உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مہذب سماج میں ماب لنچنگ جیسے واقعات کیلئے کوئی جگہ نہیں : وزیر اعظم مودی

    وزیر اعظم نریندر مودی نے واضح طور پر کہا ہے کہ رام مندر پر آرڈیننس لانے پر غور قانونی کارروائی پوری ہونے کے بعد ہی کیا جائے گا ۔

  • News18 Urdu
  • | January 01, 2019, 18:59 IST
    facebookTwitterLinkedin
    LAST UPDATED 3 YEARS AGO

    AUTO-REFRESH

    HIGHLIGHTS

    19:37 (IST)

    پاکستان کے ساتھ رشتوں پر وزیر اعظم مودی نے کہا کہ پاکستان جلد سدھرنے والا نہیں ہے ۔ ساتھ ہی پاکستان کے ساتھ تعلقات کو لے کر حکومت کا کیا منصوبہ ہے ، اس بارے میں میڈیا میں بتایا نہیں جاسکتا ۔ لیکن ہر حکومت نے پاکستان سے تعلق سدھارنے کیلئے کام کیا ہے ۔ 

    19:36 (IST)

    ہندوستان میں خواہ کسی کی بھی حکومت ہو ، اس نے کبھی بھی پاکستان سے بات چیت کی مخالفت نہیں کی ۔ یہ ملک کی طویل عرصہ سے چلی آرہی پالیسی ہے نہ کہ مودی حکومت یا منموہن حکومت کی ۔ ہم نے صرف ایک بات کہی کہ بم اور بندوق کے شور میں بات چیت کی آواز سنائی نہیں دیتی ۔ 

    19:22 (IST)

    سرجیکل اسٹرائیک سے وابستہ سوال پر وزیر اعظم مودی نے کہا کہ اری حملہ کے بعد وہ کافی دکھی تھے ۔ اس کے بعد ہی سرجیکل اسٹرائیک کا منصوبہ بنا ۔ دو مرتبہ سرجیکل اسٹرائیک کے منصوبہ کو ٹالا گیا ۔ اس کے بعد اس کو منظوری دی گئی ۔ اس میں اولین ترجیح جوانوں کی سیکورٹی تھی ۔ 

    19:16 (IST)

    رافیل سودے کو لے کر اپوزیشن کے سوال پر وزیر اعظم مودی نے کہا کہ ان پر ذاتی الزامات نہیں ہیں ۔ پارلیمنٹ میں ہم نے اس پر جواب دیا ہے۔ سپریم کورٹ تک معاملہ گیا ، وہاں سے بھی جواب ملا ہے۔ فرانس کے صدر نے جواب دیا ہے ۔ ہندوستان کے وزیر اعظم نے جواب دیدیا ہے۔ 

    19:14 (IST)

    وزیر اعظم مودی نے رام مندر کے سوال پر کہا کہ تین طلاق پر آرڈیننس سپریم کورٹ کے فیصلہ کے بعد لایا گیا ۔ ہم نے بی جے پی کے منشور میں کہا تھا کہ ایودھیا مسئلہ کا حل نکالنے کیلئے کام کیا جائے گا۔ 

    19:10 (IST)

    تین طلاق پر بی جے پی کی پروگیسو سوچ ہے اور سبریمالا پر روایتی سوچ کیوں ؟  اس سوال کے جواب پر وزیر اعظم مودی نے کہا کہ کئی ممالک نے تین طلاق پر پابندی لگائی ہوئی ہے اور یہ مذہب کا معاملہ نہیں ہے ۔ مندر وں کی اپنی روایت ہے ۔ کچھ مندروں میں مرد بھی نہیں جاتے ، سبریمالا اور تین طلاق کو الگ الگ رکھ کر دیکھنے کی ضرورت ہے۔ 

    19:8 (IST)

    کسانوں پر وزیر اعظم مودی نے کہا کہ حقیقت میں کانگریس نے قرض معافی نہیں کی ۔ کسانوں سے جھوٹ بولا گیا ۔ ہماری حکومت کا مقصد کسانوں کو مضبوط کرنا ہے ۔ ہمیں یہ صورتحال بنانی چاہئے کہ کسانوں کو قرض کی ضرورت نہیں  پڑے۔ 

    18:50 (IST)

    ملک میں عدم رواداری ، ماب لنچنگ اور اقلیتوں میں خوف کے الزامات پر وزیر اعظم مودی نے کہا کہ مہذب سماج میں اس طرح کے واقعات کیلئے کوئی جگہ نہیں ہے۔ اقلیتوں پر حملے قابل مذمت ہے۔ بھیڑ کے ذریعہ پیٹ پیٹ کر مار ڈالنےکے واقعات شرمناک ہیں ، ہمیں ایک دوسرے کے جذبات کا احترام کرنا چاہئے ۔ 

    18:45 (IST)

    وزیر اعظم مودی نے کہا کہ مڈل کلاس کے بارے میں ہمیں اپنی رائے بدلنی چاہئے۔ 

    18:43 (IST)

    جی ایس ٹی پر وزیر اعظم مودی نے کہا کہ راہل گاندھی جی ایس ٹی کو گبر سنگھ ٹیکس کہہ رہے ہیں ۔ انسان جیسا سوچتا ہے ویسے ہی بولتا ہے ۔ کیا جی ایس ٹی ملک کی سبھی سیاسی پارٹیوں کے اتفاق رائے سے نہیں لایا گیا ہے۔ جب پرنب مکھرجی فائنانس منسٹر تھے ، تب سے جی ایس ٹی کی کارروائی شروع ہوئی تھی ۔

    وزیر اعظم نریندر مودی نے واضح طور پر کہا ہے کہ رام مندر پر آرڈیننس لانے پر غور قانونی کارروائی پوری ہونے کے بعد ہی کیا جائے گا ۔ وزیر اعظم مودی نیوز ایجنسی اے این آئی کے ساتھ انٹرویو کے دوران یہ بات کہی ۔ وزیر اعظم مودی نے نئے سال کے پہلے ہی دن انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ سرجیکل اسٹرائیک جوکھم بھرا تھا اور وہ جوانوں کے تحفظ کو لے کر فکر مند تھے ۔ ملک میں عدم رواداری ، ماب لنچنگ اور اقلیتوں میں خوف کے الزامات پر وزیر اعظم مودی نے کہا کہ مہذب سماج میں اس طرح کے واقعات کیلئے کوئی جگہ نہیں ہے۔ اقلیتوں پر حملے قابل مذمت ہے۔ بھیڑ کے ذریعہ پیٹ پیٹ کر مار ڈالنےکے واقعات شرمناک ہیں ، ہمیں ایک دوسرے کے جذبات کا احترام کرنا چاہئے ۔

    لائیو اپ ڈیٹس کیلئے ہمارے ساتھ جڑے رہیں ۔