உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    PM Modi نے کہا- اومیکران تیزی سے پھیل رہا ہے، آج احتیاط برتنے کی ضرورت

    وزیر اعظم نریندر مودی کورونا وائرس سے لے کر قوم کو خطاب کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا، ’ہندوستان میں بھی کئی لوگوں کے اومیکران سے متاثر ہونے کا پتہ چلا ہے۔ میں آپ سبھی سے گزارش کروں گا کہ panic نہیں کریں اور محتاط رہیں۔ ماسک اور ہاتھوں کو تھوڑی تھوڑی دیر پر دھلنا، ان باتوں کو یاد رکھیں۔

    وزیر اعظم نریندر مودی کورونا وائرس سے لے کر قوم کو خطاب کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا، ’ہندوستان میں بھی کئی لوگوں کے اومیکران سے متاثر ہونے کا پتہ چلا ہے۔ میں آپ سبھی سے گزارش کروں گا کہ panic نہیں کریں اور محتاط رہیں۔ ماسک اور ہاتھوں کو تھوڑی تھوڑی دیر پر دھلنا، ان باتوں کو یاد رکھیں۔

    وزیر اعظم نریندر مودی کورونا وائرس سے لے کر قوم کو خطاب کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا، ’ہندوستان میں بھی کئی لوگوں کے اومیکران سے متاثر ہونے کا پتہ چلا ہے۔ میں آپ سبھی سے گزارش کروں گا کہ panic نہیں کریں اور محتاط رہیں۔ ماسک اور ہاتھوں کو تھوڑی تھوڑی دیر پر دھلنا، ان باتوں کو یاد رکھیں۔

    • Share this:
      نئی دہلی: کورونا وائرس کے نئے ویریئنٹ اومیکران کے خطرے کے درمیان وزیر اعظم نریندر مودی ہفتہ کے روز ملک کو خطاب کر رہے ہیں۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنے خطاب میں کہا کہ آج ملک کو محتاط رہنے کی ضرورت ہے اور ملک کے سبھی باشندوں کو ماسک پہننے پر عمل کرنا چاہئے۔ انہوں نے جانکاری دیتے ہوئے کہا کہ ملک میں اس وقت ایک لاکھ 40 ہزار آئی سی یو بیڈ ہیں، جبکہ آکسیجن سمیت پانچ لاکھ بیڈ ہیں۔ اس کے ساتھ ہی ملک میں اب تک 141 کروڑ لوگوں کو ویکسین لگائی جاچکی ہے۔

      انہوں نے کہا، ’ہندوستان میں بھی کئی لوگوں کے اومیکران سے متاثر ہونے کا پتہ چلا ہے۔ میں آپ سبھی سے گزارش کروں گا کہ panic نہیں کریں اور محتاط رہیں۔ ماسک اور ہاتھوں کو تھوڑی تھوڑی دیر پر دھلنا، ان باتوں کو یاد رکھیں۔

      انہوں نے مزید کہا، ’کورونا عالمی وبا سے لڑائی کا اب تک کا تجربہ یہی بتاتا ہے کہ ذاتی سطح پر سبھی احکامات پر عمل، کورونا سے مقابلے کا بہت بڑا ہتھیار ہے اور دوسرا ہتھیار ہے ویکسینیشن۔

      وزیر اعظم مودی کے خطاب کے اہم نکات:

      ہندوستان نے اس سال 16 جنوری سے اپنے شہریوں کو ویکسین دینا شروع کردیا ہے۔ یہ ملک کے سبھی شہریوں کی اجتماعی کوشش اور اجتماعی قوتِ ارادی ہے کہ آج ہندوستان 141 کروڑ ویکسین ڈوز کے شاندار اور بہت مشکل ہدف کو حاصل کرچکا ہے۔

      آج ہندوستان کی بالغ آبادی میں سے 61 فیصد سے زیادہ آبادی کو ویکسین کی دونوں ڈوز لگ چکی ہے۔ اسی طرح بالغ آبادی میں سے تقریباً 90 فیصد لوگوں کو ویکسین کی ایک ڈوز لگائی جاچکی ہے۔

      آج ہر ہندوستانی شہری اس بات پر فخر کرے گا کہ ہم نے دنیا کی سب سے بڑی، سب سے توسیع شدہ اور مشکل جغرافیائی حالات کے درمیان اتنا محفوظ ویکسینیشن مہم چلائی۔ کئی ریاست اور خاص طور پر سیاحت کے نقطہ نظر سے گوا جیسی اہم ریاستوں جیسے گوا، اتراکھنڈ اور ہماچل پردیش نے صد فیصد سنگل ڈوز ویکسینیشن کا ہدف حاصل کرلیا ہے۔

      ہم سبھی جانتے ہیں کہ کورونا ابھی گیا نہیں ہے، ایسے میں احتیاط بہت ضروری ہے۔ ملک اور ملک کے باشندوں کو محفوظ رکھنے کے لئے ہم نے مسلسل کام کیا ہے۔

      15 سال سے 18 سال کی عمر کے درمیان کے جو بچے ہیں، اب ان کے لئے ملک میں ویکسینیشن شروع ہوگا۔ سال 2022 میں، تین جنوری کو، پیر کے دن سے اس کی شروعات کی جائے گی۔

      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔

      Published by:Nisar Ahmad
      First published: