ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ارجن ایوارڈ سلیکشن کمیٹی سے کیوں ناراض ہے یہ ورلڈ شوٹنگ چیمپیئن ، جانئے اصل معاملہ

نیشنل چیمپیئن شپ کے علاوہ ایشیائی کھیلوں ، کامن ویلتھ گیمز اور انٹرنیشنل نشانے بازی مقابلوں میں گولڈ میڈل حاصل کرکے اپنے ملک کا نام روشن کرنے والے شحذر رضوی اس سال بھی ارجن ایوارڈ کے لیے منتخب نہ کیے جانے سے اتنے مایوس ہیں کہ ان کے اہل خانہ کو یہ درد ظاہر کرنا پڑا ۔

  • Share this:
ارجن ایوارڈ سلیکشن کمیٹی سے کیوں ناراض ہے یہ ورلڈ شوٹنگ چیمپیئن ، جانئے اصل معاملہ
ارجن ایوارڈ سلیکشن کمیٹی سے کیوں ناراض ہے یہ ورلڈ شوٹنگ چیمپیئن ، جانئے اصل معاملہ

ایئرگن شوٹنگ میں دنیا کے نمبر ایک کھلاڑی رہے میرٹھ کے شحذر رضوی کا مسلسل تیسرے سال بھی ارجن ایوارڈ کے لیے انتخاب نہ کیے جانے سے شحذر اور ان کے اہل خانہ کے علاوہ کھیل کو پسند کرنے والے بھی مایوس اور حیران ہیں ۔ فیڈریشن کے ذریعہ گزشتہ تین سال سے نام بھیجے جانے کے باوجود شحذر کو نظر انداز کیے جانے سے اب شحذر اور ان کے اہل خانہ سلیکشن کمیٹی اور حکومت پر جانب دارانہ رویہ اختیار کرنے کا الزام لگاتے ہوئے اپنی ناراضگی ظاہر کر رہے ہیں ۔ میرٹھ سے تعلق رکھنے والے ایئر پسٹل شوٹنگ چیمپیئن سوربھ چودھری اور ریسلر دیویا کاک ران کا انتخاب اس سال ارجن ایوارڈ کے لیے کیا گیا ہے ۔ وہیں گزشتہ نو برسوں سے قومی سے لیکر عالمی سطح کے تمام ایئر گن نشانے بازی مقابلوں میں گولڈ میڈل حاصل کرکے اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوانے والے شحذر رضوی کو اس سال بھی سلیکشن کمیٹی نے نظر انداز کر دیا ہے ۔


نیشنل چیمپیئن شپ کے علاوہ ایشیائی کھیلوں ، کامن ویلتھ گیمز اور انٹرنیشنل نشانے بازی مقابلوں میں گولڈ میڈل حاصل کرکے اپنے ملک کا نام روشن کرنے والے شحذر رضوی اس سال بھی ارجن ایوارڈ کے لیے منتخب نہ کیے جانے سے اتنے مایوس ہیں کہ ان کے اہل خانہ کو یہ درد ظاہر کرنا پڑا ۔ شحذر کے اہل خانہ کے مطابق اس سال بھی ارجن ایوارڈ  کے لئے نام کا انتخاب نہ کیے جانے سے شحذر بے حد مایوس اور رنجیدہ ہیں ، لیکن دہلی شوٹنگ رینج میں اپنی پریکٹس کو جاری رکھے ہوئے ہیں ۔


سلیکشن کمیٹی کے اس رویہ سے شحذر کے مداح اور دوسرے جونئیر کھلاڑی بھی مایوس ہیں ۔ کھیل کے میدان میں اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کرکے میڈل حاصل کرنا جہاں کھلاڑیوں کا انعام ہوتا ہے ، وہیں ایک کھلاڑی کے لیے ایوارڈ کی اہمیت اس کی محنت اور صلاحیتوں کی  حوصلہ افزائی سے ہے ۔ لیکن شحذر کو حاصل ہونے والے تمغے عالمی سطح پر اس کھلاڑی کی صلاحیتوں کو تو ثابت کرتے ہیں ، لیکن ایوارڈ کے لیے نام کے انتخاب کے موقع پر ان کامیابیوں کو کیوں نظر انداز کر دیا جاتا ہے ، اس کا جواب صرف سلیکشن کمیٹی کے پاس ہے ۔

Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Aug 20, 2020 11:52 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading