உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Assembly Elections Result 2022: وزیراعظم مودی نےکہا’غریب کےگھر تک اس کا حق پہنچائے بغیرخاموش نہیں بیٹھوں گا‘

    وزیر اعظم مودی نے کہا- غریب کے گھر تک اس کا حق پہنچائے بغیر خاموش نہیں بیٹھوں گا

    وزیر اعظم مودی نے کہا- غریب کے گھر تک اس کا حق پہنچائے بغیر خاموش نہیں بیٹھوں گا

    بی جے پی نے اترپردیش کے اسمبلی انتخابات میں جیت حاصل کرلی ہے۔ پارٹی کو اتراکھنڈ، منی پور اور گوا میں بھی جیت ملی ہے۔ اسی کے سبب بی جے پی ہیڈ کوارٹر پہنچے وزیر اعظم نریندر مودی نے پارٹی کارکنان کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج ہندوستان کی جمہوریت کا جشن ہے۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے الیکشن میں حصہ لینے والے سبھی رائے دہندگان کو مبارکباد دی۔

    • Share this:
      نئی دہلی: بی جے پی نے اترپردیش کے اسمبلی انتخابات (Assembly Election 2022) میں جیت حاصل کرلی ہے۔ پارٹی کو اتراکھنڈ، منی پور اور گوا میں بھی جیت ملی ہے۔ اسی کے سبب بی جے پی ہیڈ کوارٹر پہنچے وزیر اعظم نریندر مودی نے پارٹی کارکنان کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج ہندوستان کی جمہوریت کا جشن ہے۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے الیکشن میں حصہ لینے والے سبھی رائے دہندگان کو مبارکباد دی۔

      اس سے قبل، بی جے پی ہیڈ کوارٹر میں وزیر اعظم مودی اور کارکنان کا استقبال کرتے ہوئے بی جے پی صدر جے پی نڈا نے کہا، ’آج الیکشن کے نتائج جو بی جے پی کے حق میں یکطرفہ آئے ہیں، اس کی وجے یاترا کے ضمن میں ا تنی بڑی تعداد میں آپ سب لوگ آئے ہیں۔ بی جے پی کے کروڑوں کارکنان کی طرف سے میں وزیر اعظم کا استقبال کرتا ہوں، شکریہ ادا کرتا ہوں‘۔

      وزیر اعظم مودی کے خطاب کے اہم نکات

      آج جوش اور اتسو کا دن ہے۔ میں ان انتخابات میں حصہ لینے والے سبھی رائے دہندگان کو مبارکباد دیتا ہوں۔ ان کے فیصلے کے لئے رائے دہندگان کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔ خاص طور پر ہماری ماوں، بہنوں اور نوجوانوں نے جس طرح سے بی جے پی کی حمایت کی اور وہ اپنے آپ میں بڑا پیغام ہے۔

      الیکشن کے دوران بی جے پی کے کارکنان نے مجھ سے وعدہ کیا تھا کہ اس بار ہولی 10 مارچ سے ہی شروع ہوجائے گی۔ ہمارے محنتی کارکنوں نے اپنے وعدے پورے کئے۔ میں اپنے کارکنوں کی دل کی گہرائیوں سے تعریف کروں گا، جنہوں نے ان انتخابات میں سخت محنت کی۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      UP Election Results 2022: رامپور سے اعظم خان اور سوار سیٹ سے بیٹے عبداللہ اعظم جیتے

      یوپی نے ملک کو کئی وزرائے اعظم دیئے ہیں، لیکن 5 سال کی مدت پوری کرنے والے وزیر اعظم کے دوبارہ منتخب کئے جانے کی یہ پہلی مثال ہے۔ یوپی میں 37 سال بعد کوئی حکومت مسلسل دوسری بار آئی ہے۔

      تین ریاست یوپی، گوا اور منی پور میں حکومت میں ہونے کے باوجود بی جے پی کے ووٹ شیئر میں اضافہ ہوا ہے۔ گوا میں سارے ایگزٹ پول غلط نکل گئے اور وہاں کی عوام نے تیسری بار خدمت کرنے کا موقع دیا ہے۔ 10 سال تک اقتدار میں رہنے کے بعد بھی ریاست میں بی جے پی کی سیٹوں کی تعداد بڑھی ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: