مرکزی وزیر ارون جیٹلی نے کہا : اظہار رائے کی آزادی کو عوامی مفاد میں پابند کیا جاسکتا ہے

نئی دہلی:اطلاعات و نشریات کے وزیر ارون جیٹلی نے آج کہا کہ گو الیکٹرانک میڈیا کے وجود میں آنے کے بعد پابندیوں کا زمانہ ختم ہوچکا ہے

Oct 26, 2015 09:31 PM IST | Updated on: Oct 26, 2015 09:31 PM IST
مرکزی وزیر ارون جیٹلی نے کہا : اظہار رائے کی آزادی کو عوامی مفاد میں پابند کیا جاسکتا ہے

نئی دہلی:اطلاعات و نشریات کے وزیر ارون جیٹلی نے آج کہا کہ گو الیکٹرانک میڈیا کے وجود میں آنے کے بعد پابندیوں کا زمانہ ختم ہوچکا ہے مگر سوشل میڈیا پرایسا جنون پیدا ہوتا ہے کہ جس سے نقص امن کو خطرہ پیدا ہوسکتا ہے تو آزادی رائے کو آزادی کو عارضی طور سے پابند کیا جاسکتا ہے۔

مسٹر جیٹلی نے کہاکہ ہندستان جیسے کثیر ثقافتی ، کثیر مذہبی ، سماجی میں ہمیشہ ایک لکشمن ریکھا (حد) رہی ہے۔ جسے شہریوں کو اظہار رائے کی آزادی کے تحت پار نہیں کرنا چاہئے۔

انہوں نے کہا آئین کی دفعہ 19 کےتحت تحریر و تقریر کی جو آزادی دی گئی ہے وہ لامحدود نہیں ہے۔ عوام کےوسیع مفاد ہیں اور ملک کے اتحاد و سالمیت کےمفادمیں اسےمحدود کیا جاسکتا ہے۔ اسی وجہ سے مسٹر جیٹلی نے میڈیا کے لوگوں کےخبر کے وسیلہ کو راز میں رکھنے کےحق پر بھی سوال اٹھائے۔

انہوں نے کہا کہ جس سمت میں دنیا کی قانون سےمتعلق رائے جاری ہے اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ آپ کو اپنے وسائل چھپانے کا کوئی بنیادی حق نہیں ہے۔ آپ محض عوامی مفاد میں ایسا کرسکتے ہیں۔

Loading...

Loading...