دہلی کے پرنسپل سکریٹری اور چھ دیگر افراد کے خلاف مقدمہ درج ، چھاپے میں 13 لاکھ برآمد

نئی دہلی: مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) نے آج دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال کے پرنسپل سکریٹری راجندر کمار اور دیگر چھ اہلکاروں کے خلاف کیس درج کیا جن میں آر ایس کوشک ، اے کے دوگل ، جی کے نندا، سندیپ کمار ا ور دنیش کے گپتا وغیرہ شامل ہیں جن کے خلاف مجرمانہ سازش اور غلط سلوک کرنے کے الزامات ہیں۔

Dec 16, 2015 12:10 AM IST | Updated on: Dec 16, 2015 12:10 AM IST
دہلی کے پرنسپل سکریٹری اور چھ دیگر افراد کے خلاف مقدمہ درج ، چھاپے میں 13 لاکھ برآمد

نئی دہلی: مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) نے آج دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال کے پرنسپل سکریٹری راجندر کمار اور دیگر چھ اہلکاروں کے خلاف کیس درج کیا جن میں آر ایس کوشک ، اے کے دوگل ، جی کے نندا، سندیپ کمار ا ور دنیش کے گپتا وغیرہ شامل ہیں جن کے خلاف مجرمانہ سازش اور غلط سلوک کرنے کے الزامات ہیں۔

ایف آئی آر میں یہ الزام لگایا گیا ہے کہ یہ تمام سینئر نوکر شاہو نے 2007 کے بعد دہلی سرکار کے مختلف عہدوں پر اپنی مدت کار کے دوران دہلی کی ایک پرائیویٹ کمپنی کو فائدہ پہنچانے کا کام کیا ہے۔

ملزمان نے مبینہ طور پر مذکورہ کمپنی کو 9.50 کروڑ روپے کا ٹھیکہ الاٹ کیا تھا اوراس کے لئے پبلک سرونٹ کے بطور اپنی سرکاری عہدے کا غلط استعمال کیا۔ ان ملزمان نے ہی مذکورہ بالا پرائیویٹ کمپنی کو دہلی ٹرانسکو لمیٹڈ ، محکمہ صحت و خاندانی بہبود، دہلی جل بورڈاورمحکمہ تجارت و محصولات میں خطیر رقم کے پروجیکٹ دلانے میں مدد کی تھی۔

واضح رہے سی بی آئی کی ٹیم نے آج ہی پرنسپل سکریٹری راجندر کمار کی رہائش اور دفتر میں چھاپہ مارا اور مسٹر راجندر کمار کو پوچھ گچھ کو سی بی آئی ہیڈکوارٹر لے گیاتھا۔

Loading...

Loading...