پنجاب میں مذہبی کتاب کی توہین پر ہنگامہ، پرتشدد مظاہروں سے سلگ اٹھی ریاست

چندی گڑھ ۔ پنجاب میں سکھوں کے گرو گرنتھ صاحب کی توہین کو لے کر ہنگامہ برپا ہے۔

Oct 21, 2015 08:58 AM IST | Updated on: Oct 21, 2015 08:58 AM IST
پنجاب میں مذہبی کتاب کی توہین پر ہنگامہ، پرتشدد مظاہروں سے سلگ اٹھی ریاست

چندی گڑھ ۔ پنجاب میں سکھوں کے گرو گرنتھ صاحب کی توہین کو لے کر ہنگامہ برپا ہے۔ کئی شہروں میں پرتشدد مظاہرے ہو رہے ہیں۔ تمام ہائی وے گزشتہ سات دنوں سے بند پڑے ہیں۔ کشیدگی بڑھتا دیکھ پنجاب کے چار اضلاع امرتسر، جالندھر، لدھیانہ اور ترنتارن میں نیم فوجی دستے تعینات کر دیے گئے ہیں۔ کانگریس اور عام آدمی پارٹی نے گورنر سے مل کر ریاست میں صدر راج لگانے کا مطالبہ کیا ہے۔ وہیں ریاست کے نائب وزیر اعلی سکھبیر سنگھ بادل کا کہنا ہے کہ صوبے کی امن کو مکدر کرنے کے لئے یہ مکمل سازش رچی گئی ہے۔ تنازعہ شروع ہونے کے ہفتے بھر بعد بھی کئی شہروں میں حالات انتہائی کشیدہ ہیں۔

گولڈن ٹیمپل میں جتھےداروں کی مخالفت ہو رہی ہے تو لدھیانہ میں لوگ سڑک پر اتر آئے ہیں۔ جالندھر میں بھی غصے کی آگ بھڑک رہی ہے۔ غصے کی اس آگ نے پورے پنجاب کو لپیٹ میں لے لیا ہے۔ گرو گرنتھ صاحب کی توہین کی خبروں کے بعد پنجاب کے کئی شہروں میں کشیدگی اتنی تیزی سے پھیلی کہ حکومت اور انتظامیہ کے ہاتھ پاؤں پھول گئے۔ امرتسر واقع گولڈن ٹیمپل میں منگل کو جم کر ہنگامہ ہوا۔ سکھ تاریخ میں پہلی بار اکال تخت کے جتھےداروں کو گولڈن ٹیمپل میں مخالفت کا سامنا کرنا پڑا۔

Loading...

اس درمیان لدھیانہ پولیس نے گرو گرنتھ صاحب کی بے ادبی کے معاملے میں ایک عورت اور گرنتھی کو گرفتار کر لیا ہے۔ پولیس کے مطابق پکڑی گئی خاتون نے اعتراف کیا ہے کہ وہ گردوارے میں سروس کرتی تھی اور اس نے گورو گرنتھ صاحب کی توہین کی ہے۔ فی الحال پولیس اس عورت سے پوچھ گچھ میں مصروف ہے۔

Loading...