ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

India Toy Fair 2021:کھلونا میلہ خودکفیل ہندوستان کی سمت میں بڑاقدم:مودی

India Toy Fair 2021: وزیراعظم نریندر مودی نے کہا کہ کھلونوں کو پلاسٹک سے پاک کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پلاسٹک کے بجائے لکڑی کے کھلونے بچوں کو زیادہ پسند آئیں گے ۔ وزیراعظم نے کھلونا مینوفیکچرنگ سے جڑ صنعت کاروں کو مشورہ دیاہےکہ وہ کھلونے بنانے کے لیے پلاسٹک کا کم استعمال کریں اور دیگر اشیاء سے کھلونوں کو بنایاجائے تاکہ ماحولیات کا بھی تحفظ کیاجاسکیں ۔

  • Share this:
India Toy  Fair 2021:کھلونا میلہ خودکفیل ہندوستان کی سمت میں بڑاقدم:مودی
وزیراعظم نریندر مودی نے کہا کہ کھلونوں کو پلاسٹک سے پاک کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پلاسٹک کے بجائے لکڑی کے کھلونے بچوں کو زیادہ پسند آئیں گے ۔

نئی دہلی: وزیر اعظم نریندر مودی نے آج صبح 11 بجے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ 'ورچوئل انڈیا ٹوئے فیئر ۔2021 (Virtual Toy India Fair 2021) کا افتتاح کیا ہے۔ 'ووکل فار لوکل' مہم کے تحت ملک کو کھلونا مینوفیکچرنگ کا عالمی مرکز بنانے کے لئے ، وزارت تعلیم ، وزارت خواتین و بہبود اطفال وزارت ٹیکسٹائل اس کا اہتمام کررہی ہے۔ انڈیا ٹوئے فیئر ۔2021 کی افتتاحی تقریب کے موقع پر ، وزیر اعظم مودی نے کہا ، آپ سب سے بات کرنے کے بعد ، یہ پتہ چل جاتا ہے کہ ہمارے ملک کی کھلونا صنعت میں کتنی طاقت پوشیدہ ہے۔ اس طاقت میں اضافہ ، اپنی شناخت بڑھانا خود انحصاری ہندوستان مہم (آتم نربھر بھارت )کا ایک بڑا حصہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ پہلا انڈیا ٹوئے فیئر ۔2021 صرف کاروبار یا معاشی ایونٹ نہیں ہے۔ یہ پروگرام کھیلوں اور خوبصورتی کے ملک کی قدیم ثقافت کو مضبوط بنانے کی ایک کڑی ہے۔


اس موقع پر وزیراعظم نریندر مودی نے کہا کہ کھلونوں کو پلاسٹک سے پاک کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پلاسٹک کے بجائے لکڑی کے کھلونے بچوں کو زیادہ پسند آئیں گے ۔ وزیراعظم نے کھلونا مینوفیکچرنگ سے جڑ صنعت کاروں کو مشورہ دیاہےکہ وہ کھلونے بنانے کے لیے پلاسٹک کا کم استعمال کریں اور دیگر اشیاء سے کھلونوں کو بنایاجائے تاکہ ماحولیات کا بھی تحفظ کیاجاسکیں ۔ پی ایم نے کہا کہ انڈیا ٹوئے فیئر ۔2021 نہ صرف کھلونا صنعت کو مضبوط بنائے گا بلکہ اس سے ملک کی معیشت کو بھی مدد ملے گی ۔



دوسری جانب راجستھان کا محکمہ صنعت چار روزہ ' انڈیا ٹوئے فیئر ' میں ریاست کے روایتی کھلونے کے ساتھ ساتھ ریاست کی بڑھتی ہوئی کھلونا صنعت کی نمائش کررہا ہے۔ محکمہ صنعت کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ اس پلیٹ فارم کے ذریعہ ریاست میں نئی ​​صنعتوں کو الور کے خوشکدہ میں کھیلوں کے سازوسامان اور کھلونا زون کے قیام کے ساتھ ہی انویسٹمنٹ پروموشن پالیسی 2019 کے متعلق بھی جانکاری دی جائیگی ۔

اس ٹوئے فیئر کو ہیملیز (Hamleys)نے انسپانسر کیاہے۔ ہیملیز ،برطانیہ کی ایک قدیم ملٹی نیشنل ٹوئے ریٹیلر(Multinational Toy Retailer) ہے جو ریلائنس انڈسٹریز کی ملکیت ہے ۔ ہیملیز کی جانب سے اس فیئر کے لیے ایک ورچوئل بوتھ بنایاگیاہے ۔ اس موقع پر یہ ملٹی نیشنل ٹوئے ریٹیلر کی جانب سے ممبئی ، دہلی ، احمد آباد میں ٹوئے سرکلس کو متعارف کروایاجارہاہے ہیملیز کی جانب سے کارپوریٹ سماجی ذمہ داری کے تحت آگن واڑی ورکرس کے بچوں میں کھلونے تقسیم کیے جارہے ہیں۔آگن واڑی کے بچوں کے لیے 743 لکڑی کے کھلونے تیار کیے جارہے ہیں۔


مرکزی حکومت نے ملک کی مختلف ریاستوں میں 8 کھلونا مینوفیکچرنگ کلسٹرز کو منظوری دے دی ہے۔ کلسٹروں کے ذریعہ ملک کی روایتی کھلونا صنعت کو فروغ دیا جائے گا۔ ان کلسٹروں کی تعمیر پر 2،300 کروڑ روپے لاگت آئے گی۔ کلسٹرز لکڑی ، روغن ، کھجور کے پتوں ، بانس اور لباس کے کھلونے سے بنے ہوں گے۔مرکز کے منصوبے کے مطابق ، مدھیہ پردیش میں زیادہ سے زیادہ 3 کلسٹر بنائے جائیں گے۔ اس کے بعد ، راجستھان میں کھلونا مینوفیکچرنگ کے دو کلسٹر ہوں گے ، کرناٹک ، اتر پردیش اور تمل ناڈو میں 2۔2 کلسٹر بنائے جائیں گے ۔ اہم بات یہ ہے کہ اسپورتی اسکیم کے تحت کرناٹک اور آندھرا پردیش میں دو کھلونے کلسٹر بنائے گئے ہیں۔
Published by: Mirzaghani Baig
First published: Feb 27, 2021 04:35 PM IST