ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

وزیر اعظم مودی نے کہا- ان لاک -1 میں معیشت میں ہونے لگا سدھار، کسانوں کو ہوگا فائدہ

وزیراعظم نریندر مودی نے ملک میں کورونا وائرس ’کووِڈ ۔19‘ کو کنٹرول کرنے پر زور دیتے ہوئے منگل کے روز کہا کہ جتنی تیزی سے وبا پر قابو ہوگا، اتنی ہی زیادہ تیز رفتار سے ہندوستانی معیشت پٹری پر لوٹےگی اور عوام کو روزگار کے مواقع ملیں گے۔

  • Share this:
وزیر اعظم مودی نے کہا- ان لاک -1 میں معیشت میں ہونے لگا سدھار، کسانوں کو ہوگا فائدہ
وزیر اعظم مودی نے کہا- کورونا بحران سے نٹمنے کے لئے صحت خدمات کو بڑھانا ہماری اولین ترجیح

نئی دہلی: وزیراعظم نریندر مودی نے ملک میں کورونا وائرس ’کووِڈ ۔19‘ کو کنٹرول کرنے پر زور دیتے ہوئے منگل کے روز کہا کہ جتنی تیزی سے وبا پر قابو ہوگا، اتنی ہی زیادہ تیز رفتار سے ہندوستانی معیشت پٹری پر لوٹےگی اور عوام کو روزگار کے مواقع ملیں گے۔ وزیر اعظم مودی نے کورونا وبا کے سبب پورے ملک میں نافذ مکمل لاک ڈاؤن کے پانچویں مرحلے میں دی گئی رعایتوں اور چھوٹ کے بعد عوام کے کام دھندوں کے لئے گھروں سے باہر آنے کے ساتھ ہی پورے ملک میں وائرس کے کیسز میں اضافے کے درمیان 21 ریاستوں اور مرکز زیر انتظام علاقوں کے وزرائے اعلیٰ کے ساتھ ویڈیو کانفرنس میں کہا کہ لاک ڈاؤن ہٹنے کے پہلے مرحلے میں ہندوستانی معیشت پٹری پر لوٹ رہی ہے۔


وزیر اعظم مودی نے کہا کہ فی الحال وبا کو پھیلنے سے روکنے کی ضرورت ہے۔ اس سے عوام میں اعتماد پیدا ہوگا اور معاشی سرگرمیوں کو رفتار ملے گی۔ کورونا وبا کے بعد وزیر اعظم نریندر مودی کی وزرائے اعلیٰ کے ساتھ یہ چھٹی میٹنگ ہے۔ میٹنگ شروع ہونے سے پہلے انہوں نے 21 ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ کے سامنے اپنی بات رکھی اور صورتحال سے نمٹنے میں تعاون اور معیشت کو آگے لے جانے سے متعلق مشورے طلب کئے۔ انہوں نے لاک ڈاؤن مؤثر انداز میں نافذ کرنے کے لئے ان کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ اب ملک کھل چکا ہے اور عوام کی محنت سے زندگی معمول پر لوٹ رہی ہے، لیکن اب بے حد ہوشیار رہنے کی ضرورت ہے کیونکہ تھوڑی سی لاپرواہی گذشتہ دو تین ماہ کی محنت پر پانی پھیر سکتی ہے۔


 وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ ان لاک۔1 کا سب سے بڑا سبق یہی ہے کہ اگر ہم ضوابط اور ڈسپلن پر عمل درآمد کریں گے تو کورونا بحران سے کم از کم نقصان ہوگا۔ فائل فوٹو

وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ ان لاک۔1 کا سب سے بڑا سبق یہی ہے کہ اگر ہم ضوابط اور ڈسپلن پر عمل درآمد کریں گے تو کورونا بحران سے کم از کم نقصان ہوگا۔ فائل فوٹو


وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ ان لاک۔1 کا سب سے بڑا سبق یہی ہے کہ اگر ہم ضوابط اور ڈسپلن پر عمل درآمد کریں گے تو کورونا بحران سے کم از کم نقصان ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ چہرے پر ماسک اور دو گز کی دوری کے ضابطے پر سختی سے عمل درآمد ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’’ہمیں اس بات پر ہمیشہ توجہ رکھنی چاہیے کہ ہم کورونا کو جتنا روک پائیں گے، اتنا ہی ہماری معیشت کھلے گے، ہمارے دفتر کھلیں گے، مارکیٹ کھلیں گے، ٹرانسپورٹ کے وسائل کھلیں گے اور اتنے ہی روزگار کے نئے مواقع پیدا ہوں گے۔

نریندر مودی نے کہا کہ مستقبل میں جب کبھی ہندوستان کی کورونا کے خلاف لڑائی کا مطالعہ کیا جائے گا تو یہ دور اس لیے بھی یاد کیا جائے گا کہ کیسے اس دوران ہم نے ساتھ مل کر کام کیا اور کو معاون وفاقیت کی سب سے بہترین مثال پیش کی۔ انہوں نے کہاکہ ’’دنیا کے بڑے بڑے ماہرین، صحت کے عالم، لاک ڈاؤن اور ہندوستان کے عوام کے قواعد وضوابط پر عمل پیر ہونے پر آج بحث کررہے ہیں۔ آج ہندوستان میں ریکوری ریٹ 50 فیصد سے زیادہ ہے۔ آج ہندوستان دنیا کے ان ممالک میں سب سے آگے ہے جہاں کورونا سے متاثر مریضوں کی زندگی بچ رہی ہے۔‘‘ وزیراعظم نے کہا کہ ہندوستان ان ممالک میں شامل ہے جہاں سب سے کم مرنے کی شرح ہے۔ اس سے خود اعتمادی میں اضافہ ہوتا ہے کہ ملک نقصان کم کرکے آگے بڑھ سکتا ہے۔
First published: Jun 16, 2020 10:01 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading