ساؤتھ کے سربراہ سنجے سنگھ ناروکا نے خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا کہ پارٹی کے پاس یہ سوچ نہیں ہے۔ لیکن مسٹر آہوجا نے اپنے موقف کا دفاع کیا اور کہا کہ گائے کی اسمگلنگ اور ذبیحہ میں ملوث کسی کو بھی بخشا نہیں جائے گا۔ میں نے کہا کہ پانچ میو مسلمانوں کو جو گائے اسمگل کر رہے تھے، ہمارے کارکنوں نے مارا پیٹا۔

      ویڈیو میں انھوں نے یہ تبصرے ایک اور اسپیکر کی اپیل کو شامل کرتے ہوئے کیے۔ انہوں نے اسے آر ایس ایس کا لیڈر بتایا۔ 45 سالہ چرنجی لال سینی کے قتل کے خلاف احتجاج کیا گیا۔ جسے گووند گڑھ قصبے میں ایک ہجوم کے ہاتھوں مارا گیا تھا۔ بی جے پی کے لیڈروں اور دائیں بازو کے گروپوں نے کہا ہے کہ یہ مذہب کے نام پر لنچنگ ہے، حالانکہ پولیس کو فرقہ وارانہ زاویہ نہیں ملا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: 


      راجستھان کانگریس کے سربراہ گووند سنگھ دوتاسرا (Govind Singh Dotasra) نے آج ٹویٹر پر ویڈیو شیئر کیا اور کہا کہ بی جے پی کی مذہبی دہشت گردی اور تعصب کا مزید کیا ثبوت چاہیے؟ بی جے پی کا اصل چہرہ بے نقاب ہو گیا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: