ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Fight Against Covid-19:کورونا سے متاثرہ ریاستوں کے وزرائے اعلی کے ساتھ پی ایم مودی کی بات چیت

اس ورچوئیل میٹنگ میں دہلی کے وزیراعلی اروند کیجریوال، مہاراشٹر کے ادھو ٹھاکرے، کیرالہ کے پنارائے وجین، راجستھان کے اشوک گہلوت شریک تھے۔ اجلاس میں وزیر داخلہ امیت شاہ بھی موجود تھے۔

  • Share this:
Fight Against Covid-19:کورونا سے متاثرہ ریاستوں کے وزرائے اعلی کے ساتھ پی ایم مودی کی بات چیت
وزیر اعظم اور وزرائے اعلیٰ کے اجلاس کے دوران ، کیجریوال نے آکسیجن کی کمی کا معاملہ اٹھایا

ملک میں عالمی وبا کورونا وائرس (کووڈ۔19) کس قہر جاری ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی نے ریاستوں کے وزرائے اعلی سے بات چیت کی۔ اس دوران انھوں نے ریاستوں میں کورونا وائرس کی صورت حال کا جائزہ لیا ہے۔اس ورچوئیل میٹنگ میں دہلی کے وزیراعلی اروند کیجریوال، مہاراشٹر کے ادھو ٹھاکرے، کیرالہ کے پنارائے وجین، راجستھان کے اشوک گہلوت شریک تھے۔ اجلاس میں وزیر داخلہ امیت شاہ بھی موجود تھے۔یہ میٹنگ ایک ایسے وقت میں کی گئی ہے جب ہندوستان میں بڑھتی ہوئی صورت حال اور صحت کی دیکھ بھال کے بنیادی ڈھانچے کو شدید نقصان پہنچا ہے۔آکسیجن کی کمی، اسپتالوں میں بستروں کی قلت نے گذشتہ چند ہفتوں کے دوران متعدد ریاستوں کو پریشان کردیا ہے حالانکہ حکومت نے مطالبات کو پورا کرنے کی کوششیں تیز کردی ہیں۔



کورونا سے متاثر ہ ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ کے ساتھ وزیراعظم کے اجلاس کے دوران دہلی کے وزیراعلیٰ اروند کیجریوال نے اپنے بیان کوٹی وی چینلس پر لائیو دیئے جانے پر وزیر اعظم مودی سے معافی مانگ لی ہے۔ آج ، وزیر اعظم اور وزرائے اعلیٰ کے اجلاس کے دوران ، کیجریوال نے آکسیجن کی کمی کا معاملہ اٹھایا۔ تنازعہ نے کیجریوال کا ٹی وی پر لائیو نشر ہونے پر وزیراعظم نریند رمودی نے اجلاس کے دوران ہی اعتراض جتایاہے۔ پی ایم مودی نے مداخلت کرتے ہوئے کہا کہ اروند کیجریوال بند کمرے میں ہونے والے اجلاس کو ٹی وی پر لائیو دے کر روایت او رپروٹول کی خلاف ورزی کررہے ہیں۔ جس کے بعدکیجریوال نے معذرت خواہی کرلی ہے۔دوسری جانب اروند کیجریوال کے دفتر نے بھی اس سلسلہ میں حکومت ہند سے معذرت خواہی کی ہے ۔

بی جے پی کا کہناہے کہ اروند کیجریوال نے وزیراعطم اوز وزرائے اعلیٰ کے اجلاس کا لائیو ٹیلی کاسٹ کرکے اس میٹنگ کو سیاسی مفادات کے لیے استعمال کرنے کی کوشش کی ہے۔ بی جے پی ترجمان گورو بھٹایہ اورسمبت پاترا نے ٹویٹ کرکے اس معاملہ پر اپنے ردعمل کا اظہارکیاہے۔


واضح رہے کہ ملک میں کورونا انفیکشن کے 3.32 لاکھ سے زیادہ نئے کیس سامنے آنے کے بعد ، فعال کیسوں کی شرح میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے اور اب یہ 15 فیصد کے قریب پہنچ گئی ہے۔اس دوران ملک میں جمعرات کو 31 لاکھ 47 ہزار 782 افراد کو کورونا کا ٹیکہ لگایا گیا اور اب تک 13 کروڑ 54 لاکھ 78 ہزار 420 افراد کو ٹیکے لگائے جاچکے ہیں۔مرکزی وزارت صحت کی جانب سے جمعہ کی صبح جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں 332730 نئے کیسز کی آمد کے ساتھ ، متاثرہ افراد کی تعداد بڑھ کر ایک کروڑ 62 لاکھ 63 ہزار 695 ہوگئی۔

فعال معاملات میں مسلسل اضافے کی وجہ سے ، ان کی تعداد بڑھ کر 2428616 ہوگئی ہے اور اس کی شرح 14.93 ہوگئی ہے۔ دوسری طرف 193279 مریض بھی صحت مند ہوئے ہیں ، جنہیں ملاکر اب تک ایک کروڑ 36 لاکھ 48 ہزار 159 افراد نے کورونا کو شکست دی ہے۔ اسی عرصے میں 2263 مزید مریضوں کی ہلاکت کے ساتھ ہی اس مرض سے اموات کی تعداد بڑھ کر 186920 ہوگئی ہے۔ملک میں ری کوری کی شرح کم ہوکر 83.92 فیصد ہوگئی ہے ، جبکہ اموات کی شرح کم ہوکر 1.16 فیصد ہوگئی ہے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Apr 23, 2021 03:58 PM IST