உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Neeraj Chopra: ’’ہندوستان کیلئے ہمیشہ اپنی بہترین کارکردگی پیش کروں گا‘‘ نیرج چوپڑا نے پدم شری سے نوازے جانے کے بعد کہیں یہ باتیں

    نیرج چوپڑا (Neeraj Chopra)

    نیرج چوپڑا (Neeraj Chopra)

    نیرج چوپڑا نے پچھلے سال اولمپکس میں ہندوستان کا پہلا ایتھلیٹکس گولڈ میڈل جیت کر تاریخ رقم کی تھی۔ وہ شوٹر ابھینو بندرا کے بعد اولمپک گولڈ جیتنے والے دوسرے ہندوستانی بن گئے۔

    • Share this:
      پرم وششٹ سیوا میڈل (Param Vishisht Seva Medal) کے ساتھ ساتھ پدم شری (Padma Shri) کا اعلان کیے جانے کے بعد نیرج چوپڑا (Neeraj Chopra) نے سوشل میڈیا پر ہندوستانیوں کا شکریہ ادا کیا ہے۔ نیرج چوپڑا نے ٹویٹر پر پوسٹ کیا کہ ’’میں پدم شری ایوارڈ اور پرم وششٹ سیوا میڈل سے نوازے جانے کی خبر سن کر بے حد خوش ہوں۔ آپ کے تعاون کے لئے آپ سب کا بہت شکریہ۔ میری محنت اور کوشش ہمیشہ یہ رہے گی کہ اپنے ملک کے لیے بہترین کارکردگی پیش کروں‘۔

      نیرج چوپڑا نے پچھلے سال اولمپکس میں ہندوستان کا پہلا ایتھلیٹکس گولڈ میڈل جیت کر تاریخ رقم کی تھی۔ وہ شوٹر ابھینو بندرا کے بعد اولمپک گولڈ جیتنے والے دوسرے ہندوستانی بن گئے۔ چوپڑا نے اگست 2021 میں ٹوکیو اولمپکس میں جیولین تھرو کے فائنل میں 87.58 میٹر کا دوسرا راؤنڈ تھرو تیار کیا تھا۔ ہندوستانی فوج نے منگل کو یوم جمہوریہ 2022 کے موقع پر ان کی بہادری اور ممتاز خدمات کے لئے نوازے گئے فوجی اہلکاروں کی فہرست جاری کی۔

      چوپڑا کے ساتھ ہندوستانی فوج کے 18 دیگر حاضر سروس اور ریٹائرڈ اہلکاروں کو پرم وششٹ سیوا میڈل سے نوازا گیا ہے۔ چوپڑا کو 2018 میں ارجن ایوارڈ اور 2020 میں وشست سیوا میڈل (VSM) سے نوازا گیا تھا جو کہ کھیلوں میں ان کی شاندار کارکردگی پر ہے۔

      چوپڑا نے 15 مئی 2016 کو 4 راجپوتانہ رائفلز میں بطور نائب صوبیدار داخلہ لیا تھا۔ فوج میں شامل ہونے کے بعد انہیں ’مشن اولمپکس ونگ‘ کے ساتھ ساتھ آرمی اسپورٹس انسٹی ٹیوٹ، پونے میں تربیت کے لیے منتخب کیا گیا۔ مشن اولمپکس ونگ ہندوستانی فوج کی جانب سے مختلف قومی اور بین الاقوامی مقابلوں کے لیے 11 شعبوں میں ہونہار کھلاڑیوں کی شناخت اور تربیت کے لیے ایک پہل ہے۔

      دیگر پدم شری ایوارڈ یافتہ افراد میں 20 سالہ پیرا شوٹر اونی لیکھارا پیرا بیڈمنٹن کھلاڑی پرمود بھگت اور پیرا جیولن پھینکنے والے سمیت انٹیل شامل ہیں۔ اس کے علاوہ یہ اعزاز حاصل کرنے والے 93 سالہ کلاریپائیتو (مقامی مارشل آرٹ فارم) کے لیجنڈ سنکرارائن مینن چنڈیل سابق بین الاقوامی مارشل آرٹ چیمپئن فیصل علی ڈار 67 سالہ ہندوستانی فٹ بال ٹیم کے سابق کپتان برہمانند سنکھوالکر اور 29 سالہ خاتون ہاکی کھلاڑی وندنا کٹاریہ کے نام شامل ہیں۔

      سنکھوالکر ہندوستان کے بہترین گول کیپرز میں سے ایک ہیں۔ انہوں نے 1983 سے 1986 تک ٹیم کی قیادت کی۔ خواتین کی ہاکی کھلاڑی کٹاریا نے ہندوستان کے لیے 200 سے زیادہ کھیل کھیلے ہیں اور ٹوکیو اولمپکس میں ہیٹ ٹرک ریکارڈ کی ہے جہاں ہندوستان نے چوتھے نمبر پر رہ کر تاریخ رقم کی۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: