ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

Odisha Coronavirus Lockdown: اوڈیشہ میں 5 مئی سے 14 دن کا لاک ڈاؤن، لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر ہوگی سخت کارروائی

ریاست میں تاجر برادری نے پہلے ہی شہری علاقہ گنجام میں دوپہر 2 بجے سے صبح 5 بجے تک 10 دن کے لیے دکانیں بند رکھنے پر اتقاق کیا ہے۔ جبکہ کٹک میں دیگر تاجروں کی انجمنوں اور مارکیٹ کمیٹیوں نے بھی کاروباری اداروں کے بند کا اعلان کیا ہے۔

  • Share this:
Odisha Coronavirus Lockdown: اوڈیشہ میں 5 مئی سے 14 دن کا لاک ڈاؤن، لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر ہوگی سخت کارروائی
اذیشہ میں لاک ڈاؤن

اوڈیشہ حکومت نے ریاست میں کورونا وائرس کے انفیکشن کو روکنے کے لئے اتوار کو 5 سے 19 مئی تک ریاست بھر میں 14 دن کا لاک ڈاؤن نافذ کردیا ہے۔ ملک میں بڑھتے ہوئے کورونا کیسوں کے تناظر میں اوڈیشہ حکومت نے یہ فیصلہ کیا ہے ہندوستان میں کورونا وائرس کے 3.92 لاکھ سے زیادہ نئے کیس درج کرنے کے ساتھ ہی لگاتار کورونا کے کیسوں میں اضافہ ہوا ہے۔ پچھلے 24 گھنٹوں میں 3689 اموات واقع ہوئی ہے۔


ریاست میں تاجر برادری نے پہلے ہی شہری علاقہ گنجام میں دوپہر 2 بجے سے صبح 5 بجے تک 10 دن کے لیے دکانیں بند رکھنے پر اتقاق کیا ہے۔ جبکہ کٹک میں دیگر تاجروں کی انجمنوں اور مارکیٹ کمیٹیوں نے بھی کاروباری اداروں کے بند کا اعلان کیا ہے۔ میلینیم شہر 3 سے 18 مئی تک صبح 5 بجے سے 2 بجے تک ہی کھلا رہے گا۔اس سے قبل 26 اپریل کو کلہنڈی کے نو چھوٹے شہروں کے تاجروں اور دکانداروں نے بھی 2 مئی تک دکانیں بند رکھنے کا فیصلہ کیا تھا۔ اس خطے میں صرف سبزی فروشوں کو صبح 10 بجے تک کام کرنے کی اجازت دی گئی تھی۔


اس ہفتے کے شروع میں وزیر اعلی نوین پٹنائک نے برادری کی سطح پر شمولیت کی التجا کی تھی کہ لوگوں کو جب بھی وائرل بیماری کے پھیلاؤ پر قابو پانے کی ضرورت پڑتی ہے تو وہ ایسے اقدامات کرنے کے لیے تیار رہیں۔وزارت صحت کے مطابق ہندوستان میں اب تک 10 ریاستوں میں رجسٹرڈ ہونے والے نئے کیسز میں 72.72 فیصدی حصہ داری ہے۔


جبکہ چار ریاستوں اور مرکز کے زیر انتطام علاقوں میں پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران کورونا سے ہلاکت کی اطلاع نہیں ہے۔ جس میں لکشادیپ، اروناچل پردیش اور میزورم شامل ہے۔وزیراعظم نریندر مودی نے 20 اپریل کو قوم سے خطاب میں کہا تھا کہ لاک ڈاؤن سے بچنے کے لئے تمام تر کوششیں کی جانی چاہیے۔ لاک ڈاؤن کو صرف ’’آخری سہارے‘‘ کے طور پر استعمال کیا جانا چاہئے۔ہندوستان میں گذشتہ کئی روز سے آکسیجن اور ہسپتال کے بستروں کی کمی شدت سے محسوس کی جارہی ہے۔ کیونکہ مثبت کیسوں کی شرح ہر گزرتے دن کے ساتھ بڑھتی جاتی ہے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 02, 2021 11:21 PM IST