ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

مہاراشٹر:جلگاؤں کے ویمن ہاسٹل میں خواتین کوکیاگیاشرمسار،معاملہ کی اسمبلی میں گونج،تحقیقات کااعلان

پولیس کے کچھ اہلکاروں اور باہر کے لوگوں نے لڑکیوں کو اپنے کپڑے اتار کر نیم برہنہ حالات میں رقص کرنے پر مجبور کیا۔ بی جے پی کےرکن اسمبلی نے شیوتا مہالے نے قانون ساز اسمبلی میں اس معاملہ کو اٹھایا

  • Share this:
مہاراشٹر:جلگاؤں کے ویمن ہاسٹل میں خواتین کوکیاگیاشرمسار،معاملہ کی اسمبلی میں گونج،تحقیقات کااعلان
جلگاؤں میں ریاستی حکومت کے تحت چلائے جانے والے آشا دیپ ویمن ہاسٹل میں لڑکیوں کو کپڑےاتار کررقص کرنے پر مجبور کیا گیا۔

وسیم انصاری

جلگاؤں میں خواتین کے ہاسٹل میں چونکا دینے والا معاملہ سامنے آیا ہے ۔جہاں نوجوان، لڑکیوں کے نیم برہنہ حالات رقص کرنےپر مجبور کیا جاتاتھا۔ہاسٹل کے باہر کے افراد پولیس اہلکاروں کی مدد سے ہرروز نوجوان لڑکیوں کے ساتھ بدتمیزی کیا کرتے تھے۔جلگاؤں میں ریاستی حکومت کے تحت چلائے جانے والے آشا دیپ ویمن ہاسٹل میں لڑکیوں کو کپڑےاتار کررقص کرنے پر مجبور کیا گیا۔بعض سماجی تنظیموں نے مل کر ایک ویڈیو کلکٹر بھی سونپا ۔ جس کے بعد ضلعی کلکٹر ابھیجیت راؤت نے فوری کارروائی اور معاملے کی تحقیقات کا یقین دلایا ہے۔محکمہ خواتین و اطفال بہبود کی جانب سے گنیش کالونی میں واقع ہاسٹل میں مظلوم خواتین اور لڑکیوں کو قیام اور کھانے کی سہولتیں فراہم کی جاتی ہے۔ اس ہاسٹل میں ظلم و زیاتی کی شکار لڑ کیوں نے شکایتیں بھی کی تھیں۔


جن نایک فاؤنڈیشن کے چیئرمین ، فیروز پنجاری ،فرید خان ، منگلا سوناونے نے ہاسٹل جا کر لڑکیوں سے ملاقات کی اور پوری معلومات حاصل کرنے کے بعد ، یہ بات سامنے آئی کہ ایک مارچ کو پولیس کے کچھ اہلکاروں اور باہر کے لوگوں نے لڑکیوں کو اپنے کپڑے اتار کر نیم برہنہ حالات میں رقص کرنے پر مجبور کیا۔ بی جے پی کےرکن اسمبلی نے شیوتا مہالے نے قانون ساز اسمبلی میں اس معاملہ کو اٹھایا اور اس سارے واقعے کی مذمت کر تے ہوئے حکومت سے جواب طلب کیاہے۔ اس معاملے پر وزیر داخلہ انیل دیشمکھ نے بھی برہمی کا اظہار کرتے ہوئے اطمینان بخش جواب دیا۔وزیر داخلہ نے اس معاملے میں کمیٹی تشکیل دینے کا اعلان کیا اورکہا کہ مذ کورہ کمیٹی 2 دن میں اپنی رپورٹ پیش کرے گی۔ انہوں نے ایوان کو یقین دلایا کہ قصور واروں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔وزیر داخلہ انیل دیشمکھ نے اس معاملہ کی جامعہ تحقیقات کا حکم بھی دیا ہے ۔


وہیں دوسری جانب وزیر داخلہ کے جواب سے اپوزیشن مطمئن نہیں ہوا ۔اپوزیشن جماعتوں کے ارکان نے حکومت پرغیر سنجیدہ ہونے اور ریاست میں امن و امان کو خراب کرنے کا الزام عائد کیا۔ اپوزشن جماعتوں نے مہاراشٹر میں صدر راج نافذ کرنے کا مطالبہ کیا ۔حکومت نے صدر راج نافذ کرنے کے مطالبے کو ایک دھمکی قرار دیا۔
Published by: Mirzaghani Baig
First published: Mar 03, 2021 09:02 PM IST