உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وزیر اعظم نریندر مود نے نیتاجی سبھاش چندر بوس کے مجسمے کی نقاب کشائی

    وزیر اعظم نریندر مود نے نیتاجی سبھاش چندر بوس کے مجسمے کی نقاب کشائی ۔ تصویر : ANI

    وزیر اعظم نریندر مود نے نیتاجی سبھاش چندر بوس کے مجسمے کی نقاب کشائی ۔ تصویر : ANI

    وزیر اعظم نریندر مودی نے جمعرات کی شام کو انڈیا گیٹ کے پاس نیتاجی سبھاش چندر بوس کے مجسمے کی نقاب کشائی کی ۔ 28 فٹ اونچا یہ مجسمہ سنگل گرینائٹ پتھر سے بنایا گیا ہے ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | New Delhi | New Delhi
    • Share this:
      نئی دہلی : وزیر اعظم نریندر مودی نے جمعرات کی شام کو انڈیا گیٹ کے پاس نیتاجی سبھاش چندر بوس کے مجسمے کی نقاب کشائی کی ۔ 28 فٹ اونچا یہ مجسمہ سنگل گرینائٹ پتھر سے بنایا گیا ہے ۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے آج پہلے کرتو پتھ کا افتتاح کیا ۔ تقریبا تین کلو میٹر طویل راج پتھ نئی شکل میں اب کرتو پتھ کے نام سے جانا جائے گا ۔ رپورٹ کے مطابق اس مجسمہ کو بنانے میں 26 ہزار گھنٹے کا وقت لگا ہے اور 14 دن کے اندر اس کو تلنگانہ سے دہلی لایا گیا ہے ۔ پراکرم دیوس کے موقع پر جس جگہ پر وزیراعظم مودی نے اسی سال کے شروع میں نیتاجی کا ہولوگرام رکھا تھا، اب وہیں پر مجسمہ کی نقاب کشائی ہوئی ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: لداخ میں ہندوستان۔چین کی فوج نے پیچھے ہٹنا شروع کیا، کورکمانڈر کی میٹنگ میں ہوا تھا اتفاق


      اس مجسمہ کے سلسلہ میں بتایا گیا ہے کہ اس کو جیٹ بلیک گرینائٹ سے بنایا گیا ہے اور اس کو بنانے میں 280 میٹرک ٹن گرینائٹ کا استعمال ہوا ہے ۔ سبھاش چندر بوس کے اس مجسمہ کو ارون یوگی راج نے تیار کیا ہے ۔ اس مجسمہ کو جدید آلات کا استعمال کرکے روایتی تکنیکوں کے ساتھ بنایا گیا ہے ۔ نیتا جی کا یہ مجسمہ ہندوستان میں ہاتھ سے بنے ہوئے سب سے اونچے مجسموں میں سے ایک ہے۔


      یہ بھی پڑھئے: نتیش اور ہیمنت کے ساتھ آسکتی ہیں ممتا بنرجی، 2024 کے لوک سبھا انتخابات کی تیاری شروع


      وہیں دوسری طرف راج پتھ کا نام تبدیل کرنے کو لے کر پی ایم او نے ایک بیان جاری کیا ہے ۔ پی ایم او نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ سابقہ راج پتھ نام طاقت کی علامت تھا اور اس کا نام بدل کر کرتو پتھ کرنا عوامی ملکیت اور با اختیار بنانے کی ایک مثال ہے ۔

      خیال رہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی آج یعنی 8 ستمبر کی شام پورے سینٹرل وسٹا ایونیو کا افتتاح کرنے والے ہیں، جسے حکومت کے اہمیت کے حامل سینٹرل وسٹا ری ڈیولپمنٹ پروجیکٹ کے تحت نئے سرے سے تیار کیا گیا ہے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: