کانگریس کا پارلیمنٹ میں ہنگامہ نیشنل ہیرالڈ معاملے پر نہیں: غلام نبی آزاد

نئی دہلی ۔ راجیہ سبھا میں حزب اختلاف کے رہنما غلام نبی آزاد نے کہا کہ گزشتہ چار دنوں سے میڈیا میں اس طرح کی خبریں آ رہی ہیں کہ کانگریس نیشنل ہیرالڈ معاملے کو لے کر راجیہ سبھا کی کارروائی نہیں چلنے دے رہی ہے جبکہ حقیقت یہ ہے کہ پہلے دو دنوں تک ایک مرکزی وزیر کے ایوان میں آنے اور اس کے بعد بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت والی تین ریاستوں کے وزرائے اعلی کے خلاف کارروائی نہ کئے جانے کی مخالفت کے سبب تعطل کی صورتحال پیدا ہوئی تھی۔

Dec 12, 2015 08:16 AM IST | Updated on: Dec 12, 2015 08:16 AM IST
کانگریس کا پارلیمنٹ میں ہنگامہ نیشنل ہیرالڈ معاملے پر نہیں: غلام نبی آزاد

نئی دہلی ۔ راجیہ سبھا میں حزب اختلاف کے رہنما غلام نبی آزاد نے  کہا کہ گزشتہ چار دنوں سے میڈیا میں اس طرح کی خبریں آ رہی ہیں کہ کانگریس نیشنل ہیرالڈ معاملے کو لے کر راجیہ سبھا کی کارروائی نہیں چلنے دے رہی ہے جبکہ حقیقت یہ ہے کہ پہلے دو دنوں تک ایک مرکزی وزیر کے ایوان میں آنے اور اس کے بعد بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت والی تین ریاستوں کے وزرائے اعلی کے خلاف کارروائی نہ کئے جانے کی مخالفت کے سبب تعطل کی صورتحال پیدا ہوئی تھی۔

مسٹر آزاد نے کل لنچ کے بعد شام ساڑھے تین بجے دوسری بار کارروائی شروع ہونے پر کہا ہے کہ پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا میں ایسی خبریں آ رہی ہیں کہ کانگریس نیشنل ہیرالڈ معاملے کو لے کر ایوان کی کارروائی نہیں چلنے دے رہی ہے جبکہ حقیقت یہ نہیں ہے۔ کانگریس کی عدالت سے کوئی شکایت نہیں ہے اور اس کے احتجاج کا نیشنل ہیرالڈ معاملے سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی وزیر مملکت برائے خارجہ جنرل وی کے سنگھ کے قبل ازیں دیے گئے ایک بیان کو لے کر ان کے ایوان میں آنے پر پہلے دو دن احتجاج کیا گیا تھا اور اس کے بعد راجستھان، چھتیس گڑھ اور مدھیہ پردیش کے وزرائے اعلی کے خلاف کارروائی نہ کئے جانے کی مخالفت میں ہنگامہ ہوا تھا۔ ان تینوں وزرائے اعلی کے خلاف مقدمہ درج کرنا تو دور کی بات ہے، حکومت انہیں نوٹس بھی جاری نہیں کر رہی ہے۔

مسٹر آزاد نے کہا کہ کانگریس کی بات تو چھوڑ دیجئے ، جب معاملہ ترنمول کانگریس، بہوجن سماج پارٹی، ڈی ایم کے کا ہوتا ہے تو فوراً کارروائی کی جاتی ہے جبکہ بی جے پی وزرائے اعلی کے خلاف کوئی کارروائی نہیں ہو رہی ہے۔ مسٹر آزاد کے اس بیان کے بعد پارلیمانی امور کے وزیر مملکت مختار عباس نقوی نے کہا کہ یہ تاثر پیدا ہوا تھا کہ کانگریس نیشنل ہیرالڈ معاملے کو لے کر ہی ایوان کی کارروائی نہیں چلنے دے رہی ہے، لیکن مسٹر آزاد اب واضح کر رہے ہیں تو یہ اچھی بات ہے۔

Loading...

Loading...