உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    قومی ترانے اور قومی گیت کے ساتھ اب بجایا جاسکے گا State کا بھی ترانہ، تنازعہ کے بعد مرکز نے دی اصولی اجازت

    تمل ناڈو میں شروع ہوئے تنازع کے بعد اب ریاستی ترانے کو بھی بجانے کی دی گئی اجازت۔

    تمل ناڈو میں شروع ہوئے تنازع کے بعد اب ریاستی ترانے کو بھی بجانے کی دی گئی اجازت۔

    حال ہی میں آئی آئی ٹی مدراس کے کانووکیشن کی تقریب میں تمل ناڈو کا ریاستی ترانہ بجانے سے انکار کر دیا گیا۔ بعد میں یہ مقامی سطح پر ایک بڑا مسئلہ بن گیا۔ اس کی بازگشت مرکز تک بھی پہنچ چکی تھی۔

    • Share this:
      نئی دہلی: مرکز، جو تمام مقامی ہندوستانی زبانوں کو آگے لے جانے میں مصروف ہے، نے اب سرکاری پروگراموں میں قومی ترانے اور قومی گیت کے ساتھ ریاستی ترانہ بجانے اور گانے کی اصولی اجازت دے دی ہے۔ وزارت تعلیم نے یہ فیصلہ تمل ناڈو میں پیدا ہونے والے تنازعہ کے بعد لیا ہے۔ جس کے تحت اب آئی آئی ٹی مدراس سمیت ریاست کے کسی بھی مرکزی تعلیمی ادارے میں قومی ترانے اور قومی گیت کے بعد ریاستی ترانہ بھی چلایا یا گایا جا سکے گا۔ ابھی تک یہ انتظام نافذ نہیں تھا۔ خیال کیا جا رہا ہے کہ وزارت کی جانب سے آئندہ ایک دو روز میں اس حوالے سے احکامات بھی جاری کر دیے جائیں گے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      یوپی کے7442مدرسوں کی ہوگی جانچ، سی ایم یوگی نے شکایتیں ملنے کے بعد دیا حکم

      مرکز نے تمل ناڈو کے ریاستی گیت کو بجانے کی دی اصولی اجازت
      وزارت تعلیم کے اس فیصلے کو ریاستوں میں پیدا ہونے والے زبان کے تنازع کو ختم کرنے کی سمت میں بھی ایک اہم قدم قرار دیا جا رہا ہے۔ آنے والے دنوں میں اسی خطوط پر دوسری ریاستوں کو بھی اجازت دی جا سکتی ہے۔ ویسے یہ فیصلہ صرف تمل ناڈو کے مرکزی تعلیمی اداروں کے لیے لیا گیا ہے۔ ویسے بھی نئی قومی تعلیمی پالیسی کے آنے کے بعد وزارت تعلیم مسلسل تعلیم کو لسانی غلامی سے آزاد کرنے میں مصروف ہے۔ ہائیر ایجوکیشن میں اس حوالے سے کئی اہم فیصلے لیے گئے ہیں، ساتھ ہی آنے والے دنوں میں کچھ اور فیصلے بھی کیے جائیں گے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Raisina Dialogue 2022: ہندوستان پر دباو بنانے میں لگے یوروپی ممالک کو ملا دو ٹوک جواب

      ریاست کے گیت کو آئی آئی ٹی مدراس میں اجازت نہ دینے سے ہوا تھا تنازعہ
      ساتھ ہی حکومت کی طرف سے ’ایک ہندوستان عظیم ہندوستان‘ جیسی مہم بھی چلائی جا رہی ہے۔ وزارت تعلیم سے وابستہ اعلیٰ ذرائع کے مطابق وزارت نے یہ قدم اس وقت اٹھایا جب حال ہی میں آئی آئی ٹی مدراس کے کانووکیشن کی تقریب میں تمل ناڈو کا ریاستی ترانہ بجانے سے انکار کر دیا گیا۔ بعد میں یہ مقامی سطح پر ایک بڑا مسئلہ بن گیا۔ اس کی بازگشت مرکز تک بھی پہنچ چکی تھی۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: