اسدالدین اویسی کی اخلاق کے اہل خانہ سے ملاقات ، وزیر اعظم اور بی جے پی پر تیکھا حملہ

گریٹر نوئیڈا : اتر پردیش کے دادری میں مشتعل بھیڑ کےذریعہ منصوبہ بند طریقے سے قتل کردئے گئے 50 سالہ اخلاق کے اہل خانہ سے مجلس اتحادالمسلمین کے سربراہ اور حیدرآباد سے ممبر پارلیمنٹ اسدالدین اویسی نے ملاقات کی

Oct 02, 2015 12:40 PM IST | Updated on: Oct 02, 2015 12:40 PM IST
اسدالدین اویسی کی اخلاق کے اہل خانہ سے ملاقات ، وزیر اعظم اور بی جے پی پر تیکھا حملہ

گریٹر نوئیڈا : اتر پردیش کے دادری میں مشتعل بھیڑ کےذریعہ منصوبہ بند طریقے سے قتل کردئے گئے 50 سالہ اخلاق کے اہل خانہ سے مجلس اتحادالمسلمین کے سربراہ اور حیدرآباد سے ممبر پارلیمنٹ اسدالدین اویسی نے ملاقات کی اور ان کا درد بانٹنے کی کوشش کی ۔ اس موقع پر انہوں نے وزیراعظم مودی اور بی جے پی کی جم کر تنقید بھی کی۔

دادری میں اخلاق کے اہل خانہ سے ملاقات کرنے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اسدالدین اویسی نے کہا کہ یہ حادثہ نہیں بلکہ ایک منصوبہ بند قتل تھا۔ انہوں نے کہا کہ ایک سازش کے تحت اخلاق کا قتل کیاگیا۔

اویسی نے بی جے پی اور مودی کی بھی جم کر تنقید کی۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم اخلاق کے قتل پر ابھی تک خاموش ہیں ۔ اویسی نے کہا کہ وزیر اعظم آشا بھوسلے کے بیٹے کی موت پر تو ٹویٹ کرتے ہیں ، لیکن اخلاق کے قتل پر خاموش ہیں۔

اخلاق کے گھر میں رکھے گئے گوشت کی پولیس کی ذریعہ جانچ کرائے جانے پر انہوں نے کہا کہ گوشت نہیں بلکہ لوگوں کے دماغ کی جانچ کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ یوپی میں بی جے پی اور آر ایس ایس کے اشارے پر فسادات ہو رہے ہیں ۔

Loading...

مجلس اتحاد المسلمین کے سربرہ نے سماج وادی پارٹی حکومت پر بھی تیکھا حملہ کیا۔ انہوں نے اعظم خان کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ یوپی میں وہ سماج وادی پارٹی کے مسلم چہرہ ہیں۔ انہیں بیان بازی بند کر کے دادری آنا چاہئے لیکن ان کی حکومت موت پر سیاست کر رہی ہے۔

قابل ذکر ہے کہ جمعرات کو اے آئی ایم آئی ایم کے ریاستی ترجمان قاضی محمد زاہد نے ایک پریس ریلیز جاری کر کے حکومت سے اخلاق کے اہل خانہ کو 50 لاکھ روپے معاوضہ اور اس کے کنبہ کے ایک فرد کو سرکاری نوکری دئے جانے کا مطالبہ کیا تھا۔

Loading...