உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پی ایم مودی نے بتائی سائنس میں ہندوستان کی طاقت، گلوبل انوویشن انڈیکس میں 81 سے 46 ویں نمبر پر پہنچا

    وزیر اعظم نریندر مودی (Narendra Modi)

    وزیر اعظم نریندر مودی (Narendra Modi)

    یہ کانفرنس دو دن کے لیے ہے۔ اس پروگرام کا عملی طور پر افتتاح کرتے ہوئے پی ایم مودی نے کہا کہ آج ہندوستان میں نئے نئے انوویشن ہو رہے ہیں اور سائنس ہندوستان کی ترقی میں توانائی کی طرح ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | Ahmadabad | Mumbai
    • Share this:
      وزیر اعظم نریندر مودی نے آج ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے احمد آباد، گجرات میں منعقدہ 'سینٹر اسٹیٹ سائنس کنکلیو' کا افتتاح کیا۔ یہ کانفرنس دو دن کے لیے ہے۔ اس پروگرام کا عملی طور پر افتتاح کرتے ہوئے پی ایم مودی نے کہا کہ آج ہندوستان میں نئے نئے انوویشن ہو رہے ہیں اور سائنس ہندوستان کی ترقی میں توانائی کی طرح ہے۔ انہوں نے کہا کہ سینٹر اسٹیٹ سائنس کانکلیو یعنی سینٹر اسٹیٹ سائنس کانفرنس ہم سب کے لیے کوشش کے منتر کی ایک مثال ہے۔ آج جب ہندوستان چوتھے صنعتی انقلاب کی قیادت کرنے کی طرف بڑھ رہا ہے، ہندوستان کی سائنس اور اس شعبے سے وابستہ لوگوں کا کردار بہت اہم ہے۔

      پی ایم مودی نے کہا کہ 21ویں صدی کے ہندوستان کی ترقی میں سائنس اس توانائی کی طرح ہے جس میں ہر علاقے کی ترقی، ہر ریاست کی ترقی کو تیز کرنے کی صلاحیت ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سائنس حلSolution ، ترقی Evolution اور Innovation کی بنیاد ہے۔ اسی Inspiration کے ساتھ آج کا نیا ہندوستان، جئے جوان، جئے کسان، جئے وگیان کے ساتھ ساتھ جئے انسندھن کی پکار کے ساتھ آگے بڑھ رہا ہے۔

       

      پڑوسی کے پالتو کتے نے شخص کو بری طرح نوچا، پرائیویٹ پارٹ پر بھی کیا حملہ

      بزرگ جوڑے کے گھر پر آسمان سے گرے طیارے کے ٹکڑوں! بھیانک منظڑ دیکھ کر اڑ گئے سبھی کے ہوش

      انہوں نے مزید کہا کہ مغرب میں آئن سٹائن، فرمی، میکس پلانک، نیلز بوہر، ٹیسلا جیسے سائنسدان اپنے تجربات سے دنیا کو حیران کر رہے تھے۔ اسی وقت سی وی رمن، جگدیش چندر بوس، ستیندر ناتھ بوس، میگھناد ساہا، ایس چندر شیکھر سمیت کئی سائنس دان اپنی نئی دریافتیں منظر عام پر لا رہے تھے۔ اگر ہم پچھلی صدی کے ابتدائی عشروں کو یاد کریں تو ہم دیکھ سکتے ہیں کہ دنیا کس طرح تباہی اور المیے کے دور سے گزر رہی تھی۔ لیکن اس دور میں بھی خواہ مشرق ہو یا مغرب، ہر جگہ سائنسدان اپنی عظیم دریافت میں مصروف تھے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: