محمود مدنی کا فرقہ وارانہ فسادات اور کشیدگی پر تشویش کا اظہار

نئی دہلی۔ مولانا محمودمدنی نے ملک کے مختلف علاقوں خصوصا راجستھان،مدھیہ پردیش ،یوپی ،جھارکھنڈ اور بہار وغیرہ میں محرم اور دسہرہ کے موقع پر فرقہ وارانہ فسادات اور کشید گی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے صوبائی سرکاروں کو ضروری کارروائی کے لیے متوجہ کیا ہے۔

Oct 27, 2015 07:36 PM IST | Updated on: Oct 27, 2015 07:37 PM IST
محمود مدنی کا فرقہ وارانہ فسادات اور کشیدگی پر تشویش کا اظہار

نئی دہلی۔ مولانا محمودمدنی نے ملک کے مختلف علاقوں خصوصا راجستھان،مدھیہ پردیش ،یوپی ،جھارکھنڈ اور بہار وغیرہ میں محرم اور دسہرہ کے موقع پر فرقہ وارانہ فسادات اور کشید گی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے صوبائی سرکاروں کو ضروری کارروائی کے لیے متوجہ کیا ہے۔

انھوں نے کہاکہ فرقہ پرست طاقتیں کچھ سیاسی پارٹیوں کے مفادات کے لیے پورے ملک کے امن وامان کو درہم برہم کرنے میں لگی ہوئی ہیں اور مختلف بہانوں سے ہر چھوٹے بڑے واقعہ کو فرقہ وارانہ رنگ دے کر فسادات میں بدل دیا جاتاہے اور اقلیتوں کے جان ومال کو نشانہ بنانے کے لیے بہانہ بنایا جارہا ہے۔

مولانا مدنی نے راجستھان جمعیۃ علماء کی موصولہ رپورٹ کے حوالے سے کہاکہ راجستھان میں فرقہ وارانہ ماحول بنایا جارہاہے  اور ڈونگر گڑھ شہر کی عیدگاہ کی زمین کو لیکر وہاں بڑی کشیدگی پیداکردی گئی ہے ۔ فی الحال وہاں بہت زیادہ فرقہ وارنہ تناؤ ہے ، مختلف طرح کی افواہیں پھیلاکر ماحول کو خراب کیا گیا ،گاڑیاں دکانیں جلائی گئیں اور صورت حال اتنی خراب کردی گئی ہے کہ شہر ڈونگر گڑھ میں ابھی بھی کرفیو جاری ہے ، اس کے باوجود ایک مقامی بزرگ کی درگاہ میں شرپسندوں نے آگ لگادی ہے ۔اشتعال انگیزی اور ماحول کو خراب کرنے کے لیے گوریلا انداز میں حملے کئے جاتے ہیں ، اس میں آر ایس ایس اور بجرنگ دل کے لوگ خاص طور سے پیش پیش ہیں۔

مولانا مدنی نے وسندھراراجے کی ریاستی سرکار کو متوجہ کرتے ہوئے کہاکہ وہ فسادی عناصر اورشرپسندوں کی سرگرمیوں پرکڑی نظر رکھے اور امن و قانون کی بحالی کے لیے ضروری قدم اٹھائے۔ انھوں نے مسلمانوں سے بھی اپیل کی ہے کہ افواہ اوراشتعال انگیزی کے شکار نہ ہوں کیوں کہ ایک منصوبہ بند سازش کے تحت حالات کو خراب کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

Loading...

Loading...
Listen to the latest songs, only on JioSaavn.com