உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ذاکر نائیک کا یو آر ایل بلاک ، پیس ٹی وی دکھانے پرکیبل آپریٹروں پر ہوسکتی ہے کارروائی

    نئی دہلی : ڈاکٹر ذاکر نائک اور پیس ٹی وی پر حکومت نے سختی شروع کر دی ہے۔ اطلاعات و نشریات کے وزیر وینکیا نائیڈو نے ایک میٹنگ طلب کی ، جس میں بغیر لائسنس والے چینلوں پر سخت کارروائی کی بات کہی گئی۔

    نئی دہلی : ڈاکٹر ذاکر نائک اور پیس ٹی وی پر حکومت نے سختی شروع کر دی ہے۔ اطلاعات و نشریات کے وزیر وینکیا نائیڈو نے ایک میٹنگ طلب کی ، جس میں بغیر لائسنس والے چینلوں پر سخت کارروائی کی بات کہی گئی۔

    نئی دہلی : ڈاکٹر ذاکر نائک اور پیس ٹی وی پر حکومت نے سختی شروع کر دی ہے۔ اطلاعات و نشریات کے وزیر وینکیا نائیڈو نے ایک میٹنگ طلب کی ، جس میں بغیر لائسنس والے چینلوں پر سخت کارروائی کی بات کہی گئی۔

    • Pradesh18
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی : ڈاکٹر ذاکر نائک اور پیس ٹی وی پر حکومت نے سختی شروع کر دی ہے۔ اطلاعات و نشریات کے وزیر وینکیا نائیڈو نے ایک میٹنگ طلب کی ، جس میں بغیر لائسنس والے چینلوں پر سخت کارروائی کی بات کہی گئی۔ میٹنگ کے بعد وزیر مملکت وردھن سنگھ راٹھور نے کہا کہ جو چینل لائسنس والے نہیں ہیں، اگر ان کا ٹرانسمیشن کیبل آپریٹر کرتے ہیں ، تو ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ ان کا سامان بھی ضبط کیا جائے گا۔ اس سلسلے میں ایڈوائزری بھی جاری کی جا رہی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ حکومت نے ذاکر نائک کے یو آر ایل کو بلاک کر دیا ہے۔ یہی نہیں ذرائع کی مانیں تو حکومت یو ٹیوب سے بھی ذاکر نائک کے کلپ کو لے کر بات کر سکتی ہے۔
      راٹھور نے بتایا کہ تمام اضلاع کے ڈی ایم کو کہا گیا ہے کہ جن چینلوں کے پاس لائسنس نہیں ہے، ان کی نشریات روک دیں۔ راٹھور نے کہا کہ جن چینل کو براڈکاسٹنگ کی اجازت ہے، انہیں ہی لائسنس دیا گیا ہے، جو بغیر لائسنس کے چینل چلا رہے ہیں، ان کا آلہ ضبط کیا جاسکتا ہے۔ پیس ٹی وی دکھانے والا یو آر ایل بھی بلاک کیا جائے گا۔
      میٹنگ میں ضلع مانيٹرنگ اور ریاست مانيٹرنگ کمیٹی کو ایسی سرگرمیوں پر نظر رکھنے کے لئے ایڈوائزری بھی جاری کی گئی ہے اور وزارت داخلہ سے بھی اس سلسلے میں کہا گیا ہے۔ سوشل میڈیا پر بھی اگر کچھ نظر آئے گا ، تو اسے بھی سنجیدگی سے لیا جائے گا ، کارروائی ہوگی۔
      First published: