ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش: گنا کے بعد دیواس کے ست گاؤں میں دہرائی گئی ظلم کی تاریخ، اب ایک مسلم کسان ہوا ظلم کا شکار

مدھیہ پردیش میں حکومت کے ذریعہ امن و قانون کو بنائے رکھنے اور قانون کی بالا دستی کوقائم رکھنے کی باتیں تو بہت کی جاتی ہیں، لیکن عملی طور پر اس کا فقدان دکھائی دیتا ہے۔ گنا میں دلت کسان پر کئے گئے پولیس مظالم کو ابھی لوگ بھول بھی نہیں سکے تھے کہ دیواس کے ست گاؤں میں پولیس مظالم کا شکار ایک مسلم کسان کو ہونا پڑا۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش: گنا کے بعد دیواس کے ست گاؤں میں دہرائی گئی ظلم کی تاریخ، اب ایک مسلم کسان ہوا ظلم کا شکار
گنا کے بعد دیواس کے ست گاؤ ں میں دہرائی گئی ظلم کی تاریخ

بھوپال: مدھیہ پردیش میں حکومت کے ذریعہ امن و قانون کو بنائے رکھنے اور قانون کی بالا دستی کوقائم رکھنے کی باتیں تو بہت کی جاتی ہیں، لیکن عملی طور پر اس کا فقدان دکھائی دیتا ہے۔ گنا میں دلت کسان پر کئے گئے پولیس مظالم کو ابھی لوگ بھول بھی نہیں سکے تھے کہ دیواس کے ست گاؤں میں پولیس مظالم کا شکار ایک مسلم کسان کو ہونا پڑا۔ کانگریس نے پورے معاملے کی جانچ کرانے  اور ذمہ داران کےخلاف سخت کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ دیواس کے ست واس  تھانہ کے اتواس گاؤں میں رمضان خان کا خاندان بودو باش کرتا ہے۔ رمضان خان نے اپنے کھیت میں سویابین کی فصل لگائی تھی، لیکن جب تحصیلدار، پٹواری اور مقامی پولیس کے لوگ اچانک اس کے ہرے بھرے کھیت میں جے سی بی لگا کر فصل کو اجاڑنے لگے تو اس کے پیروں سے زمین نکل گئی۔


رمضان خان کہتے ہیں کہ میرے سویابین کے کھیت سے تحصیل کے کچھ لوگ سیدھا راستہ نکال رہے تھے۔ ان کے ساتھ پٹواری، تحصیلدار اور دوسرے لوگوں کے ساتھ پولیس والے آئے تھے۔ میں نے انتظامیہ کے لوگوں سے فریاد کی کہ صاحب میرے ہرے بھرے کھیت سے راستہ نکالا جارہا ہے اس کو روکا جائے اور اگرکوئی کارروائی کی بھی جانا ہے تو فصل کٹنے کے بعد کی جائے، لیکن ہری بھری فصل کو برباد نہ کیا جائے جب تک میں تحصیل سے گھر پہنچتا پتہ چلا کہ میری بیوی نے آگ لگالی ہے۔ میری بیوی اسپتال میں ہے ابھی میری اس سے بات نہیں ہوسکی ہے۔ اب جانچ کے بعد پتہ چلےگا کہ کھیت میں پٹرول کہاں سے آیا۔ اس کے جسم پر یٹرول کس نے ڈالا۔ آگ اس نے لگائی ہے یا کسی اور نے لگائی ہے، اس کے بارے میں مجھے تفصیل معلوم نہیں ہے۔ ہماری فصل بھی تباہ کی گئی اور ہمارے ہی 11 لوگوں کے خلاف مقدمہ بھی درج کیا گیا ہے، جن لوگوں نے ہماری فصل تباہ کی ان کے خلاف کوئی کارروائی کرنےکو تیار نہیں ہے۔


رمضان خان کی بیوی صابرہ آگ لگنے سے جل گئی ہے اور اسپتال میں زیر علاج ہے۔
رمضان خان کی بیوی صابرہ آگ لگنے سے جل گئی ہے اور اسپتال میں زیر علاج ہے۔


وہیں ایڈیشنل ایس پی دیواس کہتے ہیں کہ جب تحصیلدار اور پٹواری کی ٹیم وہاں پر پہنچی تو صابرہ نامی خاتون نے پہلے کارروائی کو روکنے کی کوشش کی، پھر اس نے خود ہی آگ لگالی۔ جلی نہیں ہے معمولی طرح پر آگ سے خاتون جھلسی ہے۔ اس کو اسپتال میں داخل کردیا گیا ہے۔ خاتون کا علاج جاری ہے، جن لوگوں نے سرکاری کام میں روکاوٹ پیدا کرنے کی کوشش کی، ان کے خلاف تھانہ ستواس میں معاملہ درج کرلیا ہے۔ رمضان خان کی بیوی صابرہ آگ لگنے سے جل گئی ہے اور اسپتال میں زیر علاج ہے۔ مدھیہ پردیش کانگریس کے ترجمان بھوپیندر گپتا نے ستواس میں خاتون کسان کی خود سوزی کوانتظامیہ کے ظلم سے تعبیرکیا ہے۔ بھوپیندر گپتا کہتے ہیں کہ ایسے واقعات کی جتنی بھی مذمت کی جائے وہ کم ہے۔ مدھیہ پردیش کی شیوراج سنگھ سرکار اور انتظامیہ نے گنا میں ہوئے دلت مظالم سے کوئی سبق نہیں لیا اور اسی طرح کے مظالم دبنگوں کے دباؤ میں مدھیہ پردیش میں جاری ہے۔ اس واقعہ کی ہائی کورٹ کے کسی جج سے جانچ کرانے کا مطالبہ کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ ہے کہ متاثرہ خاتون کو اس کا معاوضہ دیا جائے اور جو افسران اس کے لئے ذمہ دار ہیں، ان کو معطل کرتے ہوئے ان کے خلاف فوری طور پرکارروائی کی جائے۔
مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ ڈاکٹر نروتم مشرا کہتے ہیں کہ اس معاملے کے بارے میں کچھ سنا ہے اور ابھی آپ نے بتایا ہے۔ پوری جانکاری حاصل کرنے کے بعد آپ سے بات کریں گے۔ قانون اپنا کام کرے گا۔ کسی کے ساتھ نا انصافی نہیں ہوگی۔ گنا کے معاملے میں 15 دن گزرنے کے بعد بھی معاملےکے سب سے کلیدی شخص کے خلاف کارروائی نہیں کی جا سکی۔ حکومت نے گنا کے معاملے میں ایس پی اورکلکٹرکا تبادلہ سیاسی مداخلت کے بعد کرتے ہوئے 6 پولیس اہلکاروں پر بھی کارروائی کی تھی، لیکن گبو پادری جس کے دباؤ میں پولیس کے ذریعہ دلت کسان پر مظالم ڈھائے گئے تھے، اس پرکارروائی کا اب تک سبھی کو انتظار ہے۔ دیواس کے ستواس تھانہ اتواس میں گنا کے مظالم کو ہی دہرانے کی پولیس کے ذریعہ کی کوشش کی گئی ہے اور یہاں پر پولیس نے مسلم کسان کے گھر کے 11 لوگوں کے خلاف ہی انتظامیہ کی کارروائی میں رخنہ ڈالنے کے الزام میں معاملہ درج کیا گیا ہے۔ صابرہ کا چہرہ اور جسم کا دوسرا حصہ آگ لگنے سےجل گیا ہے۔ اب حکومت اس معاملے میں کیا انصاف کرتی ہے یہ دیکھنا ہوگا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 30, 2020 11:19 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading