کیجریوال نے پھر کئے ٹویٹ، ڈی ڈی سی اے کی جانچ سے جیٹلی اتنے خوف زدہ کیوں ہیں؟

نئی دہلی۔ دہلی حکومت کے پرنسپل سکریٹری راجندر کمار کے سیکرٹریٹ پر سی بی آئی نے منگل کو چھاپہ مارا۔

Dec 16, 2015 11:52 AM IST | Updated on: Dec 16, 2015 11:52 AM IST
کیجریوال نے پھر کئے ٹویٹ،  ڈی ڈی سی اے کی جانچ سے جیٹلی اتنے خوف زدہ کیوں ہیں؟

نئی دہلی۔ دہلی حکومت کے پرنسپل سکریٹری راجندر کمار کے سیکرٹریٹ پر سی بی آئی نے منگل کو چھاپہ مارا۔ سی بی آئی کے چھاپے مارنے کے بعد کیجریوال نے مسلسل کئی ٹویٹ کر مرکزی حکومت اور مودی پر جم کر حملہ بولا۔

وہیں کیجریوال نے اس معاملے کو ایک نیا موڑ دے دیا ہے۔ کیجریوال نے ایک ڈاکیومنٹ ٹویٹ کر کہا ہے کہ میرے دفتر سے کاغذات سیل کئے گئے ہیں۔ ان کا الزامات کی تحقیقات سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ میرے دفتر کی ایک ماہ کی فائل موومنٹ کی معلومات لے گئے ہیں۔

Loading...

اگلے ٹویٹس میں کیجریوال نے کہا کہ سی بی آئی ڈی ڈی سی اے کی فائل پڑھتی رہی۔ انہوں نے وہ ضبط کر لی ہوتی، لیکن میڈیا میں میرے بولنے کے بعد وہ چلے گئے۔ پتہ نہیں کہ وہ اس کی کاپی لے گئے یا نہیں۔ آگے کی ٹویٹس میں کیجریوال نے ارون جیٹلی پر پھر حملہ بولا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر خزانہ نے کل پارلیمنٹ میں جھوٹ بولا۔ ڈی ڈی سی اے کی تحقیقات سے جیٹلی اتنے گھبرائے ہوئے کیوں ہیں؟ ڈی ڈی سی اے گھوٹالے میں ان کا کردار کیا ہے؟

غور طلب ہے کہ کل راجندر کمار کے سیکرٹریٹ پر چھاپہ ماری پر راجیہ سبھا میں ارون جیٹلی نے کہا تھا کہ وزیر اعلی کے دفتر میں یہ چھاپہ ماری نہیں کی گئی ہے۔ اس چھاپے کا اروند کیجریوال یا ان کی مدت کار سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ پیشرو دہلی حکومت کے ایک افسر کے خلاف بدعنوانی کا معاملہ ہے اور چھاپے کی کارروائی اسی سلسلے میں کی گئی ہے۔

 

 

 

Loading...