آرٹیکل 370 کی منسوخی: وادی کشمیرمیں انٹرنیٹ وموبائل سروس معطل رہنےسے لوگ پریشان

وادی کشمیرمیں انٹرنیٹ وموبائل سروس معطل ہے۔ خبروں کی ترسیل اور دیگرمعلومات کے حصول کے لئے لوگ ٹی وی، ریڈیو اور اخبارات کا سہارا لے رہے ہیں۔

Sep 09, 2019 09:50 AM IST | Updated on: Sep 09, 2019 09:52 AM IST
آرٹیکل 370 کی منسوخی: وادی کشمیرمیں انٹرنیٹ وموبائل سروس  معطل رہنےسے لوگ پریشان

جموں وکشمیر میں ناکہ بندی کا منظر۔(تصویر:اے پی)۔

وادی کشمیرمیں انٹرنیٹ وموبائل سروس معطل ہے۔ خبروں کی ترسیل اور دیگرمعلومات کے حصول کے لئے لوگ ٹی وی، ریڈیو اور اخبارات کا سہارا لے رہے ہیں۔ موجودہ دور میں انٹرنیٹ ،زندگی کا لازمی حصہ بن گیا ہے۔انسانی زندگی کا شائد ہی کوئی شعبہ ہو جس میں انٹرنیٹ کا عمل دخل نہ ہو۔یہ ایسی سہولت ہے جس کی مدد سے کوئی بھی گھر بیٹھےمختلف کام انجام دے سکتا ہے۔ دنیا بھر کی معلومات بہ آسانی حاصل کی جاسکتی ہیں۔ لوگ،سوشل میڈیا کے عادی بن گئے ہیں۔

انٹرنیٹ کے آنے کے بعد میڈیا کے جو دیگرذرائع ہیں جیسے اخبار،ریڈیو اور ٹی وی کی اہمیت قدرے کم ضرورہوگئی ہے تاہم تینوں ذرائع ابلاغ کی اہمیت وافادیت اپنی جگہ قائم ہے۔ وادی کشمیر میں 5اگست سے مواصلاتی نظام ٹھپ ہے۔ حالانکہ لینڈ لائنس بحال کی گئی ہیں تاہم انٹرنیٹ اورموبائل ابھی بھی بند ہیں۔ ایسے میں حالات سے باخبر ہونے کے لئے لوگوں کے پاس اخبارات، ریڈیو اور ٹی وی کے ذرائع ہی دستیاب ہیں۔ ڈش ٹی وی کا ریچارج نہ ہونے سے کئی جگہوں پرٹی وی بھی بند پڑے ہیں۔ ایسے میں اخبارات کی مانگ میں اضافہ ہوگیا ہے۔ صبح سویرے اخبارات ہاتھوں ہاتھ بک رہے ہیں۔

Loading...

طلبا کے مطابق انٹر نیٹ بند ہونے سے انہیں نہ ہی روزگار سے متعلق خبر یں موصول ہورہی ہے نہ ہی مختلف یونیورسٹیوں میں ہورہے ایڈمیشن کی خبریں ۔لہذا وہ اس مقصد کے لئے اخبارات کاسہارا لے رہے ہیں۔ حالانکہ اخبارات کی ڈیمانڈ بڑھ گئی ہے لیکن صفحات کی تعداد میں کمی بھی دیکھی جارہی ہے کیونکہ بندشوں کی وجہ سے صحافیوں کو خبریں جمع کرنے میں دقتوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔

دوسری جانب محرابوں کی زینت بن چکے ریڈیو اب دوبارہ نکل آئے ہیں۔لوگوں کے لئے ریڈیو، خبروں اور دیگر اہم معلومات کے علاوہ وقت گزارنےکا ذریعہ بنا ہوا ہے۔ اگر کسی کے پاس ریڈیو دستیاب نہیں ہے تب وہ اپنے پڑوسی یا دیگر دوست احباب کے پاس جاکر ریڈیو سن رہے ہیں۔موبائل اور انٹرنیٹ خدمات معطل رہنے سے لوگوں کے معمولات زندگی شدید درہم برہم ہوئے ہیں۔ کئی افراد کا روزگاربھی بیحد متاثر ہوا ہے۔ لوگوں کی یہی مانگ ہے کہ جلد سے جلد مواصلاتی نظام مکمل طور پر بحال کیا جائے تاکہ اس وقت وہ جس ذہنی پریشانی سے گذر رہے ہیں وہ اس سے نکل سکیں۔

نیوز18اردو کے لئے منیر حسین حرہ اورمنظوراحمد کی رپورٹ

Loading...