உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کیا چندرا بابو نائیڈو نے خریدا تھا جاسوسی سافٹ ویئر پیگاسس؟ ممتا کے الزامات کے بعد YSR کانگریس نے کیا جانچ کا مطالبہ

    کیا چندرا بابو نائیڈو نے خریدا تھا جاسوسی سافٹ ویئر پیگاسس؟

    کیا چندرا بابو نائیڈو نے خریدا تھا جاسوسی سافٹ ویئر پیگاسس؟

    جاسوسی سافٹ ویئر پیگاسس (Pegasus Spyware) کا موضوع اب مرکز سے ریاستی حکومتوں تک پہنچ گیا ہے۔ اس موضوع پر آندھرا پردیش میں تیلگودیشم پارٹی (TDP) اور وائی ایس آر کانگریس (YSRCP) نے ایک دوسرے پر تنقید کی ہے۔ YSRCP نے سابق وزیراعلیٰ چندرا بابو نائیڈو (Chandrababu Naidu) کے خلاف جانچ کا مطالبہ کیا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: ایسا لگ رہا ہے کہ جاسوسی سافٹ ویئر پیگاسس (Pegasus Spyware) کا موضوع اب مرکز سے ریاستی حکومتوں تک پہنچ گیا ہے۔ اس موضوع پر آندھرا پردیش میں تیلگودیشم پارٹی (TDP) اور وائی ایس آر کانگریس (YSRCP) نے ایک دوسرے پر تنقید کی ہے۔ YSRCP نے سابق وزیراعلیٰ چندرا بابو نائیڈو (Chandrababu Naidu) کے خلاف جانچ کا مطالبہ کیا ہے۔ دراصل گزشتہ دنوں مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے دعویٰ کیا تھا کہ چندرا بابو نائیڈو کی مدت کے دوران آندھرا پردیش حکومت نے یہ اسپائی ویئر خریدا تھا۔ واضح رہے کہ نائیڈو سال سے تک آندھرا پردیش کے وزیر اعلیٰ تھے۔

      YSRCP کے ترجمان اور رکن اسمبلی گڑیا واڑا امرناتھ نے کہا کہ چندرا بابو نائیڈو نے اپنی مدت کار کے دوران پیگاسس اسپائی ویئر کا استعمال کیا تھا۔ انہوں نے ان الزامات کو لے کر مرکزی حکومت سے جانچ کا مطالبہ کیا۔ ساتھ ہی انہوں نے الزام لگایا کہ چندرا بابو نائیڈو کے وزیر اعلیٰ رہتے ہوئے وائی ایس آر کانگریس سے متعلق کالس اور ڈیٹا کے ساتھ بھی چھیڑ چھاڑ کی گئی تھی۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      Exclusive: غلام نبی آزاد نے کہا- سونیا گاندھی کانگریس تنظیم میں تبدیلی کے لئے تیار

      پورے معاملے کی جانچ ہو

      امرناتھ نے کہا کہ ’اگر چندرا بابو نائیڈو نے اسپائی ویئر خریدا ہے، تو مرکز اور ریاستی حکومتوں کو جانچ کرنی چاہئے کہ کیا سافٹ ویئر عوامی لیڈروں اور صنعت کاروں کے لئے خریدا گیا تھا۔ یہ کوئی معمولی بات نہیں ہے، ہم اس معاملے کی پوری جانچ کا مطالبہ کرتے ہیں۔ اس سافٹ ویئر کا استعمال کرنا قومی سلامتی کے لئے خطرہ ہے۔ لوگوں کی بات چیت کو سننا اور ان پر نظر رکھنا ناقابل معافی جرم ہے۔

      ممتا بنرجی نے کیا کہا تھا؟

      واضح رہے کہ بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے بدھ کے روز اسمبلی میں انکشاف کیا تھا کہ ان کی حکومت کو پیگاسس اسپائی ویئر کی پیشکش کی گئی تھی، جسے انہوں نے قبول نہیں کیا تھا کیونکہ اس سے لوگوں کی پرائیویسی متاثر ہوتی۔ اس دوران انہوں نے دعویٰ کیا تھا کہ چندرا بابو نائیڈو کی مدت کار کے دوران آندھرا پردیش حکومت نے یہ اسپائی ویئر خریدا تھا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: