ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

پنجاب میں 30 اپریل تک نائٹ کرفیو، سیاسی ریلیوں پر پابندی، تمام تعلیمی ادارے بند

Coronavirus Cases in Punjab: کورونا وائرس کے معاملوں کو دیکھتے ہوئے پنجاب حکومت نے 30 اپریل تک ریلیوں پر روک لگا دی ہے۔ اس کے ساتھ ہی سبھی تعلیمی ادارے بھی بند کرنے کے احکامات دیئے ہیں۔

  • Share this:
پنجاب میں 30 اپریل تک نائٹ کرفیو، سیاسی ریلیوں پر پابندی، تمام تعلیمی ادارے بند
پنجاب میں 30 اپریل تک نائٹ کرفیو، سیاسی ریلیوں پر پابندی، تمام تعلیمی ادارے بند

چنڈی گڑھ: پنجاب میں بڑھتے ہوئے کورونا وائرس (coronavirus) کے انفیکشن کے معاملات کو دیکھتے ہوئے پنجاب حکومت (Punjab Government) نے ریلیوں پر پابندی لگا دی ہے۔ حکومت کے احکامات کے بعد ریاست میں کوئی بھی سیاسی جماعت (Political party) ریلیوں کا انعقاد نہیں کرسکے گی۔ اس کے ساتھ ہی حکومت نے 30 اپریل تک سبھی تعلیمی اداروں کو بند کرنے کا بھی فیصلہ لیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی حکومت حکومت نے 30 اپریل تک سبھی تعلیمی اداروں (Educational Institutions) کو بند کرنے کا بھی فیصلہ لیا ہے۔ 11 اضلاع میں نائٹ کرفیو (Night curfew) کی مدت کو بھی حکومت نے 30 اپریل تک بڑھا دیا ہے۔


پنجاب میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا انفیکشن کے 2924 نئے معاملے درج کئے گئے ہیں۔ اسی مدت میں یہاں 2350 مریض ٹھیک ہوئے ہیں اور 63 کی موت ہوئی ہے۔ اب ریاست میں کورونا وائرس کے کل معاملوں کی تعداد دو لاکھ 57 ہزار ہوگئی ہے۔ ریاست میں ابھی 25,913 سرگرم معاملے ہیں اور ابھی تک یہاں 7216 لوگوں کی موت ہوئی ہے۔ حکومت نے 10 اپریل تک پابندیاں جاری رکھنے کا حکم دیا تھا، جسے بڑھا کر اب 30 اپریل تک کردیا گیا ہے۔


مال میں ایک وقت میں 100 سے زیادہ اشخاص کو اجازت نہیں


احکامات کے مطابق، مال میں ایک وقت میں 100 سے زیادہ اشخاص کو اجازت نہیں ہونی چاہئے اور سنیما گھروں کو نصف سیٹیں خالی رکھنے کو کہا گیا ہے۔ سب سے زیادہ متاثرہ 11 اضلاع میں آخری رسوم اور شادیوں کو چھوڑ کر سبھی سماجی مجمع پر مکمل پابندی لگائی گئی ہے۔ آخری رسوم اور شادیوں میں بھی 20 لوگوں کو ہی اجازت ہے۔

واضح رہے کہ مرکزی حکومت نے وارننگ دی ہے کہ کووڈ-19 بہت تیز رفتار سے پھیل رہا ہے اور وبا کا پھیلاو بھی بڑھا ہے اور اسے دیکھتے ہوئے آئندہ چار ہفتے بے حد اہم رہنے والے ہیں۔ حکومت نے انفیکشن کی دوسری لہر کو قابو میں کرنے کے لئے عوامی حصہ داری پر زور دیا ہے۔ نیتی آیوگ کے رکن (صحت) ڈاکٹر وی کے پال (NITI Aayog member Dr VK Paul) نے کہا ہے کہ معاملے تیزی سے بڑھنے سے ملک میں وبا کے حالات مزید خراب ہوئے ہیں اور آبادی کا ایک بڑا حصہ انفیکشن کے تئیں حساس ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Apr 07, 2021 03:20 PM IST