ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہریانہ میں بھابھی کو بلیک میل کرکے دیور نے تین سال تک کی آبروریزی، ایف آئی آر درج

Rape in Palwal: پولیس نے متاثرہ کی شکایت پر نامزد ملزم کے خلاف معاملہ درج کرلیا ہے۔ فی الحال ملزم پولیس کی گرفت سے باہر ہے۔

  • Share this:
ہریانہ میں بھابھی کو بلیک میل کرکے دیور نے تین سال تک کی آبروریزی، ایف آئی آر درج
ہریانہ: بھابھی کو بلیک میل کرکے دیور نے تین سال تک کی آبروریزی، ایف آئی آر درج

پلول: ہریانہ کے پلول ضلع میں دیور بھابھی کا رشتہ اس وقت تار تار ہوگیا، جب ایک لڑکے کے ذریعہ اپنی بھابھی کو بلیک میل (Blackmail) کرکے تین سال تک آبروریزی (Rape) کی گئی۔ تھانہ انچارج آنند کمار نے بتایا کہ 27 سالہ خاتون نے شکایت درج کرائی ہے کہ اس کا اپنے شوہر کے ساتھ اختلاف رہتا تھا۔ تقریباً تین سال سے دیور امر کا متاثرہ کے گھر پر آنا جانا رہتا ہے۔ سال 2018 میں امر نے متاثرہ اور اس کے شوہر کے اختلاف کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اس کے ساتھ آبروریزی کی، جس کے بعد امر متاثرہ سے کہنے لگا کہ اس نے اس کی ویڈیو بنا لی ہے۔


اس ویڈیو کی بنیاد پر امر بلیک میل کرکے متاثرہ کے ساتھ تبھی سے آبروریزی کرتا آ رہا ہے۔ 20-15 دن قبل امر نے ایک آڈیو ریکارڈنگ بھیجی، جس کا پتہ متاثرہ کے گھر والوں کو چلا، جس کے بعد امر نے کہا کہ ابھی تو آڈیو ریکارڈنگ ہی بھیجی ہے۔ وہ ویڈیو ریکارڈنگ بھی بھیج دے گا، جس کے بعد متاثرہ نے امر کے خلاف پولیس کو شکایت دی۔


پولیس نے متاثرہ کی شکایت کی بنیاد پر ملزم کے خلاف معاملہ درج کرکے کارروائی شروع کردی ہے، لیکن ملزم ابھی پولیس کی گرفت سے باہر ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کو جلد ہی گرفتار کرلیا جائے گا۔ فی الحال اس کی تلاش جاری ہے۔


وہیں ہماچل پردیش کی راجدھانی شملہ گھومنے آئی ہریانہ کی ایک نابالغ لڑکی نے ایک نوجوان پر آبروریزی کا الزام لگایا ہے۔ ملزم لڑکا متاثرہ کی سہیلی کا جاننے والا ہے۔
وہیں ہماچل پردیش کی راجدھانی شملہ گھومنے آئی ہریانہ کی ایک نابالغ لڑکی نے ایک نوجوان پر آبروریزی کا الزام لگایا ہے۔ ملزم لڑکا متاثرہ کی سہیلی کا جاننے والا ہے۔


ہریانہ کی لڑکی سے ہماچل پردیش میں آبروریزی

وہیں ہماچل پردیش کی راجدھانی شملہ گھومنے آئی ہریانہ کی ایک نابالغ لڑکی نے ایک نوجوان پر آبروریزی کا الزام لگایا ہے۔ ملزم لڑکا متاثرہ کی سہیلی کا جاننے والا ہے۔ متاثرہ ہریانہ کے پنچکولہ کی رہنے والی ہے۔ شملہ سے پنچکولہ لوٹنے کے بعد متاثرہ نے کالکا پولیس اسٹیشن میں اس کے ساتھ ہوئے جرائم کی شکایت درج کروائی تھی۔ کالکا پولیس اسٹیشن نے زیرو ایف آئی آر کے تحت اس معاملے کو کارروائی کے لئے شملہ کے صدر پولیس اسٹیشن ٹرانسفر کیا ہے۔ شملہ کی صدر پولیس نے پوکسو ایکٹ میں کیس درج کرکے تحقیقات شروع کردی ہے۔ اس معاملے میں جانچ بڑھنے پر دیگر دفعات بھی لگائی جاسکتی ہیں۔ فی الحال معاملے میں کوئی گرفتاری نہیں ہوئی ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 19, 2021 12:29 PM IST