پاکستان نے پونچھ کے مینڈھرسیکٹرمیں کی فائرنگ، 12 اسکولی بچے پھنسے

پاکستان نے پونچھ کےمینڈھرسیکٹرمیں سیزفائرکی خلاف ورزی کرتے ہوئےفائرنگ شروع کی ہے۔ فائرنگ میں سرکاری اسکول کے12 بچوں کے پھنسے ہونےکی خبرہے۔

Oct 22, 2019 03:56 PM IST | Updated on: Oct 22, 2019 04:01 PM IST
پاکستان نے پونچھ کے مینڈھرسیکٹرمیں کی فائرنگ، 12 اسکولی بچے پھنسے

پاکستان کی طرف سے پونچھ سے مینڈھرسیکٹرکونشانہ بناتے ہوئے فائرنگ کی جارہی ہے۔

سری نگر: پاکستان کی طرف سےایک بارپھرہندوستانی سرحد کونشانہ بناتے ہوئے فائرنگ کی جارہی ہے۔ پاکستان نے پونچھ کے مینڈھرسیکٹرمیں سیزفائرکی خلاف ورزی کرتے ہوئے فائرنگ شروع کی ہے۔ فائرنگ میں سرکاری اسکول کے 12 بچوں کے پھنسے ہونے کی خبر ہے۔ ہندوستانی سیکورٹی اہلکاران بچوں کومحفوظ نکالنےکی کوشش کررہے ہیں۔ وہیں دوسری طرف ہندوستانی سیکورٹی اہلکاربھی مسلسل پاکستان کی فائرنگ کا جواب دے رہے ہیں۔

اطلاعات کےمطابق پاکستان کی طرف سےایک بارپھرہندوستانی سرحد پرفائرنگ تیزکردی گئی ہے۔ رات 9 بجے سے ہی پاکستان کی طرف سے ہیرا نگرسیکٹرکونشانہ بناتے ہوئے فائرنگ کی جارہی تھی۔ ہیرا نگرمیں رہنے والے لوگوں کے مطابق فائرنگ تقریباً ایک بجے رات تک چلی تھی۔ اس کے بعد صبح سے ہی پاکستان ہندوستان کےالگ الگ بارڈرکو نشانہ بناتے ہوئے حملہ کررہا ہے۔

حالیہ اطلاعات کے مطابق پاکستان کی طرف سے پونچھ کے مینڈھرسیکٹرمیں مورٹارسے حملہ کیا جارہا ہے۔ ہندوستانی سیکورٹی اہلکاربھی پاکستان کی فائرنگ کا جواب دے رہے ہیں۔ بتایا جاتا ہےکہ دوپہرمیں جب پاکستان کی طرف سے فائرنگ شروع کی گئی، اس وقت بچوں کےاسکول کی چھٹیاں ہوئی تھیں۔ فائرنگ کے سبب 12 بچے بیچ میں ہی پھنس گئے۔ بچوں کو محفوظ باہرنکالنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

واضح رہےکہ ہندوستانی فوج نے پاکستان کی گولی باری کے بعد جواب میں بڑی کارروائی کرتے ہوئے اتوارکو پی اوکےمیں نیلم وادی میں زبردست ہتھیاروں سے چاردہشت گردانہ کیمپ اورکئی پاکستانی فوجی ٹھکانوں کو نشانہ بنایا تھا۔ فوفج کے سربراہ جنرل بپن راوت نے کہا تھا کہ سیکورٹی اہلکاروں نےاتمکام، کڈل شاہی اورجورا میں دہشت گردانہ کیمپوں کو تباہ کیا اورفوج کے پاس لیپا وادی میں ایک کیمپ کے بارے میں بھی اطلاع تھی، جس کے بعد یہ کارروائی کی گئی۔
Loading...

Loading...