بی جے پی پارلیمانی بورڈ کی میٹنگ سے بھی ندارد رہے کیرتی آزاد، ہو سکتی ہے کارروائی

نئی دہلی۔ دہلی میں آج بی جے پی پارلیمانی بورڈ کی میٹنگ ہو رہی ہے۔

Dec 22, 2015 11:51 AM IST | Updated on: Dec 22, 2015 11:51 AM IST
بی جے پی پارلیمانی بورڈ کی میٹنگ سے بھی ندارد رہے کیرتی آزاد، ہو سکتی ہے کارروائی

نئی دہلی۔ دہلی میں آج بی جے پی پارلیمانی پارٹی کی میٹنگ ہو رہی ہے۔ اس میں وزیر اعظم نریندر مودی بھی پہنچے ہیں۔ مودی کے ساتھ ارون جیٹلی بھی تھے۔ اس کے علاوہ میٹنگ میں وینکیا نائیڈو، راجیو پرتاپ روڑی، جتندر سنگھ بھی مودی کے ساتھ یہاں پہنچے۔ لیکن خاص بات یہ رہی کہ جیٹلی پر حملہ بول رہے بی جے پی لیڈرکیرتی آزاد ندارد رہے۔ آزاد دربھنگہ سے ممبر پارلیمنٹ ہیں۔

ڈی ڈی سی اے میں مبینہ بدعنوانی کو لے کر وزیر خزانہ ارون جیٹلی کے خلاف محاذ کھولنا بی جے پی ایم پی کیرتی آزاد کو بھاری پڑ سکتا ہے۔ ذرائع کے مطابق پارٹی کی طرف سے کیرتی کو وجہ بتاو نوٹس جاری کیا جا سکتا ہے۔ بی جے پی نے آزاد کے خلاف کارروائی کے اشارے دیے ہیں۔ بی جے پی آزاد کو وجہ بتاو نوٹس جاری کر سکتی ہے۔

Loading...

سدھارتھ ناتھ سنگھ نے کہا کہ جمہوریت کا یہ مطلب نہیں ہوتا کہ آپ پارٹی کے کسی بھی لیڈر کے خلاف کچھ بھی کہو اور اپوزیشن کے ہاتھوں کی کٹھ پتلی بن کے رہ جاؤ۔ کیرتی آزاد کو یہ سمجھنے کے لئے 24 گھنٹے لگتے ہیں کہ ان کا ٹویٹر اکاؤنٹ ہیک ہوا، وہ پلہ نہ جھاڑے۔

کل لوک سبھا میں بھی جب جیٹلی ڈی ڈی سی اے کو لے کر جواب دے رہے تھے تو کیرتی آزاد نے کہا تھا کہ جب الزام لگ رہے ہیں تو تحقیقات ہو جانی چاہئے۔ اس سے پہلے اتوار کو کیرتی آزاد نے پریس کانفرنس کر کے بھی ڈی ڈی سی اے میں کرپشن پر بغیر نام لئے جیٹلی پر کئی الزامات لگائے تھے۔ جبکہ بی جے پی لیڈر رام لال اور صدر امت شاہ نے کیرتی کو ایسا کرنے سے روکا تھا۔

بتا دیں کہ ڈی ڈی سی اے میں مالی بے ضابطگیوں کو لے کر آزاد مسلسل کھل کر جیٹلی پر حملے بول رہے ہیں۔ دو دن پہلے پریس کانفرنس میں آزاد نے جیٹلی پر کئی الزامات لگائے۔ لیکن دلچسپ نظارہ کل اس وقت دیکھنے کو ملا جب لوک سبھا میں جیٹلی کی صفائی کے ٹھیک بعد آزاد نے مورچہ سنبھالتے ہوئے ڈی ڈی سی اے معاملے کی سی بی آئی جانچ کرانے کا مطالبہ کر دیا۔

Loading...