உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بنگال میں وزیر اعظم مودی نے کہا- ’ہندوستان کی جے’ کے نعرے سے ناراض ہوتی ہیں دیدی

    بنگال میں وزیر اعظم مودی نے کہا- ’ہندوستان کی جے’ کے نعرے سے ناراض ہوتی ہیں دیدی

    بنگال میں وزیر اعظم مودی نے کہا- ’ہندوستان کی جے’ کے نعرے سے ناراض ہوتی ہیں دیدی

    PM Modi in West Bengal: وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا، ’آپ نے نیوز میں دیکھا ہوگا کہ ان دنوں ہندوستان کو بدنام کرنے کے لئے کیسے کیسے بین الاقوامی سازشیں سامنے آرہی ہیں۔ کیسی کیسی سازشیں کی جارہی ہیں۔

    • Share this:
      کولکاتا: وزیر اعظم نریندر مودی (PM Narendra Modi) آج مغربی بنگال دورے پر ہیں۔ اس دوران ہلدیا کی عوامی تقریب کو خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے اتراکھنڈ کے چمولی ضلع میں ہمکھنڈ کے ٹوٹنے سے آئی تباہی کا بھی ذکر کیا اور ہر ممکن مدد کی یقین دہانی کرائی اور ہرممکن مدد کی یقین دہانی کرائی۔ وزیر اعظم مودی نے کہا، ’میں اتراکھنڈ سانحہ پر مسلسل اپڈیٹ لے رہا ہوں۔ اتراکھنڈ کے لئے پورا ملک دعا کر رہا ہے۔ اس دوران انہوں نے وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی پر بھی جم کر تنقید کی۔

      وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا، ’آپ نے نیوز میں دیکھا ہوگا کہ ان دنوں ہندوستان کو بدنام کرنے کے لئے کیسے کیسے بین الاقوامی سازشیں سامنے آرہی ہیں۔ کیسی کیسی سازشیں کی جارہی ہیں۔ سازش کرنے والوں کی بے چینی اتنی زیادہ ہے کہ ہندوستان کو بدنام کرنے کے لئے وہ چائے سے جڑی ہندوستان کی پہچان پر حملہ کرنے کی بات کہہ رہے ہیں۔ ٹی ورکرس کی سخت محنت پر حملہ کرنے کی سازش کی جارہی ہے۔

      آج جن 4 پروجیکٹس کی سنگ بنیاد رکھا اور افتتاح کیا گیا ہے، ان سے مغربی بنگال سمیت مشرقی ہندوستان کے مختلف ریاستوں میں ازآف لیونگ اور از آف ڈوئنگ بزنس دونوں بہتر ہوں گے۔ خاص طور پر اس پورے علاقے کی گیس کنیکٹیویٹی کو مضبوط بنانے کے لئے بڑے پروجیکٹس آج قوم کو وقف کئے گئے ہیں۔ گیس پر مبنی معیشت آج ہندوستان کی ضرورت ہے۔ ون نیشن، ون گیس گرڈ اسی ضرورت کو پورا کرنے سے متعلق ایک اہم مہم ہے۔

      وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ بنگال کی سرزمین کے وقار کے لئے بی جے پی کے ہرایک کارکن کی قربانی، ان کی کوشش نے پورے بنگال کو یہ احساس کرادیا ہے کہ اس بار تبدیلی ہوکر رہے گی’۔ انہوں نے کہا کہ بنگال فٹبال سے پیار کرنے والی ریاست ہے۔ فٹبال کی زبان میں کہنا چاہتا ہوں، ٹی ایم سی نے ایک کے بعد ایک فاول کرلئے ہیں۔ Misgovernance کا فاول۔ مخالفین پر حملے اور تشدد کا فاول۔ بنگال کے لوگوں کا پیسہ لوٹنے کا فاول۔ آستھا پر ہو رہے حملوں کا فاول۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: