உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Omicron: مہاراشٹر میں بین الاقوامی مسافرین کے لیے نئے رہنما اصول جاری، 14 دن کا قرنطینہ لازمی

    Omicron کے خطرے کو دیکھتے ہوئے بیرون ممالک سے آنے والوں کیلئے گائیڈ لائنس میں تبدیلی، جانئے پوری تفصیل

    Omicron کے خطرے کو دیکھتے ہوئے بیرون ممالک سے آنے والوں کیلئے گائیڈ لائنس میں تبدیلی، جانئے پوری تفصیل

    خطرے کے حامل ممالک کے علاوہ کسی بھی دوسرے ممالک کے مسافروں کو لازمی طور پر ہوائی اڈے پر پہنچنے پر RT-PCR ٹیسٹ کرانا ہو گا اور منفی پائے جانے پر انہیں 14 دن کے گھریلوں قرنطینہ سے گزرنا ہوگا۔ مثبت پائے جانے پر انہیں ہسپتال منتقل کر دیا جائے گا۔

    • Share this:
      عالمی وبا کورونا وائرس (Covid- 19) کے نئے ویرینٹ اومی کرون (Omicron) کے خطرہ سے حفاظت کے لیے مہاراشٹر حکومت نے بین الاقوامی مسافروں کے لیے نئے قوانین نافذ کیے ہیں۔ جس کا اعلان حکومت نے منگل کو کردیا ہے۔

      نئے حکم نامے کے مطابق امیگریشن ڈیپارٹمنٹ ریاست میں آنے والے تمام مسافروں کی 15 دنوں کی غیر ملکی سفری تاریخ کی جانچ کرے گا۔ اس مقصد کے لیے ایک خصوصی پروفارما تیار کیا جا رہا ہے۔ حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ سفری تفصیلات کے اعلان میں خلاف ورزی پر کارروائی کی جاسکتی ہے۔

      خطرے کے حامل ممالک سے آنے والے بین الاقوامی مسافروں کو ترجیحی بنیاد پر اتارا جائے گا۔
      خطرے کے حامل ممالک سے آنے والے بین الاقوامی مسافروں کو ترجیحی بنیاد پر اتارا جائے گا۔


      حکومت نے ان تمام لوگوں کے لیے 7 دن کی ہوم آئسولیشن کو لازمی قرار دیا ہے جو آمد پر منفی ٹیسٹ کرتے ہیں۔ یہ ’’خطرے میں پڑنے والے ممالک‘‘ سے آنے والوں کے لیے 7 دن کے لازمی ادارہ جاتی قرنطینہ کے علاوہ ہے۔

      جو ممالک اس وقت خطرے کے حامل ممالک کی فہرست میں ہیں وہ یورپی ممالک ہیں جن میں برطانیہ، جنوبی افریقہ، برازیل، بوٹسوانا، چین، ماریشس، نیوزی لینڈ، زمبابوے، سنگاپور، ہانگ کانگ اور اسرائیل شامل ہیں۔ ریاستی انتظامیہ نے مزید کہا کہ یہ پابندیاں 28 نومبر کو مرکز کی طرف سے لگائی گئی پابندیوں سے الگ ہیں۔

      یہاں نئے اصولوں پر تفصیلات پیش ہیں:

      خطرے کے حامل ممالک سے آنے والے بین الاقوامی مسافروں کو ترجیحی بنیاد پر اتارا جائے گا اور ان کی چیکنگ کے لیے الگ کاؤنٹرز کا انتظام کیا جائے گا۔ ایسے تمام مسافروں کو لازمی 7 دن کا ادارہ جاتی قرنطینہ اور RT-PCR ٹیسٹ ان کے لیے 2، 4 اور 7 دنوں میں کیا جائے گا۔ اگر کوئی بھی ٹیسٹ مثبت پایا جاتا ہے تو مسافر کو ہسپتال منتقل کر دیا جائے گا۔ تمام ٹیسٹ منفی آنے کی صورت میں مسافروں کو مزید 7 دن ہوم قرنطینہ سے گزرنا پڑے گا۔

      خطرے کے حامل ممالک کے علاوہ کسی بھی دوسرے ممالک کے مسافروں کو لازمی طور پر ہوائی اڈے پر پہنچنے پر RT-PCR ٹیسٹ کرانا ہو گا اور منفی پائے جانے پر انہیں 14 دن کے گھریلوں قرنطینہ سے گزرنا ہوگا۔ مثبت پائے جانے پر انہیں ہسپتال منتقل کر دیا جائے گا۔

      گھریلو ہوائی سفر کے معاملے میں ریاست کے اندر سفر کرنے والے مسافروں کو یا تو مکمل طور پر ٹیکہ لگانا ہوگا یا آمد کے وقت کے 48 گھنٹوں کے اندر لازمی طور پر RT-PCR ٹیسٹ کرانا ہوگا۔ دوسری ریاستوں سے آنے والے مسافروں کی صورت میں آمد کے 48 گھنٹوں کے اندر منفی RT-PCR ٹیسٹ بغیر کسی استثنا کے لازمی ہوگا۔

      کسی بین الاقوامی سفر کی صورت میں ہندوستان کے کسی دوسرے ہوائی اڈے پر کنیکٹنگ فلائٹ ہے، مسافر کو مہاراشٹر کے پہلے پہنچنے والے ہوائی اڈے پر RT-PCR ٹیسٹ کرانا ہوگا اور صرف منفی پائے جانے پر اجازت ہوگی۔

      قومی، بین الااقوامی، جموں و کشمیر کی تازہ ترین خبروں کے علاوہ  تعلیم و روزگار اور بزنس  کی خبروں کے لیے  نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔ 


      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: