ہوم » نیوز » عالمی منظر

ہندوستان نے جھوٹی اطلاع پھیلانے پر پاکستان کی مذمت کی، کہا- غلط جانکاری دینے کا ہے ٹریک ریکارڈ

گمنام ذرائع کے حوالے سے ہندوستان کے جھوٹے ’فلیگ آپریشن’ کا منصوبہ بنانے کا دعویٰ کرنے سے متعلق میڈیا میں آئی خبروں کے بارے میں پوچھے جانے پر وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ غلط اطلاع پھیلانے والے ملک کی سب سے بہترین مثال پڑوسی ملک ہے۔

  • Share this:
ہندوستان نے جھوٹی اطلاع پھیلانے پر پاکستان کی مذمت کی، کہا- غلط جانکاری دینے کا ہے ٹریک ریکارڈ
ہندوستان نے جھوٹی اطلاع پھیلانے پر پاکستان کی مذمت کی، کہا- غلط جانکاری دینے کا ہے ٹریک ریکارڈ

نئی دہلی: ہندوستان نے جھوٹی اطلاع پھیلانے کے پاکستان (Pakistan) کے الزامات کو لے کر جمعہ کو اس کی تنقید کی اور کہا کہ جہاں تک جھوٹی اطلاع کی بات ہے، اس کا بڑی مثال پڑوسی ملک ہے، جو خیالی اور من گھڑت دستاویز تقسیم کر رہا ہے اور مستقل طور پر ’فرضی خبروں’ کا سہارا لے رہا ہے۔ پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان (Imran khan) کے ذریعہ ہندوستان پر ’فرضی میڈیا اداروں’ کے ذریعہ تخریبی سرگرمیوں کا الزام لگانے کے لئے یوروپی یونین (ای یو) جھوٹی اطلاع لیبارٹری کی ایک رپورٹ کا حوالہ دیئے جانے اور اسی طرح کے الزام پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے ذریعہ لگائے جانے پر سوالوں کا جواب دیتے ہوئے وزارت خارجہ کے ترجمان انیرودھ شریواستو نے کہا کہ ذمہ دار جمہوریت ہونے کے ناطے ہندوستان غلط اطلاعات کو نہیں پھیلاتا ہے۔


غلط اطلاعات پھیلانے کا سب سے بڑا مثال ہے پاکستان


وزارت خارجہ کے ترجمان انوراگ شریواستو نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ منعقدہ پریس کانفرنس میں کہا،’اگر آپ غلط اطلاعات پر غور کریں گے تو اس کی بہترین مثال پڑوسی ملک ہے، جو خیالی اور من گھڑت دستاویز تقسیم کر رہا ہے اور مستقل طور پر فرضی خبروں کا سہارا لے رہا ہے۔ انوراگ شریواستو نے پاکستان پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ غلط اطلاعات خاص طور پر وہ لوگ پھیلاتے ہیں، جن کا ریکارڈ ہی چھپانے اور اسامہ بن لادن جیسے بین الاقوامی مطلوب دہشت گردوں کو پناہ دینے کا رہا ہے اور جس نے 26/11 ممبئی حملوں میں اپنے ملوث ہونے کی تلاش کی ناکام کوشش کرنے کی کوشش کی۔


وزارت خارجہ کے ترجمان انوراگ شریواستو نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ منعقدہ پریس کانفرنس میں کہا،’اگر آپ غلط اطلاعات پر غور کریں گے تو اس کی بہترین مثال پڑوسی ملک ہے، جو خیالی اور من گھڑت دستاویز تقسیم کر رہا ہے اور مستقل طور پر فرضی خبروں کا سہارا لے رہا ہے۔
وزارت خارجہ کے ترجمان انوراگ شریواستو نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ منعقدہ پریس کانفرنس میں کہا،’اگر آپ غلط اطلاعات پر غور کریں گے تو اس کی بہترین مثال پڑوسی ملک ہے، جو خیالی اور من گھڑت دستاویز تقسیم کر رہا ہے اور مستقل طور پر فرضی خبروں کا سہارا لے رہا ہے۔


آخر کار ہندوستان نے کیوں دیا جواب؟

گمنام ذرائع کے حوالے سے ہندوستان کے جھوٹے ’فلیگ آپریشن’ کا منصوبہ بنانے کا دعویٰ کرنے سے متعلق میڈیا میں آئی خبروں کے بارے میں پوچھے جانے پر وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ غلط اطلاع پھیلانے والے ملک کی سب سے بہترین مثال پڑوسی ملک ہے۔ انہوں نے کہا، ’اس موضوع میں ہمارا رخ اور زمینی حقیقت جگ ظاہر ہے، اس پر جواب دے کر میں اس طرح کے غلط پروپیگنڈہ کو ہوا نہیں دینا چاہتا’۔ ہندوستان کے ذریعہ شہتوت باندھ کی تعمیر کئے جانے سے متعلق وزیر خارجہ ایس جے شنکر کے ذریعہ جنیوا ڈونرس کانفرنس میں حال ہی میں کئے گئے اعلان کے بارے میں پوچھے جانے پر انوراگ شریواستو نے کہا کہ وزیر نے یہ اعلان کیا ہے کہ ہندوستان اور افغانستان کے درمیان اس باندھ کو لے کر ایک اتفاق رائے بنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ معاہدے پر جلد ہی دستخط کئے جانے کی امید ہے۔ یہ پوچھے جانے پر کہ نیپالی وزیر خارجہ ہندوستان کا سفر کب کریں گے، انوراگ شریواستو نے کہا کہ جوائنٹ کمیشن کی آئندہ میٹنگ کے لئے ان کے جلد ہی ہندوستان آنے کی امید ہے، لیکن اس کی تاریخوں کو حتمی شکل دیا جانا ابھی باقی ہے۔

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Dec 12, 2020 08:30 AM IST