مہاراشٹر میں سیاسی گھمسان کے درمیان وزیر اعظم مودی نے کی این سی پی کی تعریف ، جانیں کیوں

این سی پی اور بیجو جنتادل کی مثال دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ان دونوں جماعتوں نے ڈسپلن قائم رکھتے ہوئے خود کرسی کے نزدیک نہیں جانے کا عہد کررکھا ہے۔

Nov 18, 2019 07:59 PM IST | Updated on: Nov 18, 2019 07:59 PM IST
مہاراشٹر میں سیاسی گھمسان کے درمیان وزیر اعظم مودی نے کی این سی پی کی تعریف ، جانیں کیوں

مہاراشٹر میں سیاسی گھمسان کے درمیان وزیر اعظم مودی نے کی این سی پی کی تعریف ، جانیں کیوں

وزیراعظم نریندر مودی نے ایوان میں بحث کے دوران اسپیکر کی کرسی کے نزدیک جاکر ہنگامہ کرنے کی کچھ جماعتوں اور ان کے لیڈروں کی فطرت کو نشانہ بناتے ہوئے آج نیشنلسٹ کانگریس پارٹی اور بیجو جنتادل کے اراکین کی کرسی کے نزدیک نہیں جانے کے’عہد‘ کی تعریف کرتے ہوئے کہاکہ حکمراں فریق سمیت تمام جماعتوں کو ان سے سیکھ لینی چاہئے ۔ وزیر اعظم مودی نے راجیہ سبھا کے 250 ویں اجلاس کے موقع پر ایوان میں خصوصی بحث ’ہندستانی حکمراں نظام میں راجیہ سبھا کے رول اور اصلاحات کی ضرورت‘ میں مداخلت کرتے ہوئے کہا کہ ایوان مختلف اہم موضوعات پر بحث کا پلیٹ فارم ہے اور اراکین کو بحث میں رکاوٹ کے بجائے بات چیت کا راستہ منتخب کرنا چاہئے۔

نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) اور بیجو جنتادل کی مثال دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ان دونوں جماعتوں نے ڈسپلن قائم رکھتے ہوئے خود کرسی کے نزدیک نہیں جانے کا عہد کررکھا ہے۔ یہ بہت اچھی بات ہے کہ کرسی کے نزدیک جائے بغیر انہوں نے اپنی بات موثر طریقہ سے رکھی ہے۔ حکمراں فریق سمیت تمام کو اس سے سیکھ لینی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ اس ڈسپلن سے ان کے ترقی کے سفر میں کوئی رکاوٹ نہیں آئی ہے۔ اس طرح کی روایات کی پیروی ہونی چاہئے اور ان جماعتوں کی تعریف کی جانی چاہئے۔

وزیراعظم نے کہا کہ یہ صحیح ہے کہ راجیہ سبھا کا کردار بلوں کو جانچنے ، پرکھنے اور توازن قائم رکھنے کا ہے اور یہ جمہوریت کے لئے ضروری بھی ہے۔ انہوں نے کہاکہ با ت چیت اور بحث موثر ہونی چاہئے لیکن ساتھ ہی یہ بھی صحیح ہے کہ جانچ پرکھ اور رکاوٹ بننے اور توازن اور رکاوٹ میں فرق ہوتا ہے۔

انہوں نے کہاکہ ایوان کی تاریخ میں ایک طویل حصہ ایسا تھا جب اپوزیشن جیسا کچھ خاص نہیں تھا۔ اس وقت اقتدار میں بیٹھے لوگوں کو اس کا بڑا فائدہ بھی ملا ۔ لیکن اس وقت بھی ایوان میں ایسے تجربہ کار لوگ تھے ، جنہوں نے سرکاری کام کاج کو بے لگام نہیں ہونے دیا۔ اس بات کو ہمیشہ ذہن میں رکھاجانا چاہئے۔

Loading...