ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Tika Utsav:ملک بھرمیں ٹیکہ اتسو کاآغاز،پی ایم مودی نےکہا۔۔ ہرشخص ایک شخص کوٹیکہ لگوائے

پی ایم مودی نے اتوار کے روز ٹویٹ کرکے عوام سے کہا،’آج سے ہم سبھی، پورے ملک میں ٹیکہ جشن کا آغاز کر رہے ہیں۔ کورونا کے خلاف لڑائی کے اس مرحلے میں ملک کے باشندوں سے میری چار اپیل ہے۔وزیراعظم نے نمو ایپ پر اپنے چاروں اپیل کے بارے تفصیل سے لکھا ہے۔

  • Share this:
Tika Utsav:ملک بھرمیں ٹیکہ اتسو کاآغاز،پی ایم مودی نےکہا۔۔ ہرشخص ایک شخص کوٹیکہ لگوائے
مودی نے اتوار کے روز ٹویٹ کرکے عوام سے کہا،’آج سے ہم سبھی، پورے ملک میں ٹیکہ جشن کا آغاز کر رہے ہیں۔

وزیراعظم نریندر مودی نے ملک کے باشندوں سے کووڈ-19 وبا کے خلاف پورے ملک میں جاری مہم کے تحت آج سے شروع ’ٹیکہ اتسو‘ (ٹیکہ جشن) کو مکمل بنانے کا درخواست کی ہے۔پی ایم مودی نے اتوار کے روز ٹویٹ کرکے عوام سے کہا،’آج سے ہم سبھی، پورے ملک میں ٹیکہ جشن کا آغاز کر رہے ہیں۔ کورونا کے خلاف لڑائی کے اس مرحلے میں ملک کے باشندوں سے میری چار اپیل ہے۔وزیراعظم نے نمو ایپ پر اپنے چاروں اپیل کے بارے تفصیل سے لکھا ہے۔ انہوں نے کہا،’آج 11 اپریل یعنی جیوتیبا پھولے جینتی سے ہم ملک کے باشندے ’ٹیکہ اتسو‘ کا آغاز کر رہے ہیں۔ یہ ٹیکہ جشن 14 اپریل یعنی بابا صاحب امبیڈکر جینتی تک جاری رہے گا۔ یہ جشن ایک طرح سے کورونا کے خلاف دوسری بڑی جنگ کی شروعات ہے۔ اس میں ہمیں ذاتی طور پر صاف صفائی کے ساتھ ہی سماجی طور پر صاف صفائی پر خصوصی طور زور دینا ہے‘۔



انہوں نے کہا،’ہمیں یہ چار باتیں ضرور یاد رکھنی ہے۔ ہر شخص ایک شخص کو ٹیکہ لگوائے۔ یعنی جو لوگ کم پڑھے لکھے ہیں، بزرگ ہیں جو خود جا کر ٹیکہ نہیں لگوا سکتے، ان کی مدد کریں۔ ہر شخص ایک شخص کے علاج میں مدد کرے۔ یعنی جن لوگوں کے پاس اس قدر وسائل نہیں ہیں، جنھیں معلومات کم ہے، ان کا کورونا کے علاج میں تعاون کریں۔ ہر شخص ایک شخص کے تحفظ کو یقینی بنائے، یعنی میں خود بھی ماسک پہنوں اور اس طرح خود کو بھی بچاؤں اور دوسروں کو بھی بچاؤں، اس پر زور دینا ہے‘۔وزیراعظم نے کہا،’ایک بھی پوزیٹیو کیس آنے پر ہم سبھی کا بیدار رہنا، باقی لوگوں کی بھی ٹیسٹنگ کروانا، بہت ضروری ہے۔ اسی کے ساتھ جو ٹیکہ لگوانے کا مستحق ہے، اسے ٹیکہ لگے، اس کی کوشش سماج کو بھی کرنی ہے اور انتظامیہ کو بھی۔ ایک بھی ویکسین کا نقصان نہ ہو، ہمیں یہ یقینی بنانا ہے۔ ہمیں زیرو ویکسین ٹیسٹ کی طرف بڑھنا ہے۔ اس دوران ہمیں ملک کی ویکسینیشن کی استعداد کے آپٹیمم یوٹیلائیزیشن کی طرف بڑھنا ہے۔ یہ ہماری کَیپیسِٹی بڑھانے کا بھی ایک طریقہ ہے۔


انہوں نے کہا،’ہماری کامیابی اس بات سے طے ہوگی کہ ’مائیکرو کنٹینمنٹ زون‘ کے تئیں کتنی بیداری ہم لوگوں میں ہے۔ ہماری کامیابی اس بات سے طے ہوگی کہ ضرورت نہ ہو، تو ہم گھر سے باہر نہ نکلیں۔ ہماری کامیابی اس بات سے طے ہوگی کہ جو ٹیکہ لگوانے کا مستحق ہے، اسے ٹیکہ لگے۔ ہماری کامیابی اس بات پر منحصر ہوگی کہ ہم ماسک پہننے اور دیگر ضابطوں پر کس طرح عمل درآمد کرتے ہیں‘۔ وزیراعظم مودی نے ان چار دنوں میں ذاتی سطح پر، سماجی سطح پر اور انتظامیہ کی سطح پر ہمیں اپنے اپنے ہدف بنانے ہیں، انھیں پانے کے لیے پوری کوشش کرنی ہے۔ مجھے پورا بھروسہ ہے، اسی طرح عوامی شراکت داری سے، بیدار رہتے ہوئے، اپنی ذمہ داری ادا کرتے ہوئے، ہم ایک بار پھر کورونا کو قابو کرنے میں کامیاب ہوں گے۔ یاد رکھیے! دوائی بھی کڑائی بھی‘۔
پی ایم مودی نے کہا،’ چوتھی اہم بات، کسی کو کورونا ہونے کی صورت میں ’مائیکرو کنٹینمنٹ زون‘ بنانے کی قیادت سماج کے لوگ کریں۔ جہاں پر ایک بھی کورونا پوزیٹیو کیس آیا ہے، وہاں خاندان کے لوگ، سماج کے لوگ، مائیکرو کنٹینمنٹ زون‘ بنائیں۔ ہندوستان جیسے گھنی آبادی والے ہمارے ملک میں کورونا کے خلاف لڑائی کا ایک اہم ترین طریقہ ’مائیکرو کنٹینمنٹ زون‘ بھی ہے‘۔
یواین آئی ان پٹ کے ساتھ نیوز18 اردو کی رپورٹ
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Apr 11, 2021 02:58 PM IST