ہوم » نیوز » عالمی منظر

مارچ میں بنگلہ دیش کا دورہ کرسکتے ہیں وزیراعظم مودی، شیخ حسینہ کے ساتھ ہوسکتی ہے اہم موضوعات پر بات

وزیراعظم نریندر مودی اپنے تین روزہ دورہ بنگلہ دیش کے سفرکےلئے16 مارچ کو بنگلہ دیش پہنچیں گے۔ 17 مارچ کو وزیراعظم مودی شیخ مجیب الرحمان کے یوم پیدائش پر منعقدہ تقریب میں حصہ لیں گے۔

  • Share this:
مارچ میں بنگلہ دیش کا دورہ کرسکتے ہیں وزیراعظم مودی، شیخ حسینہ کے ساتھ ہوسکتی ہے اہم موضوعات پر بات
گزشتہ سال 5 اکتوبر کو بنگلہ دیش کی وزیراعظم شیخ حسینہ نے ہندوستان کا دورہ کیا تھا۔ فائل فوٹو

نئی دہلی: وزیراعظم نریندر مودی (PM Narendra Modi) 18-16) مارچ کو بنگلہ دیش کا دورہ کرسکتے ہیں۔ اس اہم دورے پر وزیراعظم بنگلہ دیش کی اپنی ہم منصب شیخ حسینہ (Shiekh Hasina) کے ساتھ اہم بات چیت کرسکتے ہیں۔


ڈھاکہ ٹربیون نے کئی ذرائع کے حوالے سے اطلاع دی ہے کہ وزیراعظم مودی کے اس دورے میں وزیراعظم شیخ حسینہ کے ساتھ سرکاری بات چیت میں کئی معاملے پر دو طرفہ بات چیت ہوسکتی ہے۔ وزیراعظم مودی اپنے تین روزہ بنگلہ دیش کے سفرکےلئے16 مارچ کو بنگلہ دیش پہنچیں گے۔ 17 مارچ کو وزیر اعظم نریندر مودی شیخ مجیب الرحمان کے یوم پیدائش پر منعقدہ پروگرام میں شرکت کریں گے۔


مارچ کے پہلے ہفتے میں بنگلہ دیش جائیں خارجہ سکریٹری


ڈھاکہ ٹربیون کی خبرکے مطابق مارچ کے پہلے ہفتے میں خارجہ سکریٹری ہرش وردھن شرنگلا بنگلہ دیش کا دورہ کریں گے اور وزیراعظم کے دورے سے منسلک سبھی تیاریوں کا جائزہ لیں گے۔ ڈھاکہ میں ہندوستانی ہائی کمیشن کے سیکنڈ سکریٹری پریس دیوبرت پال نے اطلاع دی کہ یہ طے ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی 17 مارچ کی تقریب میں شرکت کریں گے، لیکن اس دورے کا پورا شیڈول طے کیا جانا باقی ہے۔

گزشتہ سال 5 اکتوبر کو بنگلہ دیش کی وزیراعظم شیخ حسینہ نے ہندوستان کا دورہ کیا تھا اور وزیراعظم مودی کو اس تقریب میں شریک ہونے کی دعوت دی تھی۔ تصویر : رائٹرس
گزشتہ سال 5 اکتوبر کو بنگلہ دیش کی وزیراعظم شیخ حسینہ نے ہندوستان کا دورہ کیا تھا اور وزیراعظم مودی کو اس تقریب میں شریک ہونے کی دعوت دی تھی۔ تصویر : رائٹرس


شیخ حسینہ نے گزشتہ سال دی تھی دعوت

گزشتہ سال 5 اکتوبر کو بنگلہ دیش کی وزیراعظم شیخ حسینہ نے ہندوستان کا دورہ کیا تھا اور وزیراعظم مودی کو اس تقریب میں شریک ہونے کی دعوت دی تھی۔

وزیر داخلہ اور وزیرخارجہ نےمنسوخ کیا تھا ہندوستان کا دورہ

حالانکہ بنگلہ دیش کے وزیر خارجہ اے کے عبدالمومین اور وزیر داخلہ اسدالزماں نے گزشتہ کچھ ماہ میں اپنا ہندوستان دورہ منسوخ کردیا تھا۔ عبدالمومن کا دورہ منسوخ کرنے کے بعد قیاس آرائی کی جارہی تھی کہ انہوں نے ایسا ہندوستان کے شہریت ترمیمی قانون میں ہندوستان کے تین پڑوسی ملک پاکستان، افغانستان اور بنگلہ دیش سے 31 دسمبر 2014 سے پہلے آنے والے ہندو، سکھ، عیسائی، جین، پارسی اور بودھ مذہب کے لوگوں کو ہندوستان کی شہریت دے دی جائےگی۔ اسے لےکرہندوستان میں گزشتہ کافی دنوں سے احتجاجی مظاہرہ جاری ہے۔
First published: Mar 01, 2020 07:42 AM IST