உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    WhatsApp: بیس لاکھ سے زیادہ ہندوستانی واٹس ایپ اکاؤنٹس پر پابندی! ان وجوہات کی بنا پر لگ سکتی پابندی، جانیے تفصیل

    علامتی تصویر۔(نیوز18)۔

    علامتی تصویر۔(نیوز18)۔

    واٹس ایپ نے اکتوبر 2021 میں ہندوستان میں 20 لاکھ سے زیادہ اکاؤنٹس پر پابندی لگادی ہے۔ واٹس ایپ کی سروس کی شرائط کے مطابق ان وجوہات کی بنا پر آپ کے اکاؤنٹ پر پابندی لگ سکتی ہے۔ نیز بعض جرائم کے لیے واٹس ایپ صارف کا میٹا ڈیٹا پولیس کو قانونی کارروائی اور گرفتاریوں کے لیے بھی فراہم کر سکتا ہے۔

    • Share this:
      واٹس ایپ (WhatsApp) نے حال ہی میں اعلان کیا ہے کہ اس نے اکتوبر 2021 میں ہندوستان میں 20 لاکھ سے زیادہ اکاؤنٹس ہولڈرس کو اپنی خدمات استعمال کرنے سے روک دیا ہے۔ اس سے قبل واٹس ایپ نے اپنی سروس کی شرائط کی خلاف ورزی کرنے والے30.27 لاکھ سے زیادہ ہندوستانی اکاؤنٹس پر پابندی لگا دی تھی۔

      ہندوستان میں انڈیا-انٹرمیڈیری گائیڈلائنز اینڈ ڈیجیٹل میڈیا ایتھکس کوڈ رولز 2021 (India-Intermediary Guidelines and Digital Media Ethics Code Rules, 2021) کے تحت نئے آئی ٹی قوانین کے ذریعے لازمی قرار دیا گیا ہے کہ واٹس ایپ ماہانہ رپورٹس شائع کرے۔ واٹس ایپ ماہانہ رپورٹس کے مطابق ہندوستان میں واٹس ایپ صارفین کی جانب سے موصول ہونے والی شکایات کے جواب میں وہ براہ راست کارروائی کرتا ہے۔ میٹا کی ملکیت والے میسجنگ ایپ واٹس ایپ کے ہندوستان میں سب سے زیادہ صارف ہیں اور اس کے علاوہ واٹس ایپ ملک میں سب سے بڑی میسجنگ ایپ بن چکا ہے، جو کہ SMS سے زیادہ مقبول ہے۔

      واٹس ایپ پرائیویسی اور سیکیورٹی کی ایک اور پرت کا اضافہ کر رہا ہے
      واٹس ایپ پرائیویسی اور سیکیورٹی کی ایک اور پرت کا اضافہ کر رہا ہے


      واٹس ایپ نے اپنے پلیٹ فارم کو غلط استعمال سے روکنے کے لیے کئی اقدامات کیے ہیں۔ ان میں صارفین کو مسائل کی اطلاع دینے اور ممکنہ جعلی خبروں و فارورڈ کیے گئے اسپام پیغامات کے بارے میں لوگوں کو آگاہ کرنے کے اقدامات شامل ہیں۔

      اگرچہ واٹس ایپ میسجز اینڈ ٹو اینڈ انکرپٹڈ ہوتے ہیں، لیکن اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ صارفین کسی بھی چیز سے بچ سکتے ہیں کیونکہ واٹس ایپ کئی میٹا ڈیٹا کو ٹریک کرتا ہے۔ واٹس ایپ نے اپنی آفیشل ویب سائٹ پر واضح طور پر کہا ہے کہ اگر وہ کسی صارف کو اپنی سروس کی شرائط کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پائے تو وہ متعلقہ اکاؤنٹ پر پابندی لگا دے گا۔

      واٹس ایپ کی سروس کی شرائط کے مطابق ان وجوہات کی بنا پر آپ کے اکاؤنٹ پر پابندی لگ سکتی ہے۔ نیز بعض جرائم کے لیے واٹس ایپ صارف کا میٹا ڈیٹا پولیس کو قانونی کارروائی اور گرفتاریوں کے لیے بھی فراہم کر سکتا ہے۔

      کیا ہیں وجوہات:

      اگر آپ کسی کی نقالی کرتے ہیں اور کسی دوسرے شخص کا جعلی اکاؤنٹ بناتے ہیں تو واٹس ایپ آپ پر پابندی لگا دے گا۔

      واٹس ایپ کے پاس نقالی کے خلاف واضح رہنما اصول ہیں۔ اس میں کہا گیا ہے کہ اگر ایسا پایا جاتا ہے کہ آپ نے کسی اور کے لیے اکاؤنٹ بنایا ہے اور کسی کی نقالی کی ہے تو واٹس ایپ اکاؤنٹس پر پابندی لگا دی جائے گی۔

      اگر کوئی آپ کی رابطہ فہرست میں نہیں ہے اور اگر آپ اس شخص کو بہت زیادہ پیغامات بھیجتے ہیں تو واٹس ایپ آپ پر پابندی لگا سکتا ہے۔

      اگر آپ پلیٹ فارم کا غلط استعمال کرتے ہیں اور اس سے ایسے لوگوں کو ستاتے ہیں جو آپ کی رابطہ فہرست میں نہیں ہیں تو واٹس ایپ اکاؤنٹ پر پابندی لگا دے گا۔

      WhatsApp Web پر فوٹو کا اسٹیکر بنایا جاسکتا ہے۔
      WhatsApp Web پر فوٹو کا اسٹیکر بنایا جاسکتا ہے۔


      اگر آپ تھرڈ پارٹی ایپس جیسے WhatsApp Delta، GBWhatsApp اور WhatsApp Plus وغیرہ استعمال کرتے ہیں تو واٹس ایپ آپ پر پابندی لگا سکتا ہے۔

      بات چیت کرنے کے لیے ہمیشہ آفیشل واٹس ایپ کا استعمال کریں۔ فریق ثالث ایپس جیسے WhatsApp Delta, GBWhatsApp, WhatsApp Plus وغیرہ استعمال کرنے سے آپ پر واٹس ایپ سے ہمیشہ کے لیے پابندی لگ سکتی ہے۔ پرائیویسی کے خدشات کی وجہ سے واٹس ایپ صارفین کو ایسے ایپس پر بات چیت کرنے کی اجازت نہیں دیتا ہے۔

      اگر آپ کو بہت زیادہ صارفین بلاک کر دیتے ہیں تو واٹس ایپ آپ پر پابندی لگا سکتا ہے۔

      اگر بہت سارے صارفین آپ کو واٹس ایپ پر بلاک کرتے ہیں تو واٹس ایپ آپ پر پابندی لگا سکتا ہے، اس حقیقت سے قطع نظر کہ یہ لوگ آپ کی رابطہ فہرست میں ہیں یا نہیں۔ اگر بہت سارے صارفین آپ کو بلاک کرتے ہیں تو واٹس ایپ آپ کے اکاؤنٹ کو اسپیم پیغامات یا جعلی خبروں کا ذریعہ سمجھ سکتا ہے۔

      اگر بہت زیادہ لوگ آپ کے واٹس ایپ اکاؤنٹ کے خلاف رپورٹ کریں تو واٹس ایپ آپ پر پابندی لگا سکتا ہے۔

      اگر آپ کے واٹس ایپ اکاؤنٹ کے خلاف بہت ساری شکایات ہیں اور بہت زیادہ صارفین اکاؤنٹ کے خلاف رپورٹ کرتے ہیں تو واٹس ایپ کے ذریعہ ان پر پابندی لگ سکتی ہے۔
      قومی، بین الااقوامی، جموں و کشمیر کی تازہ ترین خبروں کے علاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: