ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

راجیہ سبھا امیدواروں کو لے کر یوگیندر یادو اور پرشانت بھوشن کا کیجریوال پر نشانہ ، بتایا شرمسار کن فیصلہ

عام آدمی پارٹی (آپ) کے راجیہ سبھا امیدواروں کے اعلان کے بعد وزیر اعلی اروند کیجریوال کے قریبی ساتھی رہے یوگیندر یادو نے سخت حملہ کرتے ہوئے اس فیصلے کو ’حیران، ساکت اور شرمسار‘ کرنے والا قرار دیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jan 03, 2018 10:33 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
راجیہ سبھا امیدواروں کو لے کر یوگیندر یادو اور پرشانت بھوشن کا کیجریوال پر نشانہ ، بتایا شرمسار کن فیصلہ
سوراج انڈیا کے صدر یوگیندر یادو: فائل فوٹو۔

نئی دہلی: عام آدمی پارٹی (آپ) کے راجیہ سبھا امیدواروں کے اعلان کے بعد وزیر اعلی اروند کیجریوال کے قریبی ساتھی رہے یوگیندر یادو نے سخت حملہ کرتے ہوئے اس فیصلے کو ’حیران، ساکت اور شرمسار‘ کرنے والا قرار دیا ہے۔ پارٹی نے دہلی سے راجیہ سبھا کی تین نشستوں کے لئے معلنہ امیدواروں میں پارٹی کے قومی ترجمان سنجے سنگھ، سابق کانگریس لیڈر سشیل گپتا اور چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ نارائن داس گپتا شامل ہیں۔

مسٹر یادو نے ٹوئٹر پر مسٹر کیجریوال کو گھیرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ تین سال میں میں نے نہ جانے کتنے لوگوں سے کہا کہ اروند کیجریوال میں اور جو بھی عیب ہوں لیکن کوئی اسے خرید نہیں سکتا۔ اسی لیے کپل مشرا کے الزام کو میں نے مسترد کیا لیکن آج سمجھ نہیں پا رہا ہوں کہ کیا کہوں، حیران ہوں، ساکت ہوں اور شرمسار بھی‘‘۔

انہوں نے مزید لکھا، ’’میں اروند کیجریوال اور آپ پارٹی کے ساتھ ایک وقت جڑے رہنے کو لے کر شرمندہ ہوں‘‘۔ مسٹر کیجریوال کے ایک اور سابق قریبی ساتھی اور آپ پارٹی کے بانی ارکان میں اہم رہے پرشانت بھوشن نے بھی راجیہ سبھا کے امیدواروں کو لے کر سوال اٹھائے۔ وکیل بھوبشن نے لکھا، ’’جن لوگوں کو آپ نے راجیہ سبھا کے لئے امیدوار بنایا ہے ان کاعوامی خدمات سے کوئی تعلق نہیں ہے ۔

First published: Jan 03, 2018 10:33 PM IST