مسلم یونیورسٹی کے اقلیتی کردار کا معاملہ : یو پی حکومت کا سپریم کورٹ میں ہر طرح کی قانونی مدد دینے کا اعلان

الہ آباد : علی اگڑھ مسلم یونیورسٹی کے اقلیتی کر دار کے معاملے پر مرکزی حکومت کی طرف سے سپریم کورٹ میں یو ٹرن لینے کے بعد یو پی حکومت نے ہر ممکن قانونی مدد کی یقین دہانی کرائی ہے ۔

Jan 13, 2016 08:30 PM IST | Updated on: Jan 13, 2016 08:32 PM IST
مسلم یونیورسٹی کے اقلیتی کردار کا معاملہ : یو پی حکومت کا سپریم کورٹ میں ہر طرح کی قانونی مدد دینے کا اعلان

الہ آباد : علی اگڑھ مسلم یونیورسٹی کے اقلیتی کر دار کے معاملے پر مرکزی حکومت کی طرف سے سپریم کورٹ میں یو ٹرن لینے کے بعد یو پی حکومت نے ہر ممکن قانونی مدد کی یقین دہانی کرائی ہے ۔

ریاست کے ایڈو کیٹ جنرل قمر الحسن صدیقی نے کہا ہے کہ مسلم یونیورسٹی کے اقلیتی کردار پر بی جے پی اور کانگریس دونوں ہی سیاست کر رہی ہیں ۔ قمر الحسن صدیقی نے کہا کہ یو پی حکومت ہمیشہ سے ہی علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے اقلیتی کر دار کی حامی رہی ہے ۔

ادھر آل انڈیا مسلم ایجوکیشن سو سائٹی نے بھوپال میں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے اقلیتی کردار کی بحالی کے لئے سپریم کورٹ میں پارٹی بننے کا فیصلہ کیا ہے۔ مسلم ایجوکیشن کے قومی نائب صدر ابراہم قریشی کا کہنا ہے کہ یونیورسٹی کے اقلیتی کردار کی بحالی کو لے کر ملک کے مسلمانوں کو مایوس ہونے کی ضرورت نہیں ہے ۔

ملک میں اقلیتوں کے تعلیمی حصول اور اقلیتی ادارے سے متعلق اب تک ملک کی مختلف ریاستوں اور سپریم کورٹ کے جو فیصلے آئے ہیں ، وہ خوش آئند ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ٹی ایم اے پائی فاؤنڈیشن اینڈ ادرس ورسیز اسٹیٹ آف کرناٹکا اینڈ ادرس کے فیصلہ میں اقلیتوں کے تعلیمی اداروں کو نئی روشنی ملتی ہے۔

Loading...

Loading...