உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    PM Modi Called Macron:وزیراعظم مودی نے فرانسیسی صدر سے کی بات، جنگل کی آگ سے نمٹنے میں مدد کادلایا بھروسہ

    پی ایم مودی اور فرانسیسی صدر میکرون کے درمیان ٹیلیفونک بات چیت۔ (فائل فوٹو)

    پی ایم مودی اور فرانسیسی صدر میکرون کے درمیان ٹیلیفونک بات چیت۔ (فائل فوٹو)

    PM Modi Called Macron: پی ایم مودی نے اپنے ٹویٹ میں کہا، "صدر ایمینوئل میکرون اور میں نے خوراک اور توانائی کی سلامتی کے عالمی چیلنجوں کا جواب دینے کے لیے مل کر تعاون کرنے پر بھی اتفاق کیا۔"

    • Share this:
      PM Modi Called Macron: فرانس میں مسلسل بڑھتے ہوئے درجہ حرارت کی وجہ سے جنگلات میں لگنے والی خوفناک آگ سے نمٹنے کے لیے ہندوستان نے فرانس کے ساتھ اپنے عزم کا اظہار کیا ہے۔ منگل کو پی ایم مودی نے فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون سے بات کی۔ اس دوران دونوں عالمی رہنماؤں کے درمیان کئی امور پر بات چیت ہوئی۔ دونوں رہنماؤں نے ہندوستان-فرانسیسی اسٹریٹجک شراکت داری اور خوراک اور توانائی کی سلامتی سمیت عالمی اور علاقائی اہمیت کے مسائل پر بھی بات چیت کی۔ غور طلب ہے کہ اس سے ایک دن پہلے فرانسیسی صدر ایمینوئل میکرون نے ٹویٹ کر کے ہندوستانیوں کو یوم آزادی کی مبارکباد دی تھی۔

      وزیراعظم مودی نے کہا-ہندوستان فرانس کے ساتھ
      منگل کو پی ایم مودی نے فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون سے بات کی۔ اس دوران انہوں نے صدر ایمانوئل میکرون کو فرانس کے جنگلات میں لگی تباہ کن آگ سے نمٹنے میں فرانس کے ساتھ ہندوستان کی یکجہتی سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان فرانس کے ساتھ ہے۔ پی ایم مودی نے ٹویٹ کرکے اس بات چیت کے بارے میں بتایا۔

      یہ بھی پڑھیں:

      INS Tarangini:آئی این ایس ترنگینی برٹین میں ’آزادی کا امرت مہوتسو‘کا بنا توجہ کا مرکز

      یہ بھی پڑھیں:
      ’عیسائیوں پر بڑھتے حملے کا الزام لگانے والی درخواست میں کوئی دم نہیں‘مرکز کاSCمیں حلف نامہ

      انہوں نے ٹویٹ کیا، "ہم نے ہندوستان-فرانس اسٹریٹجک پارٹنرشپ کے تحت جاری دو طرفہ تعاون اور عالمی اور علاقائی اہمیت کے دیگر مسائل پر تبادلہ خیال کیا۔" بات چیت میں دونوں رہنماؤں نے خوراک اور توانائی کی سلامتی کے عالمی چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے مل کر کام کرنے پر اتفاق کیا۔ پی ایم مودی نے اپنے ٹویٹ میں کہا، "صدر ایمینوئل میکرون اور میں نے خوراک اور توانائی کی سلامتی کے عالمی چیلنجوں کا جواب دینے کے لیے مل کر تعاون کرنے پر بھی اتفاق کیا۔"
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: