உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Big News: پٹنہ میں بی جے پی آفس کے باہر پتھراو-لاٹھی چارج، وارڈ سکریٹریز نے کیا جم کر ہنگامہ

    بہار بی جے پی ریاستی دفتر (BJP Office) کے باہر وارڈ سکریٹریز نے جم کر ہنگامہ کیا ہے۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق، پیر کے روز اپنے مطالبات کو لے کر وارڈ سکریٹری بی جے پی دفتر کے باہر پہنچ گئے اور ہنگامہ کرنے لگے۔

    بہار بی جے پی ریاستی دفتر (BJP Office) کے باہر وارڈ سکریٹریز نے جم کر ہنگامہ کیا ہے۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق، پیر کے روز اپنے مطالبات کو لے کر وارڈ سکریٹری بی جے پی دفتر کے باہر پہنچ گئے اور ہنگامہ کرنے لگے۔

    بہار بی جے پی ریاستی دفتر (BJP Office) کے باہر وارڈ سکریٹریز نے جم کر ہنگامہ کیا ہے۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق، پیر کے روز اپنے مطالبات کو لے کر وارڈ سکریٹری بی جے پی دفتر کے باہر پہنچ گئے اور ہنگامہ کرنے لگے۔

    • Share this:
      پٹنہ: اس وقت بڑی خبر بہار کی راجدھانی پٹنہ سے آرہی ہے، جہاں بی جے پی ریاستی دفتر (BJP Office) کے باہر وارڈ سکریٹریز نے جم کر ہنگامہ کیا ہے۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق، پیر کے روز اپنے مطالبات کو لے کر وارڈ سکریٹری بی جے پی دفتر کے باہر پہنچ گئے اور ہنگامہ کرنے لگے۔ معاملے کی اطلاع ملتے ہی پولیس کی ٹیم موقع پر پہنچی اور وارڈ سکریٹریز کو سمجھا کر وہاں سے ہٹانے کی کوشش کی، لیکن ان کے نہیں ماننے کے بعد پولیس نے لاٹھی چارج (Lathicharge) کردیا۔ اس دوران پورے ویر چند پٹیل مارگ (VeerChand Patel Marg) پر افراتفری کی صورتحال بنی رہی۔ بی جے پی دفتر کے باہر میدان جنگ جیسا نظارہ دیکھنے کو ملا۔

      بتایا جاتا ہے کہ وارڈ سکریٹریز گزشتہ کئی روز سے گردنی باغ دھرنا کے مقام کے پاس اپنے مختلف مطالبات کو لے کر احتجاج کر رہے تھے، لیکن حکومت کی طرف سے ان کے مطالبات پر کوئی تبادلہ خیال نہیں ہونے کے بعد آج وارڈ سکریٹریز مشتعل ہوگئے اور ایک ساتھ مل کر بی جے پی دفتر کے باہر جمع ہوگئے۔ اس دوران بی جے پی دفتر کا گیٹ بند کردیا گیا۔ تبھی وارڈ سکریٹریز مزید ناراض ہوگئے اور گیٹ پر جم کر ہنگامہ کرنے لگے۔ آناً فاناً میں بڑی تعداد میں پولیس فورس موقع پر پہنچی اور کسی طرح صورتحال کو کنٹرول میں کرنے کی کوشش کی، لیکن وارڈ سکریٹری ماننے کو تیار نہیں ہوئے۔

      واٹر کینن سے چھوڑا گیا پانی، داغے گئے آنسو گیس کے گولے

      جب وارڈ سکریٹریز نے پولیس کی بات نہیں مانی تو پولیس اہلکاروں کی طرف سے مظاہرین پر واٹر کینن سے پانی چھوڑا گیا۔ اس کے خلاف وارڈ سکریٹریز نے واٹرکینن پر ہی پتھر برسانا شروع کردیا۔ اس دوران پورا علاقہ میدان جنگ میں تبدیل ہوگیا۔ اس دوران پولیس ٹیم نے مظاہرین پر لگام لگانے کے لئے آنسو گیس کے گولے بھی داغے۔

      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔

      Published by:Nisar Ahmad
      First published: