ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر پولیس ملی ٹینسی کوختم کرنے کےلیے پر ْعظم،پولیس کو جدیدہتھیاروں سے کیاجائےگالیس، ڈی جی پی

ڈی جی پی نے امن و قانون کی صورتحال کا جایزہ لیا ساتھ ہی ملی ٹینسی مخالف آپریشنز اور کام کاج سے جانکاری حاصل کی۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر پولیس جدید ہتھیاروں کے بارے میں بھی سوچ وچار کر رہی ہے تاکہ پولیس کو جدیدہتھیاروں سے لیس کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ جنوبی کشمیر میں سو سےزائد ملی ٹینٹ سرگرم ہیں اور انکے گراف میں اُتار چڑھاؤ ایک غیر معمولی بات ہے۔ انہوں نے ملی ٹینسی کے صفوں میں شامل ہو رہے نوجوانوں سے ایک بار پھر امن کی راہ پر گامزن ہونے کی اپیل کی۔

  • Share this:
جموں وکشمیر پولیس ملی ٹینسی کوختم کرنے کےلیے پر ْعظم،پولیس کو جدیدہتھیاروں سے کیاجائےگالیس، ڈی جی پی
جموں و کشمیر پولیس کے سربراہ دلباغ سنگھ

جموں و کشمیر پولیس کے سربراہ دلباغ سنگھ نے کہا ہے کہ کویڈ کی وجہ سے ملی ٹینسی مخالف آپریشن میں کمی واقع ہوئی ہے کیونکہ موجودہ حالات کے پیش نظر امن و قانون کی صورتحال کو بھی دیکھنا پڑ رہا ہے تاہم آپریشنز جاری ہیں اور ملی ٹینسی کو ختم کرنے کے لیے ریاستی پولیس پُرعظم ہے۔ انہوں نے کہا کہ جنوبی کشمیر میں سو سےزائد ملی ٹینٹ سرگرم ہیں اور انکے گراف میں اُتار چڑھاؤ ایک غیر معمولی بات ہے۔ انہوں نے ملی ٹینسی کے صفوں میں شامل ہو رہے نوجوانوں سے ایک بار پھر امن کی راہ پر گامزن ہونے کی اپیل کی۔



ڈی جی پی جنوبی کشمیر کے اننت ناگ اور کولگام اضلاع کے دورے پر تھے اور یہاں انہوں نے کئی تعمیراتی پراجکٹوں کا رسم افتتاح کرنے کے علاوہ پولیس ویلفیئر اسکیموں کا جایزہ لیا انہوں نے آفیسران کے ساتھ علیحدہ علیحدہ میٹنگ کی صدارت کی اور امن و قانون کی صورتحال کا جایزہ لیا ساتھ ہی ملی ٹینسی مخالف آپریشنز اور کام کاج سے جانکاری حاصل کی، دلباغ سنگھ نے کولگام میں میڈیا نمایندوں سے بات کرتے ہوے کہا کہ پولیس ہر سطح پر بنیادی ڈھانچے کو مضبوط بنانے کے لیے کام کر رہی ہے۔


اس کے علاوہ ریاستی پولیس جدید ہتھیاروں کے بارے میں بھی سوچ وچار کر رہی ہے تاکہ پولیس کو جدیدہتھیاروں سے لیس کیا جائے۔ انہوں نے محکمہ پولیس میں ویکسین مہم کی سراہنا کی اور کہا کہ محکمہ نے اپنا ٹارگٹ کو مکمل کرنے کے لیے حتمی شکل دی ہے۔ اس موقعہ پر آئی جی کشمیر وجے کمار، ڈی آئی جی جنوبی کشمیر عبدالجبار اور ایس پی کولگام گورندھر پال سنگھ کے علاوہ دیگر پولیس آفیسران موجود تھے۔
Published by: Mirzaghani Baig
First published: May 29, 2021 12:30 AM IST