ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

Cyclone Tauktae:وزیراعظم نریندرمودی آج کرینگےگجرات کادورہ،طوفان توک تائی کے نقصانات کالیں گے جائزہ

وزیر اعظم مودی بدھ کو صبح 11.30 بجے بھاون نگر کے ہوائی اڈے پر پہنچیں گے۔ یہاں سے ، وہ بھاون نگر ، امریلی ، گر ، سومناتھ اور دییو کا فضائی سروے کریں گے۔ یہ وہ علاقے ہیں جہاں طوفان توک تائی نے سب سے زیادہ نقصان پہنچا یاہے۔ فضائی سروے کے بعد ، وزیر اعظم احمد آباد پہنچیں گے اور یہاں گجرات کے وزیر اعلیٰ اور اعلی عہدیداروں سے اجلاس میں حصہ لیں گے۔

  • Share this:
Cyclone Tauktae:وزیراعظم نریندرمودی آج کرینگےگجرات کادورہ،طوفان توک تائی کے نقصانات کالیں گے جائزہ
وزیراعظم نریندرمودی کی فائل فوٹو

نئی دہلی:پیر کی رات گجرات (Gujarat) کے ساحل پر ٹکرانے کے بعد منگل کی رات کو طوفان توک تائی کمزور پڑا گیاہے۔ لیکن اس دوران ، طوفان توک تائی نے گجرات (Gujarat) میں زبردست تباہی مچا ئی ہے۔ ریاست کے متعدد اضلاع میں تقریباً 16 ہزار مکانات تباہ ہوگئے ہیں جبکہ اس طوفان کی وجہ سے 13 افراد کی موت بھی ہوچکی ہے۔ اس کے ساتھ ہی وزیر اعظم نریندر مودی (PM Narendra Modi) طوفان سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کرنے بدھ کے روز گجرات اور دیو کا دورہ کریں گے۔


پیر کی رات طوفان ، گجرات کے ساحل پر 185 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے ٹکرایا۔ طوفان کی وجہ سے ، ریاست کے سوراشٹر اور شمالی گجرات کے متعدد علاقوں میں 100 ملی میٹر تک بارش ہوئی۔ 12 اضلاع میں 150 ایم ایم تک بارش ہوئی۔ اب محکمہ موسمیات نے کہا ہے کہ طوفان کمزور پڑگیاہے لیکن اس سے پہلے اس نے بہت تباہی ہوئی ہے۔ طوفان کی وجہ سے ، گجرات کے راجکوٹ ، بھاون نگر ، پٹن ، امریلی اور والساد میں اموات ریکارڈ کی گئی ہے۔



وزیر اعظم مودی بدھ کو صبح 11.30 بجے بھاون نگر کے ہوائی اڈے پر پہنچیں گے۔ یہاں سے ، وہ بھاون نگر ، امریلی ، گر ، سومناتھ اور دییو کا فضائی سروے کریں گے۔ یہ وہ علاقے ہیں جہاں طوفان توک تائی نے سب سے زیادہ نقصان پہنچا یاہے۔ فضائی سروے کے بعد ، وزیر اعظم احمد آباد پہنچیں گے اور یہاں گجرات کے وزیر اعلیٰ اور اعلی عہدیداروں سے اجلاس میں حصہ لیں گے۔

محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ توک تائی آدھی رات کےقریب گجرات کے ساحل سے 'انتہائی گردابی طوفان' کی حیثیت سے گذرا اور آہستہ آہستہ ایک 'شدید طوفان' کی شکل اختیار کر گیا اور بعد میں کمزور ہوا اور اب 'گردابی طوفان' میں تبدیل ہوگیا۔

گجرات کے وزیر اعلیٰ وجے روپانی نے کہا کہ 16 ہزار سے زیادہ مکانات کو نقصان پہنچا ہے ، 40 ہزار سے زیادہ درخت اور 70 ہزار سے زیادہ بجلی کے کھمبے گر گئے ہیں جبکہ 5951 دیہات میں بجلی سربراہی متاثر ہوئی ہے۔
Published by: Mirzaghani Baig
First published: May 19, 2021 08:27 AM IST