شرد پوار نے کی کیجریوال کی حمایت ، سسٹم اور سی بی آئی پر اٹھایا سوال

نئی دہلی : نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے صدر شرد پوار نے آج دہلی کے وزیراعلی اروند کیجریوال کی حمایت کرتے ہوئے ان کے دفتر پر مرکزی تفتیشی بیورو کے چھاپے کی مخالفت کی اور سوالیہ انداز میں کہا کہ ہمارے ملک کا نظام اس طرح کام کرتا ہے۔

Dec 16, 2015 05:29 PM IST | Updated on: Dec 16, 2015 06:39 PM IST
شرد پوار نے کی کیجریوال کی حمایت ، سسٹم اور سی بی آئی پر اٹھایا سوال

نئی دہلی : نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے صدر شرد پوار نے آج دہلی کے وزیراعلی اروند کیجریوال کی حمایت کرتے ہوئے ان کے دفتر پر مرکزی تفتیشی بیورو کے چھاپے کی مخالفت کی اور سوالیہ انداز میں کہا کہ ہمارے ملک کا نظام اس طرح کام کرتا ہے۔

مسٹر شرد پوار نے ایک نیوز چینل سے بات کرتے ہوئے سوالیہ انداز میں کہا کہ یہ کیسا نظام ہے جہاں سی بی آئی وزیراعلی کے دفتر تک پہنچ گئی، آپ ملک کے سامنے کیا پیش کرنا چاہتے ہیں؟

انہوں نے مسٹر کیجریوال کے وزیراعظم مودی کو بزدل اور نفسیاتی مریض کہنے کی مذمت کرنے سے انکار کرتے ہویے کہا کہ یہ ایک ردعمل ہے۔ این سی پی چیف نے حکومت کی اس دلیل کو مسترد کردیا کہ مرکزی تفتیشی بیورو کو چھاپے سے پہلے وزیراعلی سے اجازت لینے کی کوئی ضرورت نہیں تھی۔

انہوں نے کہا کہ جب وہ مہاراشٹر کے وزیراعلی کے عہدے پر تھے، تو اس طرح کے معاملات میں ان سے پیشگی اجازت لی جاتی تھی۔ مغربی بنگال کی وزیراعلی ممتا بنرجی نے بھی مسٹر کیجریوال کی حمایت کی اور کل وزیراعلی کے دفتر پر اس چھاپے کو ایسا قدم بتایا جس کی نظیر نہیں ملتی۔

Loading...

خیال رہے کہ سی بی آئی نے کل مسٹر کیجریوال کے پرنسپل سکریٹری کے دفتر پر چھاپا مارا جس نے ایک سیاسی طوفان کی شکل اختیار کرلی۔ پارلیمنٹ کے اندر اور باہر اس مسئلے پر برسراقتدار پارٹی بی جے پی اور مسٹر کیجریوال کی عام آدمی پارٹی کے درمیان شدید لفظی جنگ چھڑ گئی۔

Loading...