ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: ایل اوسی کے پار دراندازی کی فراق میں 300 سے زیادہ دہشت گرد، داخلی علاقوں میں 240 دہشت گرد سرگرم

ایجنسیوں کی تازہ ترین اطلاعات کے مطابق کشمیر کی طرف دہشت گردوں کی تعداد تقریباً 150 سے 200 کے قریب ہے اور اس طرح (جموں علاقے) 100 سے 125 دہشت گرد ہیں’۔

  • Share this:
جموں وکشمیر: ایل اوسی کے پار دراندازی کی فراق میں 300 سے زیادہ دہشت گرد، داخلی علاقوں میں 240 دہشت گرد سرگرم
جموں وکشمیر: ایل اوسی کے پار دراندازی کی فراق میں 300 سے زیادہ دہشت گرد

جموں: جموں وکشمیر (Jammu Kashmir) کے پولیس ڈائریکٹر جنرل دلباغ سنگھ نے منگل کو کہا کہ ایل او سی (LoC) کے پار پاکستان مقبوضہ کشمیر (Pakistan Occupied Kashmir) میں دہشت گردانہ ٹھکانوں میں 300 سے زیادہ دہشت گرد موجود ہیں اور وہ ہندوستان میں دراندازی کرنے کی فراق میں ہیں۔ دلباغ سنگھ نے بتایا کہ جموں وکشمیر میں دہشت گردوں کی دراندازی کرانے کے پاکستان (Pakistan) کے منصوبے کو ناکام بنانے کے لئے سیکورٹی اہلکار پوری چوکسی برت رہے ہیں۔ انہوں نے پولیس ہیڈ کوارٹر میں پی ٹی آئی - بھاشا کو ایک انٹرویو میں بتایا، ’جموں وکشمیر میں دراندازی کرنے کے ارادے سے اس طرف بڑی تعداد میں دہشت گرد جمع ہیں۔ کشمیر وادی (Kashmir Valley) میں دراندازی کی تقریباً چار واقعات پہلے ہی ہوچکی ہیں اور راجوری - پونچھ علاقےمیں اس طرح کے دو تین کوششیں ہوئی ہیں۔


سبھی ایجنسیاں بہت سرگرم


اس پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ڈی جی پی دلباغ سنگھ نے کہا کہ پاکستان کی آئی ایس آئی، فوج اور دیگر ایجنسیاں بہت سرگرم ہیں اور دہشت گردانہ ٹھکانے میں ٹرینڈ دہشت گرد تیار ہیں۔ انہوں نے کہا ’ہماری ایجنسیوں کے  تازہ ترین اطلاعات کے مطابق کشمیر کی طرف (پی اوکے میں ایل اوسی کے پاس دہشت گردانہ ٹھکانے میں) دہشت گردوں کی تعداد تقریباً 150 سے 200 کے قریب ہے اور اس طرح (جموں علاقے) 100 سے 125  دہشت گرد ہیں’۔


جاری ہے پاکستان کی ناپاک حرکت

پولیس سربراہ دلباغ سنگھ نے کہا کہ دہشت گردوں کے چار گروپ جموں وکشمیر میں دراندازی کرنے میں کامیاب رہے ہیں۔ انہوں نے کہا، ’بین الاقوامی سرحد (آئی بی) کے متعلق موجودہ سال کے دوران دو سے تین دہشت گردانہ گروپوں نے دراندازی کی ہے۔ پاکستان کی ناپاک حرکت جاری ہے’۔

پولیس جنرل ڈائریکٹر دلباغ سنگھ نے کہا کہ ایل او سی کے پار پاکستان کے قبضے والے کشمیر میں دہشت گردانہ ٹھکانے میں 300 سے زیادہ دہشت گرد موجود ہیں اور وہ ہندوستان میں دراندازی کرنے کی فراق میں ہیں۔
پولیس جنرل ڈائریکٹر دلباغ سنگھ نے کہا کہ ایل او سی کے پار پاکستان کے قبضے والے کشمیر میں دہشت گردانہ ٹھکانے میں 300 سے زیادہ دہشت گرد موجود ہیں اور وہ ہندوستان میں دراندازی کرنے کی فراق میں ہیں۔


دہشت گردوں کی دراندازی کی ملی رپورٹ

ڈی جی پی نے کہا کہ اس سال جموں وکشمیر میں 30 دہشت گردوں کے ذریعہ دراندازی کی رپورٹ ملی ہے۔ انہوں نے کہا، ’دونوں طرف (جموں وکشمیر علاقہ) ملاکر اس سال یہ تعداد 30 کے قریب ہوسکتی ہے’۔ انہوں نے کہا، ’یہ ہمارے لئے تشویش کی بات ہے’۔

جموں وکشمیر کے اندرونی حصے میں 240 سے زیادہ دہشت گرد سرگرم

دلباغ سنگھ نے کہا کہ جموں وکشمیر کے اندرونی حصے میں 240 سے زیادہ دہشت گرد سرگرم ہیں۔ انہوں نے کہا، ’یہ تعداد مسلسل کم ہو رہی ہے۔ اس سال ہم نے 270 کے اعدادوشمار کے ساتھ شروعات کی تھی۔ آج یہ تعداد 240 کے قریب ہے’۔ انہوں نے کہا، ’ہم اب تک 70 سے زیادہ دہشت گردوں کا صفایا کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔ اس میں مختلف دہشت گردانہ تنظیموں کے 21 کمانڈر بھی ہیں۔ یہ سبھی کشمیر اور جموں علاقے میں سرگرم تھے’۔
First published: May 20, 2020 04:02 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading