உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستان کی حراست میں رہنے کے دوران ابھینندن نے فون پر اپنی اہلیہ سے کیا کہا تھا، جانیں

    ایئر فورس کے ونگ کمانڈر ابھینندن: فائل فوٹو

    ایئر فورس کے ونگ کمانڈر ابھینندن: فائل فوٹو

    محکمہ دفاع کے آفیسر نے بتایا کہ پاکستانی خفیہ ایجنسی کے ایک آفیسر نے ابھینندن کی بات ان کی اہلیہ سے کرا کر ان کا اعتماد حاصل کرنے کی چال چلی تھی

    • Share this:
      اپنی  بہادری سے پاکستان کے دانت کھٹے کر دینے والے ہندوستانی فضائیہ کے جانباز ونگ کمانڈر ابھینندن ورتمان جب پاکستان کی حراست میں تھے تب پاکستان کی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی کے ذریعہ ٹیلی فون پر ابھینندن کی بات ان کی اہلیہ کے ساتھ کرائی گئی تھی۔ اس مشکل گھڑی میں بھی ابھینندن اور ان کی اہلیہ تنوی مارواہ نے صبر نہیں کھویا تھا اور مذاق کرتے ہوئے کہا تھا کہ ’ چائے کی ریسیپی لے آنا‘۔

      بتا دیں کہ ابھینندن کا ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر شئیر ہوا تھا جس میں ابھینندن پاکستان کی قید میں تھے اور وہاں کا ایک آفیسر ان سے پوچھ گچھ کر رہا تھا۔ اس ویڈیو میں ابھینندن چائے کی چسکی لیتے نظر آ رہے تھےاور پاکستانی آفیسر کے ذریعہ پوچھے جانے پر ونگ کمانڈر نے اس چائے کی تعریف بھی کی تھی۔

      محکمہ دفاع کے ایک سینئر آفیسر کے ساتھ بات چیت کی بنیاد پر دی پرنٹ نے یہ جانکاری دی ہے۔ محکمہ دفاع کے آفیسر نے بتایا کہ پاکستانی خفیہ ایجنسی کے ایک آفیسر نے ابھینندن کی بات ان کی اہلیہ سے کرا کر ان کا اعتماد حاصل کرنے کی چال چلی تھی۔ حالانکہ ونگ کمانڈر اور ان کی اہلیہ نے ایسے حالات میں بھی خود کو سنبھالے رکھا۔

      یہ بھی پڑھیں: پاکستان کے ایف۔16 کو مار گرانے والے جانباز ابھینندن سری نگر اپنے اسکواڈرن لوٹے

      بتا دیں کہ تنوی مارواہ خود ہندوستانی فضائیہ میں ہیلی کاپٹر پائلٹ رہ چکی ہیں۔ پاکستان کی خفیہ ایجنسی کے ذریعہ سعودی عرب کے روٹ سے تنوی مارواہ کو فون کیا گیا۔ جب تنوی نے فون پر ابھینندن کی آواز سنی تو وہ سمجھ گئیں کہ یہ آئی ایس آئی کی چال ہو سکتی ہے۔ اس لئے انہوں نے اس کال کو ریکارڈ کر لیا۔

      دی پرنٹ کے مطابق، بات چیت میں تنوی نے مذاق میں پوچھا کہ ’ چائے کیسی تھی؟‘‘۔ اس پر ونگ کمانڈر نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ ’ اچھی تھی‘۔ تنوی نے پھر پوچھا کہ ’مجھ سے بھی اچھی بنائی تھی‘؟ اس پر ونگ کمانڈر نے ہنستے ہوئے کہا کہ ’ ہاں، یہ بہت اچھی تھی‘۔ اس پر تنوی نے کہا کہ ’ ریسیپی لیتے ہوئے آنا‘۔

       

       
      First published: