اخلاق کے گھر سے ملا گوشت کا ٹکڑا گائےکا نہیں بلکہ بکرے کا تھا: رپورٹ

دادری۔ دہلی سے ملحق گریٹرنوئیڈا کے دادری علاقے میں گائے کاگوشت رکھنے کی افواہ کے بعد محمد اخلاق نام کے ایک شخص کو سینکڑوں لوگوں کی بھیڑ نے پیٹ پیٹ کر ہلاک کردیا تھا۔

Dec 29, 2015 08:54 AM IST | Updated on: Dec 29, 2015 08:56 AM IST
اخلاق کے گھر سے ملا گوشت کا ٹکڑا گائےکا نہیں بلکہ بکرے کا تھا: رپورٹ

دادری۔  دہلی سے ملحق گریٹرنوئیڈا کے دادری علاقے میں گائے کاگوشت رکھنے کی افواہ کے بعد محمد اخلاق نام کے ایک شخص کو سینکڑوں لوگوں کی بھیڑ نے پیٹ پیٹ کر ہلاک کردیا تھا۔ لیکن اب اس سلسلے میں ایک نیا انکشاف ہوا ہے کہ جس گوشت کے لئے اتنا ہنگامہ ہوا وہ گائے کانہیں بلکہ بکرے کا تھا۔

اتر پردیش حکومت کی ایک رپورٹ میں گوتم بدھ نگر کے ایک مویشی پروری کے افسر کے حوالے سے یہ اطلاع دی گئی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ بادی النظر میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ اخلاق کے گھر سے پایا گیا گوشت کا ٹکڑا گائے کا نہیں بلکہ بکرے کا ہے۔ رپورٹ میں ساتھ ہی یہ بھی کہا گیا ہے کہ ٹکڑے کا نمونہ جانچ کے لئے متھرا کی فورنسک لیباریٹری کو بھی بھیجا گیا ہے، اس کی حتمی رپورٹ آنے کا انتظار کیا جا رہا ہے۔

دادری میں ہوئے اس قتل کے سلسلے میں اس ماہ کے شروع میں پولیس نے بھارتیہ جنتا پارٹی کے مقامی رہنما کے ایک بیٹے سمیت 15 لوگوں کے خلاف چارج شیٹ داخل کی ہے۔ دادری میں یہ واقعہ 28 ستبر کو پیش آیا تھا جب گائےکاگوشت پکائے جانے کی افواہ پر سینکڑوں لوگوں نے اخلاق کے گھر کو گھیر لیا تھا اور اس کی جم کر پٹائی کی تھی جس سے اس کی موقع پر ہی موت ہو گئی تھی جبکہ اس کا بیٹا زخمی ہوگیا تھا۔

اس واقعہ پر پورے ملک میں کافی ناراضگی ظاہر کی گئی تھی اور بہت سے ادیبوں نے اپنے ایوارڈ واپس کر دیئے تھے۔

Loading...

Loading...